تازہ ترین

شاہ محمود قریشی کا اقوام متحدہ کے سربراہ کو فون

اسلام آباد//پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیوگٹرس کوٹیلی فون کرکے بھارت کی طرف سے جموں کشمیرمیں اقامتی قانون تبدیل کرنے کے فیصلے پراپنی تشویش سے آگاہ کیا۔اقامتی ضوابط کے تحت وہ تمام افراداوران کے بچے جوجموں کشمیرمیں15سال سے رہ رہے ہیں یا جنہوں نے یہاں کے کسی تعلیمی ادارے میںسات سال تعلیم حاصل کی یامیٹرک یابارہویںکے امتحان میں شمولیت کی ،اقامتی حقوق پانے کے مستحق ہوں گے۔پاکستانی وزارت خارجہ کے مطابق قریشی نے اقوام متحدہ کے سربراہ کوکشمیرکی تازہ ترین صورتحال سے باخبرکیا۔پاک وزیرخارجہ نے کشمیرمیں حالیہ اقامتی قانون کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ چوتھے جنیواکنونشن، بین الاقوامی قوانین اورسلامتی کونسل کی قراردادوں کے منافی ہے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ بھارت کوئی جنگی کارروائی بھی کرسکتا ہے ۔ پاک وزیرخارجہ نے کہا کہ پاکستان  اقوام متحدہ کے فوجی

ملک میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد سوا لاکھ سے متجاوز

نئی دہلی// ملک میں مسلسل دو دن سے عالمی وبا کورونا وائرس انفیکشن کے 6ہزار سے زیادہ کیس سامنے آنے سے متاثرین کی مجموعی تعداد سوا لاکھ کے اعداد و شمار کو پار کرکے 1,25,101 تک پہنچ گئی ہے تاہم راحت کی بات یہ ہے کہ ملک میں 50 ہزار سے زائد لوگوں نے اس انفیکشن سے نجات بھی پائی ہے۔مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے ہفتہ کی صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا انفیکشن کے اب تک کے سب سے زیادہ 6654 نئے کیسز سامنے آئے جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد1,25,101تک پہنچ گئی۔ ملک میں کل فعال کیسز 69597 ہیں۔ اس سے ایک دن پہلے 6088 نئے کیسز سامنے آئے تھے ۔ملک میں کووڈ -19 وبا سے گزشتہ 24 گھنٹوں میں 137 افراد کی موت ہونے سے ہلاک شدگان کی تعداد 3720 ہو گئی۔ جمعہ کے مقابلہ ہفتہ کو مرنے والوں کی تعداد میں کچھ کمی آئی ہے ۔ جمعہ کے اعدادوشمار کے مطابق ایک دن میں کووڈ -19 سے 1

لاک ڈاؤن میں مہاجر مزدوروں کو سب سے زیادہ تکلیف ہوئی:راہل

نئی دہلی// کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ کورونا نے متعدد لوگوں کو تکلیف پہنچائی ہے لیکن سب سے زیادہ درد اس نے مہاجر مزدوروں کو دیا ہے جنہیں ماراپیٹا گیا، روگا گیا، ڈرایا دھمکایا گیا لیکن وہ رکے نہیں اور اپنے گھروں کی جانب چلتے رہے ۔راہل  گاندھی نے ہفتہ کومہاجر مزدوروں کے ساتھ بات چیت کی ایک ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا کہ مزدوروں کو ڈرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ وہ ان کی پریشانیوں کو دور کرنے اور انہیں ان کے گھروں تک پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے ہریانہ سے اپنے گھر واپس لوٹ رہے اترپردیش کے کچھ مزدوروں کے ساتھ بات چیت کرکے ان کے مسائل سنتے ہوئے کہا کہ روزی روٹی چھن جانے کی وجہ سے پریشان ہزاروں مزدور سینکڑوں کلومیٹر پیدل چل کر اپنے گھر جارہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ مزدور صرف کام چاہتے ہیں۔ مہاجر مزدور سب سے زیادہ اس بات سے پریشان ہیں کہ وزیراعظم نریندر مودی نے لاک ڈاؤن

