تازہ ترین

جموں کشمیر میں73 کورونا ہلاکتیں،3344نئے کیس

سرینگر//جموں کشمیر میں پیر کو ابھی تک کے سب سے زیادہ 73افراد کورونا کی وجہ سے جاں بحق ہوگئے۔ اس دوران مرکزی انتظام والے علاقے میں3344کورونا کے نئے کیس سامنے آگئے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ آج وادی کشمیر سے1926جبکہ صوبہ جموں سے1418کیس سامنے آئے۔ ان اعداد و شمار کے مطابق ضلع سرینگر میں آج495،بارہمولہ میں118،بڈگام میں376،پلوامہ میں145،کپوارہ میں124،اننت ناگ میں228،بانڈی پورہ میں137،گاندربل میں82،کولگام میں164اور شوپیان ضلع میں56کیس سامنے آئے۔ جموں ضلع میں آج613،ادھمپور میں228،راجوری میں106،ڈوڈہ میں90،کٹھوعہ میں115،سانبہ میں89،کشتواڑ میں27،پونچھ میں56،رام بن میں43اور ریاسی میں51کیس ظاہر ہوئے۔  

جموں میں 500 بستروں والا کورونا ہسپتال 25 مئی کو آپریشنل ہوگا

سری نگر// جموں و کشمیر کے سرمائی دارالحکومت جموں میں ڈی آر ڈی او کی جانب سے تعمیر کئے جانے والے 500 بستروں والے کورونا ہسپتال کو رواں ماہ کی 25 تاریخ کو آپریشنل کر دیا جائے گا۔ تاہم سری نگر میں ڈی آر ڈی او نے بڈگام کے ریشی پورہ میں اس ہسپتال پر کام شروع کرنے کے بعد اچانک روک دیا اور اسے سری نگر کے مضافاتی علاقہ کھنموہ منتقل کر دیا جہاں اس پر کام جاری ہے۔  

جموں و کشمیر میں کورونا ٹیسٹنگ کی شرح میں 21 فیصد کمی درج

سری نگر// کورونا مخالف ویکسین کی قلت کے بیچ جموں و کشمیر میں روزانہ بنیادوں پر کی جانے والی کورونا ٹیسٹنگ کی شرح میں 9 سے 16 مئی تک قریب 21 فیصد کمی درج ہوئی ہے جبکہ اس عرصے کے دوران روزانہ بنیادوں پر درج ہو رہے مثبت کیسز کی شرح 10 فیصد زیادہ درج ہوئی ہے۔ دریں اثنا یونین ٹریٹری میں کورونا ویکسی نیشن مہم بھی تھم سی گئی ہے ۔وادی کشمیر جہاں لوگوں کے الزمات کے مطابق بیشتر ویکسی نیشن سینٹر بند ہوئے ہیں، میں 13 مئی سے کورونا ویکسین کے صرف 815 ٹیکے لگوائے گئے ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق وادی کے سری نگر، اننت ناگ، پلوامہ، کولگام اور کپوارہ اضلاع میں گذشتہ پانچ دنوں کے دوران کورونا ویکسین کا ایک بھی ٹیکہ نہیں لگوایا گیا ہے۔  

پروفیسر طلعت احمد کو آئی یو ایس ٹی کے وائس چانسلر کا اضافی چارج

سرینگر//حکومت جموں کشمیر نے پیر کے روز دانشگاہ کشمیر کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد کواسلامک یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی (آئی یو ایس ٹی) اونتی پورہ کے وائس چانسلر کا اضافی چارج سونپ دیا۔ پروفیسر طلعت کے پاس آئی یو ایس ٹی کے وائس چانسلر کا اضافی چارج اگلے احکامات تک رہے گا۔  اس سلسلے میں احکامات آج اس وقت صادر کئے گئے جب آئی یو ایس ٹی کے وائس چانسلر پروفیسر مشتاق صدیقی نے پانچ برس پر مشتمل اپنی مدت کار مکمل کرلی۔  

کرگل میں کورونا سے مرنے والے غیر مقامی عیسائی کی آخری رسومات مسلمانوں کے ہاتھوں انجام

کنگن//کرگل ضلع میں پیر کومقامی مسلمانوں نے رضاکارانہ طور پر ایک عیسائی کی آخری رسومات ادا کیں جس کی موت کورونا وائرس کی وجہ سے واقع ہوئی تھی۔  مقامی ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ کرگل میں تعینات رانچی جھارکھنڈ سے تعلق رکھنے والا این ایچ پی سی میں کام کررہا ایک ملازم، سمیر آکا ساکن رانچی جھارکھنڈ کا کورونا ٹیسٹ گذشتہ ہفتے مثبت آیا تھا جس کے بعد مذکورہ ملازم کو ہسپتال میں داخل کیا گیا جہاں وہ انتقال کرگیا۔ مہلوک ملازم عقیدے سے عیسائی تھا ۔اس کا انتقال ہوتے ہی مقامی مسلمان رضاکاروں نے مذکورہ عیسائی کی لاش کو مسلم قبرستان سے متصل چمن موڈ کے قریب دفن کردیا۔  صدر انجمن جمعیت العلماءاثنا ئِ عشریہ کرگل نے اپنے ٹویٹر ہنڈل پر تدفین کی کچھ تصاویر شیئر کی ہیں۔  

سری نگر میں پانچ مقامی جنگجو سر گرم ہیں: آئی جی پی کشمیر

سری نگر// کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار نے کہا ہے کہ سری نگر میں پانچ جنگجو سرگرم ہیں جن کی تلاش جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضلع میں جنگجو اعانت کاروں کا بھی ایک وسیع نیٹ ورک ہے جن میں سے کئی اعانت کاروں کو گرفتار کیا گیا ہے اور ’سی‘ زمرے کے اعانت کاروں کی کونسلنگ کی جارہی ہے۔ موصوف انسپکٹر جنرل نے ان باتوں کا اظہار پیر کے روز یہاں نامہ نگاروں کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کیا۔  

