بھاجپا نے کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کا ایک سال پورا ہونے کا جشن منایا، سرینگر میں مٹھائیوں کی تقسیم

 سرینگر//بھارتیہ جنتا پارٹی کے کشمیر یونٹ نے بدھ کو جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن کے خاتمے کا ایک سال مکمل ہونے کی خوشی میں جشن منایا۔ بھاجپا لیڈران نے پارٹی کے صدر دفتر پر ترنگا لہرا کر اور مٹھائیاں تقسیم کرکے اپنے جذبات کا اظہار کیا ہے۔ ”ہم دفعہ370کے خاتمے کا ایک سال مکمل ہونے کا جشن منارہے ہیں“، بھاجپا لیڈر الطاف ٹھاکر نے جواہر نگر سرینگر میں قائم پارٹی صدر دفتر پر نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ دفعہ370کے خاتمے نے جموں کشمیر کے اندر کافی مثبت تبدیلیاں لائی ہیں۔ انہوں نے کہا”پہلے پتھر بازی ہوتی تھی اورآئی ایس آئی ایس کے جھنڈے لہرائے جاتے تھے، اب ایسا نہیں ہوتا ہے،ہم اسی لئے جشن منارہے ہیں“۔ ٹھاکر نے کہا کہ جو آج کے دن کو ”یوم سیاہ“ کے طور مناتے ہیں وہ” آئی ایس آئی ایس کے ہمدرد ہیں“۔

جنوبی قصبہ شوپیان میں فورسز پر حملہ، کوئی نقصان نہیں

سرینگر//مشتبہ جنگجوﺅں نے بدھ کو جنوبی قصبہ شوپیان میں فورسز اہلکاروں پر گرینیڈ سے حملہ کیا اور گولیاں چلائیں ۔ نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق جنگجوﺅں نے فورسز کو قصبہ کے بنہ بازار علاقے میں نشانہ بنایا۔  تاہم اس واقعہ میں کوئی زخمی نہیں ہوا۔ واقعہ کے فوراً بعد فورسز نے علاقے کو محاصرے میں لیکر حملہ آوروں کی تلاش شروع کی۔  

کورونا متاثرین میں52509کا اضافہ، ملک میں مجموعی تعداد19لاکھ سے متجاوز

سرینگر//بھارت میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں52509کا اضافہ ہوا ہے جس سے مہلک وائرس سے متاثرین کی مجموعی تعداد19لاکھ سے تجاوز کرگئی۔ مرکزی وزارت صحت نے بدھ کو جو اعداد و شمار پیش کئے اُن کے مطابق گذشتہ24گھنٹوں کے دوران1282215کورونا متاثرین افراد شفایاب ہوئے ہیں۔ ابھی تک ملک میں کورونا سے1908254افراد متاثر ہوئے ہیں جبکہ857نئے مریضوں کی موت سے ہلاکتوں کی تعداد39795تک پہنچ گئی ہے۔ اس دوران مرکزی وزارت صحت کے مطابق ملک میں کورونا مریضوں کی شفایابی 67.19فیصد تک بڑھ گئی ہے جبکہ اموات کی شرح گر کر2,09فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ اس وقت ملک میں586244متحرک کورونا کیس ہیں۔  

دنیا میں کورونا سے ایک ارب سے زائد طالب علموں کی تعلیم متاثر:اقوام متحدہ

نیویارک// اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹریس نے کہاہے کہ کورونا وائرس کووڈ19کی وجہ سے تعلیمی سرگرمیوں میں تاریخ کا سب سے بڑا خلل آیا ہے اور جولائی کے وسط تک 160 سے زائد ممالک میں اسکول بند ہونے سے ایک ارب سے زائد اسٹوڈنٹس متاثر ہوئے۔ ایسو سی ایٹ پریس کے مطابق سکریٹری جنرل نے کہا کہ دنیا بھر میں کم از کم 4 کروڑ بچے اپنے پری سکول کے اہم ترین سال میں تعلیم سے دور ہوگئے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ کورونا وائرس کے نتیجے میں دنیا ایک نسل کی تباہی کا سامنا کر رہی ہے جس سے سامنے نہ آنے والی انسانی صلاحیت اور دہائیوں کی پیشرفت ضائع ہوسکتی ہے اور عدم مساوات بڑھ سکتی ہے۔  

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں دھماکہ ، 78 ہلاک،4ہزار زخمی

