ملک میں کورونا ہلاکتوں کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 20ہزار سے متجاوز

نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس کے کیسز میں ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے اوریہ ایک بار پھر 40 ہزار کو عبور کرچکے ہیں اور ایک ہی دن میں اموات کی تعداد بھی 500 تک جا پہنچی ہے۔ مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے بدھ کے روز جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کوروناوائرس کے 43،893 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ ایک دن پہلے ہی یہ تعداد 36،470 تھی۔ اسی مدت کے دوران 58،439 کورونا مریضوں نے وبا کو شکست دی،جس سے ایکٹیو کیسز کی تعداد 15،054 سے گھٹ کر 6،10،803 رہ گئی۔  

بہار انتخابات کا پہلا مرحلہ، 71 اسمبلی نشستوں کیلئے ووٹنگ کا آغاز

پٹنہ//بہار میں پہلے مرحلے میں اسمبلی کی 71 نشستوں کے لئے سخت حفاظتی انتظامات کے درمیان کورونا انفیکشن کی روک تھام کے لئے سخت ہدایات پر عمل کرتے ہوئے ووٹنگ بدھ کی صبح 7 بجے سے شروع ہوگئی۔  ریاستی الیکشن آفس کے مطابق ان 71 اسمبلی حلقوں میں 31380 پولنگ بوتھوں پر صبح 7 بجے پولنگ شروع ہوگئی ہے۔  کورونا دور میں ملک کے پہلے بڑے انتخابات میں رائے دہندگان اور انتخابی کارکنوں کے کورونا وائرس سے بچاو¿ کے لئے وسیع تر انتظامات کیے گئے ہیں۔  تمام پولنگ اسٹیشنوں پر سینی ٹائزر ، دستانے اور ماسک کا انتظام کیا گیا ہے۔ پولنگ اسٹیشن میں داخل ہونے سے پہلے تمام ووٹرز کے ٹمپریچر کی اسکیننگ کی جارہی ہے۔  

کوروناکے یومیہ نئے معاملے 40 ہزار سے نیچے آگئے

 نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس انفیکشن کی رفتار سست ہوتی جارہی ہے اور ایک دن میں سامنے آنے والے معاملے 40 ہزار سے نیچے آگئے ہیں اور ہلاک شدگان کی تعداد مسلسل دوسرے دن 500 سے نیچے رہی۔صحت اور خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کی جانب سے منگل کو جاری اعدادو شمار کے مطابق پچھلے 24 گھنٹے کے دوران کورونا کے 36470 نئے معاملے سامنے آئے جبکہ 63842 لوگوں نے اس وبا کو مات دی ہے ۔ اس سے فعال معاملے 27860 گھٹ کر 625,857 رہ گئے ہیں۔ اس دوران 488 مریضوں کی موت ہونے سے اس سے جان گنوانے والوں کی تعداد 119,502 ہوگئی ہے ۔کورونا سے اب تک 79.46 لاکھ لوگ متاثر ہوئے ہیں جن میں سے 72.01 لاکھ صحت مند ہوچکے ہیں۔ اس سے صحت مند ہونے والوں کی شرح بڑھکر 90.62 فیصد اور فعال معاملوں کی شرح 7.88 فیصد رہ گئی ہے ، جبکہ موت شرح 1.50 فیصد ہے ۔کورونا کی وبا سے سب سے زیادہ متاثر مہاراشٹر میں پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران ز

کورونا کا قہر ابھی ختم نہیں ہوا، احتیاط برتنا ضروری: ہرش وردھن

نئی دہلی// صحت وخاندانی بہبود کیمرکزی وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن نے آج کہا کہ کورونا وائرس (کووڈ-19)  کے  انفیکشن  کا  خطرہ  ابھی  ختم  نہیں  ہوا  ہے،  اس لیے  اس وائرس کو ختم ہونے کے قریب سمجھ کر لاپرواہی نہیں برتی جانی  چاہئے اور لوگوں کو  کووڈ-19 کی مخصوص ہدایات پر  مل کرنا چاہئے۔ڈاکٹر ہرش وردھن نے منگل کے روز دہلی کے ماڈل ٹاؤن اسمبلی حلقہ کے بھارتیہ جنتا پارٹی کی کمیٹیوں کے صدور کے ویڈیوکانفرنس کے ذریعہ بات چیت کرتے ہوئے ان سے اپیل کی  کہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے کورونا وائرس سے بچاؤ کے پیغام کو ہر فرد تک پہنچانے کے کام میں  شامل ہوں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کا خطرہ ابھی ختم نہیں ہوا ہے لیکن کچھ لوگ کورونا وائرس کو ختم ہونے کے قریب  سمجھتے ہوئے احتیاط برتنے میں غفلت کر رہے ہیں۔ وہ نہیں جانتے ک

