تازہ ترین

جموں وکشمیر کا پُر امن حل ضروری

 پونچھ //جموں وکشمیر کی سابقہ وزیر اعلیٰ اور پی ڈی پی کی صدر محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کے مسلے کا پُر امن حل اشد ضروری ہوگیا ہے جبکہ مرکزی حکومت نے ترقی کا بہانہ بنا نے دفعہ 370کو منسوخ کیا ہے لیکن زمینی سطح پر تعمیر وترقی کا کوئی نام و نشان موجود نہیں ہے ۔ان خیالات کا اظہار موصوفہ نے سرحدی ضلع پونچھ کے اپنے تین روز دورے کے شروع میں سرنکوٹ میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کیا ۔محبوبہ مفتی نے کہاکہ انتخابات میں حصہ لینا ان کا مقصد نہیں ہے جبکہ جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن کی بحالی ان کا مشن ہے ۔موصوفہ نے کہاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے جموں وکشمیر کے سلسلہ میں اٹھائے گئے قدم کے بعد افرا تفری کا ماحول پیدا ہو ا ہے جبکہ مقامی عوام ہر طرح کے مسائل کا شکار ہو گئے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ مرکزی سرکار نے غیر آینی طور پر جموں و کشمیر کی شناخت کو ختم کر کے یہاں کی ریاست

منکوٹ تحصیل میں محکمہ جل شکتی کی اکثر سکیمیں مکمل بند

 مینڈھر //ضلع پونچھ کی سرحدی تحصیل منکوٹ میں محکمہ جل شکتی کی جانب سے چلائی جارہی اکثر واٹر سپلائی سکیمیں بند ہو گئی ہے جس کی وجہ سے جہاں ایک جانب فوج گاڑیوں کی مدد سے پانی سپلائی کررہی ہے وہائیں کئی دیہات میں لوگ کئی کلو میٹر کی پیدل مسافت طے کر کے پینے کیلئے صاف پانی لانے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔مقامی لوگوں نے محکمہ جل شکتی و ضلع انتظامیہ پونچھ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ کروڑو ں روپے خرچ کر کے تحصیل میں کئی واٹر سپلائی سکیمیں شروع کی گئی تھی تاکہ مقامی لوگوں کو گھروں میں ہی پینے کا صاف پانی سپلائی کیا جاسکے لیکن ملازمین و آفیسران کی مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے لگ بھگ سبھی واٹر سپلائی سکیمیں بند ہو گئی ہیں ۔انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ آفیسران کی غیر سنجیدگی کی وجہ سے ملازمین ڈیوٹی پر حاضر ہی نہیں ہورہے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ ملازمین کی لاپرواہی کے سلسلہ میں متعلقہ حکا

مینڈھر میں غیر قانونی قبضہ کیخلاف مہم برائے نام

 مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کے مقامی لوگوں نے محکمہ مال پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ متعدد علاقوں میں سرکاری اراضی سے غیر قانونی قبضہ ہٹانے کے نام پربڑے پیمانے پر رشوت لی جارہی ہے جبکہ محکمہ کے کچھ ملازمین کی ملی بھگت سے سب ڈویژن میں غیر قانونی قبضے کا عمل مسلسل جاری ہے ۔انہوں نے بتایا کہ تحصیل مینڈھر میں حالیہ دنوں کے دوران کئی جگہوں پر سرکاری اراضی کو خالی کروانے کے نام پر مہم چلائی گئی تاہم فوٹو گرافی اور فرضی کارروائی کرنے کے بعد قبضہ مافیا کو کھلی چھوٹ دے دی جاتی ہے جس کی وجہ سے وہ دوبارہ سے مذکورہ اراضی پر قبضہ کرلیتے ہیں ۔مینڈھر تحصیل کے رہائشی محمد جمید اور سجاد احمد نامی مکینوں نے بتایا کہ حالیہ دنوں میں محکمہ کی جانب سے کئی جگہوں پر غیر قانونی قبضہ ہٹانے کیلئے مہم شروع کی گئی تھی تاہم اخبارات ودیگر میڈیا میں خبریں شائع کروانے کے بعد محکمہ کی جانب سے مذکورہ جگہوں پر کوئی د

کوٹرنکہ میں 4ماہ سے تحصیلدار کی کرسی خالی

 کوٹرنکہ //سب ڈویژن ہیڈ کوارٹر کوٹرنکہ میں گزشتہ چار ماہ سے تحصیلدار کی کرسی خالی پڑی ہوئی ہے جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو ضروری لورزامات حاصل کرنے میں دقتوں کا سامنا کرناپڑریا ہے ۔جموں وکشمیر اپنی پارٹی کارکنوں نے انتظامیہ کی سستی پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی عرصہ سے آفیسر موصوف کی کرسی خالی پڑی ہوئی ہے تاہم ابھی تک اس سلسلہ میں کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا جارہا ہے ۔کوٹرنکہ میں جمع ہوئے کارکنوں نے کہاکہ اس سلسلہ میں کئی مرتبہ متعلقہ حکام سے بھی رجوع کیا جاچکا ہے ۔غور طلب ہے کہ سابقہ تحصیلدار رواں برس کے اپریل ماہ میں سبکدوش ہوگئے تھے تاہم اس کے بعد کسی متبادل آفیسر کی تعیناتی ہی نہیں ہوسکی ۔انہوں نے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ جلدازجلد کوٹرنکہ میں تحصیلدار کو تعینات کیا جائے تاکہ عام لوگوں کو درپیش مسائل حل ہوسکیں ۔  