بیروت// لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ایک بندرگاہ پر منگل کی شام ہوئے ایک زبردست دھماکے میں کم از کم 78 افراد ہلاک ہوئے اور 4000 سے زائد زخمی ہوگئے۔ الجزیرہ ٹیلی ویڑن چینل نے لبنان کی وزارت صحت کے حوالے سے اطلاع دی۔ الجزیرہ ٹیلی ویڑن چینل کی رپورٹ کی تازہ ترین معلومات کے مطابق بیروت کے جہاز پر ہوئے اس خوفناک دھماکے میں 78 افراد ہلاک ہو گئے اور 4000 سے زائد دیگر زخمی ہوگئے۔ اس سے قبل لبنان کے وزیر داخلہ محمد فہمی نے کہا تھا کہ ابھی تک یہ واضح نہیں ہوسکا کہ یہ دھماکہ کوئی حملہ تھا یابیروت بندر گا ہ پردھماکہ خیز مواد کے ذخیرہ کے مقام کی وجہ سے ہوا۔ بیروت کی بندر گاہ ایک ایسی جگہ ہے جہاں بڑی مقدار میں دھماکہ مواد ذخیرہ کیا جاتا ہے۔ لبنان کے وزیر اعظم حسن دیاب نے منگل کے روز قوم سے خطاب میں کہا کہ بیروت دھماکے کے لئے جو لوگ بھی ذمہ دار ہیں انہیں بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔

جموں کشمیر میں کورونا کے390 نئے کیس ظاہر،10اموات

سرینگر//جموں کشمیر میں منگل کے روز کورونا وائرس کے390 نئے کیس ظاہر ہوئے۔ان میں238وادی کشمیر جبکہ 152کیس جموں صوبے میں ظاہر ہوئے۔اس طرح مرکز کے زیر انتظام علاقے میں کورونا سے متاثرین کی مجموعی تعداد22396تک پہنچ گئی۔ سرکاری ذرائع کے مطابق گذشتہ24گھنٹوں کے دوران کورونا کی وجہ سے 10اموات ہوئیں ۔  اسی عرصہ کے دوران824کورونا مریض شفایا ب بھی ہوگئے جبکہ فی الوقت جموں کشمیر میں کورونا کے7123متحرک کیس ہیں۔  

بانڈی پورہ میں کمسن بچہ غرقآب، دوسرے کو بچایا گیا

سرینگر//شمالی ضلع بانڈی پورہ میں منگل کو دوکمسن بچے ڈوب گئے  تاہم ان میں سے ایک کو زندہ نکالا گیا جبکہ دوسرے کی لاش بر آمد کی گئی ۔ حکام کے مطابق دوکمسن بچے نالہ مدھومتی میں بانڈی پورہ ضلع پولیس لائنز کے نزدیک تیرتے ہوئے غرقآب ہوئے۔  واقعہ کے فوراً بعد شروع کی گئی بچاﺅ کارروائی کے دوران ایک کو زندہ نکال کر ضلع اسپتال بانڈی پورہ منتقل کیا گیا جبکہ دوسرے کی لاش بر آمد کی گئی۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ بانڈی پورہ، ڈاکٹر بشیر احمد تیلی کے مطابق دو بچوں کو اسپتال پہنچایا گیا جو غرقآب ہوئے تھے۔ ان میں ایک اسپتال پہنچنے کے وقت ہی مردہ تھا جبکہ دوسرے کو سرینگر منتقل کیا گیا ہے۔  

سول سروسز امتحانات کے حتمی نتائج کا اعلان ،16کامیاب اُمیدوارو ں کا تعلق جموں کشمیر سے

سرینگر// یونین پبلک سروس کمیشن (یو پی ایس سی) نے منگل کے روز سول سروسز امتحان 2019 کے حتمی نتائج کا اعلان کیا ، جس میں پردیپ سنگھ نے پہلی ، جتن کشور نے دوسری اور پرتبھا ورما نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔کامیاب اُمیدواروں میں16کا تعلق جموں کشمیر سے ہے۔ اس بارمجموعی طور پر 829 امیدواروں کا انتخاب کیا گیا ہے۔ ان امیدواروں میں جنرل زمرہ کے 304 ، معاشی طور پر کمزور طبقات سے 78 ، دیگر پسماندہ طبقات کے 251 و 129 درج فہرست ذات اور درج فہرست قبائل کے 67 امیدوار شامل ہیں۔ کامیاب ہونے والے اُمیدواروں میں 16کا تعلق جموں کشمیر سے ہے ۔ان اُمیدواروں میں کپوارہ کی نادیہ بیگ،ترہگام کپوارہ کاآفتاب رسول،ککر ناگ اننت ناگ کا سبزار احمد گنائی اور شانگس اننت ناگ کا ماجد اقبال خان بھی شامل ہیں۔ یو پی ایس سی نے ستمبر 2019 میں سول سروس کے لئے تحریری امتحان لیا۔ رواں سال فروری اور اگست کے درمیان کئے گئے ا