دلی کے مندرمیں پوجا کرنے کی تصاویر وائرل

نئی دہلی// جنوبی دلی کی پولیس نے اسولہ واقع شنی دھام مندر میں پوجا کے لئے ہجوم اکٹھا کرکے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے کے معاملے]؛۔۔ میں داتی مہاراج کے خلاف معاملہ درج کیا ہے ۔جنوبی دلی کے پولیس ڈپٹی کمشنر اتل ٹھاکر نے سنیچر کو بتایا کہ اسولہ واقع شنی دھام مندر میں ایک مذہبی تقریب کی کچھ تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد نوٹس میں آئیں۔انہوں نے کہا کہ ابتدائی جانچ سے پتہ چلا ہے کہ شنی دھام مندر کے خاص پجاری داتی مہاراج اور ان کے ساتھ کچھ لوگوں نے کل شام ساڑھے سات بجے مندر میں ایک مذہبی تقریب کا انعقاد کیا۔پولیس ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ان لوگوں نے کہا کہ ان لوگوں نے حکومت کی گائڈ لائن کی خلاف ورزی کی ہے ۔ سوشل میڈیا پر وائرل تصاویر میں داتی اور دیگر لوگ بادی النظر میں غیر قانونی کام کرتے پائے گئے۔

بھارت میں2019سے50لاکھ سے زیادہ لوگ بے گھر ہوئے: اقوام متحدہ

نئی دہلی//یو این آئی//شدید سمندری طوفان ‘امفان’ کی وجہ سے مغربی بنگال اور اوڈیشہ میں بڑی تعداد میں لوگوں کے بے گھر ہونے کی اطلاعات کے درمیان اقوام متحدہ کی طرف سے جاری رپورٹ سامنے آئی ہے جس میں گزشتہ برس 2019میں ملک میں قدرتی آفت، تنازعات اور تشدد کے واقعات کی وجہ سے پچاس لاکھ سے زیادہ افراد داخلی طورپر بے گھر ہوئے ہیں۔اقوام متحدہ کے بچوں کا فنڈ (یونیسیف) کی ‘لاسٹ ایٹ ہوم’ کے عنوان والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ برس پوری دنیا میں بے گھر ہونے کے تقریباًً 330لاکھ نئے معاملے درج کئے گئے ۔ ان میں نقل مکانی کے تقریباً 250لاکھ قدرتی آفت اور 80.5لاکھ معاملے تنازعات اور تشدد کے واقعات سے منسلک ہیں۔ رپورٹ کے مطابق ہندستان میں 2019میں 50.37.000داخلی نقل مکانی کے اعداد و شمار میں 50,18,000معاملے قدرتی آفت سے متعلق اور 19,000معاملات تنازعات اور تشدد کے واقعات سے

ریلوے کی بد انتظامی سے مزدوروں کی پریشانیوں میں اضافہ

ممبئی//کورونا وائرس کی وجہ سے مختلف مقامات پر پھنسے ہوئے لاکھوں خستہ حال اور پریشان مزدور جب ایک تکلیف دہ اور لمبے انتظار کے بعد کسی طرح اپنے اپنے علاقوں کی واپسی کے لیے ٹرینوں پر سوار ہوئے ،توگھرواپس لوٹنے کی خوشی میں انکے چہرے دمک رہے تھے ، مگر انکی یہ خوشی ریلوے انتظامیہ کی نا اہلی اور بد انتظامی کے باعث دوبارہ پریشانی میں بدل گئی، جب انھیں یہ پتہ چلا کہ وہ جس جگہ کے لیے روانہ ہوئے تھے اس جگہ جانے کا ریلوے نے راستہ تبدیل کر دیا ہے اور اب وہ اپنے مقام پر کب پہنچے گے انھیں پتہ نہیں اور انکا یہ سفر "رام بھروسے " کا سفر ثابت ہو رہا ہے ۔ذرائع کے مطابق ، گذشتہ چند دنوں میں ہندوستانی ریلوے نے مہاراشٹر اور گجرات روانہ ہونے والی متعدد خصوصی ٹرینوں کے راستوں کو اچانک تبدیل کردیا ۔ پچھلے کچھ دنوں میں دو ہمسایہ ریاستوں اترپردیش اور بہار کے لئے روانہ ہونے والی کم از کم 13 ٹرینوں کے طے