تازہ ترین

رام باغ سرینگرمیں شوٹ آئوٹ| 3ملی ٹینٹ جاں بحق

سرینگر// رام باغ چوک میں بدھ کی سہ پہر مختصر فائرنگ ہوئی جس کے بعد پولیس نے 3 جنگجوئوں کی ہلاکت کو دعویٰ کیا۔یہ واقعہ سہ پہر تقریباً 5بجے پیش آیا۔اُس وقت رام باغ میں گاڑیوں اور لوگوں کی بھار ی بھیڑ تھی اور چھاپڑی فروشوں کے آگے بھی بری تعداد میں لوگ خریداری کررہے تھے۔پولیس نے کہا ہے کہ مہلوکین میں پائین شہر کا عسکری کمانڈر مہران بھی شامل ہے جو عید گاہ علاقے میں 2ٹیچروں کی ہلاکت میں ملوث تھا۔ واقع کیسے ہوا؟ پولیس نے بتایاکہ کچھ جنگجوئوںکے حرکنات و سکنات کے بارے میں انہیں مصدقہ طور پر اطلاع ملی جس کے بعد رام باغ کراسنگ، برزلہ پل اور باغات چوک میں ناکے لگائے گئے اور مشکوک گاڑیوں کی چیکنگ کی جاتی رہی۔بتایا گیا ہے کہ سولنہ کی طرف سے رام باغ پل کراس کرنے کے بعد نیلے رنگ کی ایک ویگنار گاڑی کو رکنے کا اشارہ کیا گیا لیکن واپس فائر کیا گیا اور جوابی کارروائی میں شوٹ اوٹ کے دوران 3ملی ٹی

سردی میں خشک موسم مدافعتی نظام کیلئے ٹھیک نہیں

سرینگر //دمہ اور چھاتی کے مختلف امراض میں مبتلا افراد کو شدید سردی اور خشک موسم میں باہر آنے سے پرہیز کرنے کی تلقین کرتے ہوئے معالجین کا کہنا ہے کہ سردی اور خشک ہوائوں کی وجہ سے چھاتی کے امراض میں مبتلا مریضوں کی مدافعتی قوت کم ہوجاتی ہے اور اس دوران کبھی بھی کوئی بھی وائرس حملہ کرسکتا ہے۔ امراض چھاتی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ عمر رسیدہ افراد کو بلا وجہ گھروں سے باہر نہیں آنا چاہئے اور نہ ہی گھروں میں دھواں پیدا کرنے والی بخاریوں کا استعمال کرنا چاہئے۔ پچھلے 2ہفتوں سے میڈیکل سائنسز صورہ  میں شعبہ جنرل میڈیسن میں علاج و معالجہ کیلئے آنے والے افراد کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔ شعبہ انٹرنل میڈیسن میں بطور اسسٹنٹ پروفیسر تعینات ڈاکٹر مدثر قادری نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ سردی اور خشک موسم کی وجہ سے دو ہفتوں میں چھاتی کے امراض میں مبتلا مریضوں میں 20فیصد اضافہ ہوا ہے‘&

۔80کروڑ غریب راشن کارڈ ہولڈروں کو راحت

نئی دہلی//مرکزی کابینہ نے بدھ کو ایک بڑی راحت فراہم کرتے ہوئے پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا (PMGKAY) کے تحت مفت اناج کی فراہمی مارچ 2022تک بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پردھان منتری غریب کلیان انا یوجناکے تحت ملک بھرمیں80 کروڑ سے زیادہ مستفیدین کو ہر ماہ فی کس 5 کلو گرام اناج مفت فراہم کیا جا رہا ہے۔اس اسکیم کو ابتدائی طور پر اپریل 2020 سے3 ماہ کیلئے شروع کیا گیا تھا تاکہ کووڈ19 وباء کے دوران غریب لوگوں کو ریلیف فراہم کیا جا سکے۔ اس کے بعد یوجنا کی معیادکو کئی بار بڑھایا جا چکا ہے۔نیشنل فوڈ سیکورٹی ایکٹ (این ایف ایس اے) کے تحت غریب راشن کارڈ ہولڈروں کو5 کلو گرام غذائی اجناس عام کوٹے سے زیادہ فراہم کیا جا رہا ہے۔ مرکزی کابینہ کی میٹنگ کے بعد مرکزی وزیر برائے اطلاعات و نشریات انوراگ ٹھاکر نے بتایا کہ پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا کومزید4 ماہ کیلئے یعنی مارچ 2022 تک بڑھا یا گیا ہے۔انہوں