جھڑپوں کے بعد مقامی لوگوں کے ہاتھوں لکھنپور ٹول پلازا کی توڑ پھوڑ،علاقے میں پابندیاں عائد

جموں//مقامی لوگوں نے گذشتہ رات جموں ،پٹھانکوٹ شاہراہ پر قائم لکھنپور ٹول پلازا کے ملازمین کے ساتھ جھڑپ کے بعد مذکورہ ٹول پلازا کی توڑ پھوڑ کی۔  یہ واقعہ اُس وقت پیش آیا جب مقامی لوگوں نے ،جو شاہراہ سے گذر رہے تھے، ٹول ٹیکس ادا کرنے سے انکار کیا جس کے بعد طرفین میں گرم گفتاری ہوئی۔ حکام کے مطابق معاملہ بہت جلد بگڑ گیا اور طرفین میں جھڑپ جھڑ گئی جس کے دوران چار افراد زخمی ہوگئے۔ ضلع مجسٹریٹ کٹھوعہ او پی بھگت کے مطابق”تین سے چار نوجوان زخمی ہوئے ہیں اور اُن کی حالت مستحکم ہے“۔ جھڑپوں کے دوران مزید مقامی افراد جائے مقام پر پہنچے اور لکھنپور ٹول پلازا کی توڑ پھوڑ کی جس کے بعد وہاں پولیس اور فورسز کی بھاری نفری تعینات کی گئی۔ انہوں نے مزید کہا کہ علاقے میں دفعہ144نافذ کیا گیا ہے اور ان پابندیوں کا اطلاق دو پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں ہوگا۔

ملک میں کورونا وائرس کے 52 ہزار سے زیادہ نئے کیس،تعداد18.5لاکھ سے زیادہ

نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس سے پیدا حالات دن بہ دن بدتر ہوتے جارہے ہیں اورگزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 52 ہزار سے زیادہ نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس سے متاثرہ افراد کی تعداد 18.5 لاکھ سے تجاوز کرچکی ہے جبکہ 803 افراد کی ہلاکت کے بعد مرنے والوں کی مجموعی تعداد 39 ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے۔ منگل کو مرکزی وزارت صحت کی جانب سے جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں میں52050 افراد کے کورونا سے متاثر ہونے کے بعد مجموعی تعداد بڑھ کر 1855746 ہوگئی۔راحت کی بات یہ ہے کہ اس عرصے کے دوران 44،306 افرادکورونا سے شفایاب ہوئے ہیں ، جس سے صحت مند افراد کی کل تعداد 12،30،510 ہوگئی ہے۔ زیادہ تر ریاستوں میں صحت مند افراد کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے فعال کیسز میں صرف 6،941 عدد کا اضافہ ہوا ہے ، جس کی وجہ سے ان کی تعداد 5،86،298 ہوگئی ہے۔ اسی دوران مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 38،938 ہوگئی ہے۔

کورونا ہلاکتوں کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری،مزید3از جان

سرینگر//وادی کشمیر میں گذشتہ رات کے دوران مزید تین افراد کورونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق ہوگئے۔اس طرح جموں کشمیر میںمہلک وائرس سے مرنے والوں کی تعداد412ہوگئی ہے۔ حکام کے مطابق آج از جان ہونے والوں میں بڈگام کی ایک65سالہ خاتون،خانیار سرینگر کا ایک75سالہ شہری اور بڈگام کا ایک65سالہ شہری شامل ہیں۔ بڈگام کی خاتون اور خانیار کا سرینگر سی ڈی اسپتال جبکہ بڈگام کا شہری سکمز صورہ میں انتقال کرگئے۔ ان تینوں افراد کے بارے میں نیوز ایجنسی جی این ایس نے اسپتالی ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ وہ کئی امراض میں مبتلاءتھا۔  