گاڑی کی زد میں آکر خاتون زخمی

 مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کے دھار گلون علاقہ میں ایک خاتون تیز رفتار وین کی زد میں آکر شدید زخمی ہوگئی ۔مقامی لوگوںنے بتایا کہ ایک انتہائی تیز رفتار وین نے سڑ ک کے کنارے پر کھڑی مہناز اختر زوجہ محمد سجاد خان نامی خاتون کو ٹکر مار کر شدید زخمی ہو کردیا تاہم اس دوران وین اس قدر تیز رفتاری کیساتھ چلائی جارہی تھی کہ وہ ڈرائیور کے کنٹرول سے باہر ہو کر ایک گہری کھائی میں جا گری تاہم گاڑی کا ڈرائیور موقعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ۔مقامی لوگوں و رشتہ داروں نے خاتون کو پرائمری ہیلتھ سنٹر دھار گلون منتقل کیا جہاں پر ابتدائی مرحم پٹی کے بعد خاتون کو گور نمنٹ میڈیکل کالج راجوری مزید علاج معالجہ کیلئے منتقل کر دیا گیا ۔پولیس نے اس سلسلہ میں گورسائی پولیس سٹیشن میں ایک کیس درج کر تے ہوئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔  

تھنہ منڈی میں بجلی و محکمہ جل شکتی کیخلاف احتجاج

  تھنہ منڈی //سب ڈویژن تھنہ منڈی کے منیال علاقہ میں مقامی لوگوں نے محکمہ جل شکتی اور محکمہ بجلی کی لاپرواہی سے تنگ آکر شدید احتجاج کیا ۔مظاہرین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ محکمہ جات کے ملازمین کی غفلت شعاری اور غیر ذمہ دارانہ رویہ کسی بڑے خطرے کا باعث بن سکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ راجوری تا بفلیاز مغل روڈ کے جاری تعمیراتی کام کے دوران بجلی کے کئی کھمبوں کو نقصان پہنچا ہے جس کے ذریعے 33KV ترسیلی لائن اور کھمبے متاثر ہوئے ہیں۔ جو مقامی باشندوں کیلئے خطرے کا باعث ہے۔ادھر تعمیراتی کمپنی کے بیان کے مطابق بجلی کے کھمبے سڑک کے تعمیراتی کام کو متاثر کر رہے ہیں کمپنی کے مطابق آج سے تین ماہ قبل بجلی کی لائن اور کھمبوں کو متبادل جگہوں پر منتقل کرنے کیلئے متعلقہ محکمہ کو کہا گیا تھا جس پر تاہنوز عملدرآمد نہیں ہوا ہے۔  مظاہرین نے محکمہ جل شکتی سے بھی مطالبہ کیا ہے کہ سڑک کے تعمی

ساوجیاں سکول میں ’ہندی دیوس ‘پر تقریب کا انعقاد

 پونچھ//گورنمنٹ ماڈل ہائر سکینڈری سکول ساوجیاں میں ہندی دیوس کے سلسلہ میں ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا جس کے دوران سکول پرنسپل انور خان نے اردو اور کشمیری کے ساتھ ساتھ ہندی سیکھنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ یہاں ہندی اور سنسکرت زبانیں بہت پہلے بولی جاتی تھیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پرنسپل انور خان نے طلبہ وطالبات کو دوسری زبانوں کے ساتھ ساتھ ہندی سیکھنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا’ہندی کے فروغ کے لئے بھارت سرکار اپنی کوششیں جاری رکھی ہوئی ہے لیکن ہم لوگوں کی بھی حصہ داری ہونی چاہئے۔ انہوں نے طلباء پر زور دیتے ہوئے کہاکہ اردو او ر انگریزی کیساتھ ساتھ ہندی سیکھنے کی کوششیں کی جائیں ۔ہندی دیوس تقریب کے دوران طلبا نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور دیگر مقررین نے بھی ہندی سیکھنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ زیادہ سے زیادہ زبانوں کو سیکھنے کیلئے کوششیں جاری رکھی جائیں ۔  