حساس سیٹیلائٹ میں ساجھیداری

نئی دہلی// مشرقی لداخ میں ہندستان کے چین کے مابین جاری تعطل کے درمیان آج بروز منگل ہندستان اور امریکہ نے تبادلے اور تعاون کے ایک بنیادی سمجھوتے پر دستخط کئے جو حسا س سٹلائٹ اعداد و شمار میں ساجھیداری کا ایک اہم فوجی معاہدہ ہے ۔اس معاہدے پر دونوں ممالک کے مابین تیسری 2 + 2 وزارتی میٹنگ کے دوران دستخط ہوئے ۔امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو اور وزیر دفاع مارک ایسپر نے امریکی فریق کی قیادت کی جبکہ ہندوستانی فریق کی قیادت وزیر دفاع راجناتھ سنگھ اور وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنکر نے کی۔گزشتہ دو دہائیوں کے دوران دونوں ممالک کے مابین اس نوعیت کا یہ چوتھا دفاعی معاہدہ ہے جس کے تحت امریکی مصنوعی سیاروں سے ہندوستان کواہم ڈیٹا اور ٹوپوگرافیکل تصاویر تک رسائی کی اجازت ہوگی۔.اس معاہدے کے تحت دونوں ممالک نقشہ جات ، سمندری اور ایروناٹیکل چارٹس ، جیو فزیکل اور جیو مقناطیسی اعداد و شمار کا تبادلہ کرسکتے ہیں

بہار میں تبدیلی کیلئے عظیم اتحاد کی جیت ضروری :سونیا

نئی دہلی//کانگریس صدر سونیا گاندھی نے بہار اسمبلی انتخابات میں تبدیلی کو ضروری بتاتے ہوئے ریاست میں تبدیلی لانے کے لئے عوام سے عظیم اتحاد کو اقتدار سونپنے کی اپیل کی ہے ۔محترمہ گاندھی نے منگل کو بہار کے عوام کے نام یہاں جاری ایک ویڈیو پیغام میں کہا کہ بہار حکومت اپنے مقصد سے بھٹک گئی ہے جس سے مزدور،کسان اور نوجوان مایوس ہیں۔ معیشت نازک ہونے کی وجہ سے ریاست کے دلت اور مہادلت بدحالی کی کگار پر پہنچ گئے ہیں۔کانگریس عظیم اتحاد کو بہار کے عوام کی پکار اور آواز قرار دیتے ہوئے دہلی اور بہار کی حکومت کو انہوں نے ‘بندی حکومتیں’ بتایا اور کہا کہ یہ حکومت عوام کو نوٹ بندی ،تالا بندی ،تجارت بندی،اقتصادی بندی ،کھیت کھلہان بندی،روٹی روزگار بندی کے سوا کچھ نہیں دے رہی ہے اس لئے اس الیکشن میں بہار میں تبدیلی ضروری ہوگئی ہے ۔انہوں نے کہا،‘‘ بہار کی اس بندی حکومت کے خلاف - اگلی

بہار کے ووٹروں سے200 سے زیادہ قلمکاروں کی اپیل

نئی دہلی// بہار اسمبلی انتخابات کے پہلے مرحلے کے لئے ووٹنگ شروع ہونے کے موقع پر ادبی تنظیموں سے وابستہ دو سو سے زیادہ ادیبوں اور قلمکاروں نے ریاست کے رائے دہندگان سے اپیل کی ہے کہ ریاست میں جمہوریت اور آئین کے آگے ذات پات، نسل پرستی، بدعنوانی اور غنڈہ گردی سے خطرناک تفرقہ پرست طاقتیں سرگرم ہیں جن کو منہ توڑ جواب دینے کی ضرورت ہے۔ان ادیبوں نے اپنے دستخط سے جاری کیے گئے مشترکہ بیان میں کہا کہ "بہار کی قانون ساز اسمبلی کے لئے ووٹنگ 28 اکتوبر سے ہونے والی ہے۔ الیکشن جمہوریت کا جشن ہے۔ جمہوریت اور آئین کو ذات پات، نسل، بدعنوانی اور غنڈہ راج سے ایک خوفناک خطرہ درپیش ہے۔ سماج کوبانٹنے والی طاقتیں معاشرے میں سرگرم ہیں۔ ایسی خطرناک طاقتوں کو منہ توڑ جواب دینے کی ضرورت ہے"۔انہوں نے کہا کہ جمہوریت کی طاقت صرف عوام پر منحصر ہے۔ اس طاقت سے ڈر کر ایسی طاقتیں لوگوں کو ذات پات، نسل پرستی

تازہ ترین