گاندربل میں نالہ سندھ سے عدم شناخت لاش بر آمد

کنگن// وسطی ضلع گاندربل کے سمبل گنڈ میں نالہ سندھ سے منگل کو ایک لاش برآمد کی گئی۔  کشمیر عظمیٰ کو ملی تفصیلات کے مطابق وسطی ضلع گاندربل کے سمبل گنڈ میں لوگوں نے نالہ سندھ میں ایک عدم شناخت لاش دیکھی جس کے بعد انہوں نے پولیس کو مطلع کیا ۔ گنڈ پولیس نے جائے وقوع پر پہنچ کر مقامی لوگوں کی مدد سے لاش نکال کر اپنی تحویل میںلی۔  ایس ایچ او پولیس سٹیشن گنڈ سجاد احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ لاش کونالہ سندھ سے برآمد کیا گیا اور ابھی تک اس کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔  

پٹن میں بارودی سرنگ کو ناکارہ بنایا گیا

سرینگر//سیکورٹی فورسز نے منگل کو شمالی کشمیر میں پٹن کے تاپر علاقے میں ایک بارودی سرنگ کا پتہ لگاکر اس کو ناکارہ بنایا۔ نیوز ایجنسی کے این او کے مطابق سیکورٹی فورسز نے بارودی سرنگ کوتاپر میں پیٹرول پمپ کے نزدیک نصب پایا۔ اس موقع پر بم ناکارہ کرنی والی ٹیم کو طلب کیا گیا جس نے مذکورہ سرنگ کو ناکارہ بنایا۔  

کورونا کے نئے590کیس،متاثرین کی مجموعی تعداد22ہزار سے زیادہ

سرینگر//جموں کشمیر میں پیر کو مزید590کورونا ٹیسٹ رپورٹ مثبت ظاہر ہوئے اور اس طرح متاثرین کی مجموعی تعداد 22ہزار سے تجاوز کرگئی۔آج ظاہر ہونے والے نئے کورونا کیسوں میں60مسافر بھی شامل ہیں۔ سرکاری ذرائع کے مطابق آج 433کیس وادی کشمیر جبکہ157کیس جموں صوبے میں ظاہر ہوئے۔ مذکورہ ذرائع کے مطابق آج بھی وادی کشمیر میںسب سے زیادہ کیس سرینگر میں ظاہر ہوئے جن کی تعداد180ہے۔بارہمولہ ضلع میں 23،پلوامہ میں14،کولگام میں11،شوپیان میں6،اننت ناگ میں35،بڈگام میں39،کپوارہ میں33،بانڈی پورہ میں36گاندربل میں56 کیس ظاہر ہوئے۔  جموں صوبے کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے ذرائع نے کہا کہ جموں ضلع میں آج 72،راجوری میں11،رام بن میں24،کٹھوعہ میں12،اُدھمپور میں14،سانبہ میں8،ڈوڈہ میں1،ریاسی میں7 اور کشتواڑ میں8کورونا کیس ظاہر ہوئے۔  

اُوڑی میں لاک ڈاﺅن کی خلاف ورزی کی پاداش میں 27گاڑیاں ضبط،3دکان سیل

اوڑی/ شمالی کشمیر کے اوڑی میں پیر کو لاک ڈاﺅن کی خلاف ورزی کی پاداش میں 27 گاڑیاں ضبط کی گئیں اور 3 دکانوں کو سیل کردیا گیا۔ ایس ڈی ایم اوڑی ریاض احمد ملک نے بتایا کہ ا±نہوں نے یہ گاڑیاں بانڈی، مہورہ،چندنواڑی اور نور کھا ہ سے ایک ناکہ کے دوران ضبط کیں اور تین دکاتوں کو اوڑی چندنواڑی اور نورکھا بازار وں میں سیل کیا۔ ایس ڈی ایم نے مزید بتایا کہ انہوں نے ناکہ کے دوران بارہمولہ سے اوڑی کی طرف جانے والی درجنوں گاڑیوں کو واپس کیا۔انہوں نے بتایا کہ ڈیوٹی مجسٹریٹوں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ لاک ڈاون کو سختی سے نافذ کریں۔  

مزید تین افراد جاں بحق ،اب تک دن میں چھ کورونا ہلاکتیں

سرینگر//جموں کشمیر میں گذشتہ رات سے چھ افراد کورونا کی وجہ سے اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔پہلے تین افراد کے موت واقع ہوئی جبکہ بعد میں حکام نے مزید تین افراد کے ازجان ہونے کی تصدیق کی۔  نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق نوا ب بازار سرینگر کی ایک 62سالہ خاتون سکمز میں دم توڑ بیٹھی۔اس کے علاوہ ایس کے کالونی اننت ناگ کا ایک65سالہ شہری اور راولپورہ سرینگر کا ایک شہری بھی جاں بحق ہونے والوں میں شامل ہیں۔ اس سے قبل آج صبح نیوکالونی سوپور کا ایک65سالہ شہری سب ضلع اسپتال سوپور میں چل بسا جبکہ صفا کدل سرینگر کا ایک85سالہ شہری اور میران صاحب جموں کا ایک60شہری جی ایم سی جموں میں جاں بحق ہوگیا۔  