کسانوں کی بہبودی کیلئے بیداری پروگرام منعقد

 پونچھ// محکمہ زراعت کی جانب سے کسانوں کی فلاح و بہبودی کیلئے ایک بیداری کیمپ کا انعقاد کیا گیا۔ اس دوران کسانوں کو حکومت کی مختلف سکیموں کے بارے میں جانکاری فراہم کی گئی۔محکمہ زراعت کے زیر اہتمام گائوں کنویاں میں کسان آگاہی پروگرام کے دوران کسانوں کو زراعت سے متعلق جانکاری فراہم کرتے ہوئے آفیسران نے کہا کہ وہ مرکز ی حکومت کی جانب سے چلائی گئی سکیموں کا زیادہ سے زیادہ فائد ہ اٹھائیں ۔محکمہ کے ضلع افسران نے بتایا کہ محکمہ کسانوں کی ترقی کیلئے کوشاں ہے۔ انھوں نے کہا کہ اکثر کسانوں کو حکومت کی مختلف سکیموں کے بارے میں جانکاری نہیں ہوتی جبکہ مذکور ہ فلاحی سکیموں کے باری میں لوگوں کو بیدار کرنے کیلئے مذکورہ نوعیت کے پروگرام منعقد کئے جاتے ہیں ۔  

رابطہ سڑک پر تار کول بچھانے کا عمل شروع

 پونچھ//ضلع ترقیاتی کونسل کی چیئرپرسن پونچھ تعظیم اختر نے بلاک پونچھ کے گاؤں بھینچ کا دورہ کیاجہاں انہوں نے کوٹ تا ڈکی سڑک پر تار کول بچھانے کے عمل کا ٓٓآغاز کیا ۔اس موقع پران کے ہمراہ محکمہ تعمیرات عامہ کے ایکس ای این اور دیگرا افسران کے علاوہ نائب سرپنچ بھینچ حاجی محمد صادق ، پنچایت ممبران اور مقامی لوگوں کی کثیر تعداد موجود تھے۔ حلقہ پنچایت بھینچ کے لوگوں نے اس ایک کلو میٹر سڑک پر تار کول بچھانے کا کام شروع کرنے کے لئے ان کا شکریہ ادا کیا ۔انھوں نے کہا کہا گائوں بھینچ کے مقامی لوگ عرصہ دراز سے اس سڑک پر تارکول بچھانے کا مطالبہ کررہے تھے جبکہ ضلع ترقیاتی کونسل چیئر مین نے عوامی مانگ کو دیکھتے ہوئے سڑک کو معیاری بنانے کیلئے تار کول بچھانے کا عمل شروع کروایا ہے ۔نائب سرپنچ بھینچ نے کہا کہ پچھلے کچھ سالوں سے لگاتار ان کو انتظامیہ کی جانب سے نظر انداز کیا جا رہا ہے۔مقامی لوگوں نے

بھاجپا ضلع صدر نے عوامی مسائل کا جائزہ لیا

 پونچھ//بھارتیہ جنتا پارٹی کے ضلع صدر انجینئر محمد رفیق چشتی نے پارٹی ورکران کے ہمراہ پنچایت کھنیتر ٹانڈا اور دپریاں کے مختلف مقامات کا خصوصی دورہ کر عوامی مسائل سے آگاہی حاصل کی ۔اس دوران مقامی لوگوں نے اپنے مسائل اور مطالبات کے سلسلہ میں بھاجپا لیڈرر کو علاقہ میں بنیادی سہولیات کی قلت و دیگر مسائل کے سلسلہ میں تفصیلی جانکاری فراہم کی ۔مقامی لوگوں کی مسائیل کو بغور سننے کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی کے ضلع صدر انجینئر محمد رفیق چشتی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلا لحاظ رنگ ونسل دبے کچلے لوگوں کی خدمت کرنا ان کا مشن ہے جس کے لئے شب و روز ان کے گھر کے دروازے عوام کے لئے کھلے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ عوام کی خدمت کے لئے سیاست میں آئے ہیں اور ان کا یہ جوش و جذبہ ہمیشہ قائم و دائم رہے گا۔انھوں نے کہاموجودہ حکومت ہر علاقہ کی یکساں ترقی کے لئے وعدہ بند ہے۔ موصوف کے اس تفصیلی دورہ پر عوام

مزید خبریں

نوشہرہ کے سرحدی دیہات میں پانی کی قلت  رمیش کیسر  نوشہرہ //سب ڈویژن نوشہرہ کے متعدد سرحدی دیہات میں گزشتہ کئی روز سے پانی کی سپلائی بند ہونے کی وجہ سے عام لوگوں کو شدید مشکلات کا سامناکرناپڑرہا ہے ۔سب ڈویژن کے سرحدی گائوں بیری پتن اور سیال کی عوام نے انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ مذکورہ دیہات میں گزشتہ 22روز سے پینے کے صاف پانی کی سپلائی بغیر کسی وجہ کے بند پڑی ہوئی ہے تاہم متعلقہ حکام سے رجوع کرنے کے باوجود بھی ان کو پینے کا صاف پانی سپلائی نہیں کیا جارہا ہے ۔انہوں نے محکمہ جل شکتی کے اعلیٰ آفیسران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ دیہات میں پانی کی سپلائی کو سنجیدگی کیساتھ لیا ہی نہیں جارہا ہے جبکہ مرکزی حکومت ہر ایک گھر میں پینے کا صاف پانی پہنچانے کے وعدے کررہی ہے تاہم زمینی سطح پر حالات یکسر مختلف ہیں ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سرحدی دیہات میں