ادھمپور جیل کے479قیدیوں میں72کورونا مثبت

سرینگر//حکام نے پیر کو بتایا کہ ادھمپور جیل میں مقید479قیدیوں میں سے72کے کورونا ٹیسٹ رپورٹ مثبت آئے ہیں۔ نیوز ایجنسی کے این او نے ادھمپور جیل کے سپر انٹنڈنٹ ہریش کوتوال کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ قیدیوں کے نمونے گذشتہ روز حاصل کئے گئے تھے اور آج ان میں72قیدیوں کے رپورٹ مثبت آئے ہیں۔ کوتوال نے مزید کہا کہ جیل کے اندر ہر احتیاطی تدبیر اختیار کی جارہی ہے اور جیل کے اندر بنیادی ڈھانچے کی بھی کوئی کمی نہیں ہے۔  

اقوام متحدہ کا اسرائیل اور فلسطین سے جھڑپیں روکنے کا مطالبہ

اقوام متحدہ// اقوام متحدہ نے اسرائیل اور فلسطین کے مابین جاری جھڑپوں کو جلد از جلد روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے یہ مطالبہ کیا ہے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس کے دوران ، گوٹیرس نے کہا ”لڑائی کا خاتمہ ہونا ضروری ہے۔ اسے فوری طور پر روکا جائے۔ ایک طرف راکٹ اور مارٹر اور دوسری طرف فضائی اور توپ کے جملے بند ہونے چاہئے۔ میں تمام فریقوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس اپیل پر دھیان دیں“۔ انہوں نے کہا کہ جنگ بندی کے لئے تنظیم تمام فریقوں سے فوری طور پر بات چیت کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا ”اس جھڑپ میں انسانی بحرانوں اور انتہا پسندی کو بڑھاوادینے کی صلاحیت ہے۔نہ صرف فلسطین اور اسرائیل بلکہ پورے خطے میں ہی انسانی بحرانوں اور انتہا پسندی میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ اس سے خطرناک طور پر عدم استحکام پیدا ہوگا۔“  

کھنموہ آپریشن کے دوران2 عدم شناخت جنگجو جاں بحق

سری نگر// سری نگر کے مضافاتی علاقہ کھنموہ میں سیکورٹی فورسز اور جنگجوو¿ں کے درمیان جاری تصادم آرائی میں 2 عدم شناخت جنگجو جاں بحق ہوئے ہیں۔ یہ معرکہ آج صبح اس وقت شروع ہوگیا جب فورسز آپریشن کے دوران طرفین کا آمنا سامنا ہوا ۔   پولیس نے ٹویٹ میں کہا”کھنموہ میںایک اور عدم شناخت جنگجو ہلاک، کل تعداد دو، آپریشن جاری“۔ قبل ازیں پولیس ذرائع کے مطابق جنگجوو¿ں کے چھپنے کی اطلاع موصول ہونے پر پیر کی صبح سیکورٹی فورسز نے سری نگر کے کھنموہ علاقے کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔

کورونا معاملوں میں کمی، ملک میں 281386 نئے کیس،4106ہلاکتیں

نئی دہلی// ملک میں کورونا انفیکشن کے شدید بحران کے درمیان گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 281386 نئے کیس سامنے آئے ہیں جبکہ 378741 افراد اس وبا کو شکست دے چکے ہیں۔ اس دوران چھ لاکھ 91 ہزار 211 افراد کو ٹیکے لگائے گئے۔ ملک میں اب تک 18 کروڑ 29 لاکھ 26 ہزار 460 افراد کو ویکسین دی جا چکی ہے۔ مرکزی وزارت صحت کی جانب سے پیر کی صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران تین لاکھ 78 ہزار 741 مریض بازیاب ہوئے ہیں ، جس سے بحالی کی شرح 84.25 فیصد ہوگئی ہے۔ اب تک دو کروڑ 11 لاکھ 74 ہزار 076 افراد نے کورونا کو شکست دی ہے۔ اس دوران 281386 نئے معاملات سامنے آنے سے متاثرین کی تعداد دو کروڑ 49 لاکھ 65 ہزار 463 ہوگئی۔ فعال معاملات 101461 سے گھٹ کر 35 لاکھ 16 ہزار 997 ہوگئے ہیں۔اس دوران 4106 مریض اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے جس سے مرنے والوں کی تعداد 274390 ہوگئی ہے۔ ملک میں فعال کیسز کی شرح

سرینگر کے مضافات میں فورسز آپریشن کے دوران معرکہ آرائی

سرینگر//سیکورٹی  فورسز  اور  جنگجووں  کے  مابین  پیرکی  صبح  سرینگر  کے  مضافاتی  علاقہ  کھنموعہ  میں  معرکہ  آرائی  شروع  ہو  گئی۔ یہ  اطلاع  پولیس  نے  ٹویٹ  کرتے  ہوئے  دی۔ ذرائع  کے  مطابق  یہ  معرکہ  اُس  وقت  شروع ہوا  جب  فورسز  آپریشن  کے  دوران  جنگجووں  اور  فورسز  کا  آمنا  سامنا  ہوا  اور  طرفین  نے  ایک  دوسرے  پر  گولیاں  چلائیں۔ پولیس  کے  مطابق  آخری  اطلاعات  موصول  ہونے  تک  طرفین  میں  گولیوں  کا  تبادلہ  جاری  تھا۔ ذرائع 

تازہ ترین