جموں کشمیر میں کورونا وائرس سے مزید3افراد جاں بحق

سرینگر//جموں کشمیر میں پیر کے روز کورونا وائرس کی وجہ سے مزید تین افراد کی جانیں چلی گئیں۔ حکام کے مطابق آج جاں بحق ہونے والوں میں نیوکالونی سوپور کا ایک65سالہ شہری بھی شامل ہے جو سب ضلع اسپتال سوپور میں چل بسا۔ نیو زایجنسی جی این ایس کے مطابق صفا کدل سرینگر کا ایک85سالہ شہری بھی سکمز میں دم توڑ بیٹھا جبکہ میران صاحب جموں کا ایک60شہری جی ایم سی جموں میں جاں بحق ہوگیا۔  

کشمیرمیں بھاجپا لیڈر نے امت شاہ کی صحت یابی کے لئے روزے رکھنے شروع کئے

سری نگر//شمالی کشمیر کے ضلع کپوارہ سے تعلق رکھنے والے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر جاوید قریشی نے کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کی جلد صحت یابی کے لئے روزے رکھنے شروع کردیے ہیں۔ موصوف نے گذشتہ ہفتے بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے صدر رویندر رینہ کی کورونا سے صحت یابی کے لئے بھی روزے رکھے تھے جس کی وجہ سے وہ سوشل میڈیا پر موضوع بحث بن گئے تھے۔ جاوید قریشی نے اپنے ایک تازہ ویڈیو بیان میں کہا ہے ”ہمارے امت شاہ جی کا کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔ میں تب تک روزے رکھوں گا جب تک وہ ٹھیک نہیں ہوتے“۔  

ملک میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد 18لاکھ سے متجاوز

نئی دہلی//بھارت میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد پیر کو18لاکھ سے متجاوز کرگئی ۔مرکزی وزارت صحت کے مطابق گذشتہ24گھنٹوں کے دوران 52,972 کورونا کیسوں کے اضافہ سے مجموعی تعداد1803695 تک پہنچ گئی ہے۔ ملک میں اس عرصہ کے دوران 40 ہزار سے زیادہ افراد جان لیوا وبا سے شفایاب ہوچکے ہیں اور اس بیماری سے صحت یاب ہونے والوں کی مجموعی تعداد 11.86 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے۔ مرکزی وزارت صحت کی تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 40574افراد وبا سے شفایاب ہوئے ہیں جس سے صحت مند افراد کی مجموعی تعداد بڑھ کر 1186203ہوگئی ہے۔ اسی عرصہ کے دوران771اموات سے مجموعی ہلاکتوں کی تعداد 38135ہوگئی۔  

آکسفورڈ کے کورونا ویکسین کے دوسرے ، تیسرے مرحلے پر انسانی آزمائشوں پر ڈی سی جی آئی کی مہر

نئی دہلی// کنٹرولر جنرل آف ڈرگس آف انڈیا (ڈی سی جی آئی) نے انگلینڈ کی آکسفورڈ یونیورسٹی کے ذریعہ تیار کی جانے والی کورونا وائرس کووڈ 19 کے ٹیکے ’کوویشیلڈ‘ کے لئے ہندوستان میں دوسرے اور تیسرے مرحلہ کے ٹسٹ کی منظوری دے دی ہے۔ صحت اور خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت نے آج بتایا کہ ڈی سی جی آئی نے آکسفورڈ یونیورسٹی اور دوا ساز کمپنی آسٹرا زینیکا کے ذریعہ تیار کردہ کورونا ویکسین کے ہندوستان میں فیز ٹواور فیزتھری کے انسانی آزمائشوں کے لئے سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کو اپنی منظوری دے دی ہے۔ . پونے میں واقع سیرم انسٹی ٹیوٹ نے ’کوویشیلڈ‘ تیار کرنے کے لئے آسٹر زینیکا کے ساتھ معاہدہ کیا ہے۔ معاہدے کے مطابق سیرم انسٹی ٹیوٹ ہندوستان اور دوسرے کم اور اوسط آمدنی والے ممالک میں کوویشیلڈ کی سپلائی کرے گا۔ انسٹی ٹیوٹ رواں ماہ ملک بھر میں انسانی آزمائشوں کا تیسرا مرحلہ شروع کرے

تازہ ترین