مثبت کیس بدستور 170سے زیادہ

سرینگر //جموں و کشمیر میں بدھ کو مسلسل دوسرے دن بھی کورونا وائرس سے2افراد فوت ہوگئے ۔ متوفین می مجموعی تعداد 4466تک پہنچ گئی ہے۔ 24گھنٹوں میں  50ہزر 846ٹیسٹ کئے گئے جن میں 5مسافروں سمیت مزید 174افراد کی  رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔ جموں و کشمیر میں متاثرین کی مجموعی تعداد 3لاکھ 35ہزار 881تک پہنچ گئی ہے۔  وائرس سے مزید 174افراد متاثر ہوئے جن میں  جموں میں 25اور کشمیر سے 149افراد شامل ہیں۔کشمیر میں متاثر ہونے والے سبھی 149افراد مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔  149افراد میں سب سے زیادہ سرینگر میں 58، بارہمولہ میں43، بڈگام میں18، پلوامہ میں0، کپوارہ میں11، اننت ناگ میں 3، بانڈی پورہ میں8، گاندربل میں 7، کولگام میں0جبکہ شوپیان میںایک کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔  مجموعی تعداد 2لاکھ 11ہزار کا ہندسہ پار کرکے 2لاکھ 11ہزار17 تک پہنچ گئی ہے۔ اس دوران کشمی

۔’26نومبر یوم آئین‘ کی تقریبات

سرینگر//حکومت نے صوبائی کمشنروں، سرکاری محکموں اور کارپوریشنوں و نیم سرکاری اداروں کے سربراہان کو ہدایت دی ہے کہ’26نومبر یوم آئین‘ منانے کیلئے وہ اپنے دفاتر و مقامات پر’تمہید‘ پڑھنے کی سرگرمیوں سے متعلق تقاریب کا انعقاد کرے۔ سرکار کی جانب سے جاری سرکیولر میں کہا گیا ہے’’یوم آئین، جسے ’’سمودھان دیوس‘‘ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، ہر سال 26 نومبر کو  منایا جاتا ہے۔ 26نومبر 1949کو، ہندوستان کی دستور ساز پارلیمنٹ نے ہندوستان کے آئین کو اپنایا، جو 26 جنوری 1950 سے لاگو ہوا۔ سرکیولر میں کہا گیا کہ اسی مناسبت سے، جشن منانے اور آئین میں درج نظریات کے حوالے سے’’ شہریوں کو حساس بنانے کے لیے26 نومبر 2021کو صبح 11 بجے ملک بھر میں تمہید پڑھنے کی تقریبات منعقد کی جائیں گی جس کی صدارت صدر ہند کریں گے۔‘‘ سرکار کی

محکمہ دیہی ترقی و پنچایتی راج

سرینگر// محکمہ دیہی ترقی و پنچایتی راج میں61 امیدواروں کی اکاونٹس اسسٹنٹوں کے بطور تعیناتی لائی گئی۔ ڈائریکٹر دیہی ترقی طارق احمد زرگر کی جانب سے بدھ کو جاری آرڈر میں کہا گیا کہ سروس سلیکشن بورڈ اور انتظامی محکمہ کی جانب سے موصولہ مکتوب کے مطابق ان افراد کی  عارضی طور پر تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے۔ اکاونٹس اسسٹنوں میں زاہدہ منظور،سنیل کمار، انجلی بھگت، چودھری مصطفی،ٰ امانت عطا اللہ شاہ اور عتیق الرحمان شامل ہیں۔ متعلقہ بلاک ڈیولپمنٹ افسراں ان اکونٹس اسسٹنوں  کو2سے3پنچایتی حلقوں کا چارج تفویض کریں،جبکہ  تعینات شدہ اکونٹس اسسٹنوں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ آرڈر کے مشتہر ہونے کے21روز تک متعلقہ بلاک ڈیولپمنٹ افسراں کے دفاتر میں رپورٹ کریں۔ ایک اور حکم نامہ کے مطابق ارن کھجوریہ،سید عاقب علی کاظمی، میتھن شرما، سوربھ شرما،مختار احمد،شازیہ قریشی اور ابرار احمد کی تعیناتی کو بھی

۔17لاکھ روپے کا خرد برد

سرینگر/بلال فرقانی/ انسداد رشوت ستانی ادارے’اینٹی کورپشن بیورو‘ نے سابق چیف میڈیکل افسر بڈگام کے خلاف خرد برد کے ایک معاملے میں  سرینگر کی ایک خصوصی عدالت میں چارج شیٹ پیش کیا۔ اینٹی کورپشن بیورو میں اس کیس کا اندراج سال2009-10میں چیف میڈیکل آفس بڈگام میں17لاکھ روپے کے خرد برد کے الزام  پر تحقیقات کے بعد درج کیا گیا تھا۔ اے سی بی کے مطابق، کیس کی تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ گاڑیوں کی خریداری اور مرمت سے متعلق فرضی بل تیار کرکے خزانہ عامر کو 11لاکھ78ہزار240روپے کانقصان پہنچایا گیا۔  چیف میڈیکل افسر بڈگام نے دیگر ملزمان کے ساتھ ساز باز کرکے8لاکھ ایک ہزا990روپے نکالے اور نجی فرم کو دئیے گئے۔اے سی بی کے مطابق3 گاڑیوں کی مرمت سرے سے ہی نہیں کی گئی،اور نہ ہی ان کو اس کیلئے رقم دی گئی۔ دو ’ ایل ای ڈی ہورڈنگس‘کی تنصیب اور شارٹ فلموں کی تیاری کا

۔3زرعی قوانین کی واپسی پر کابینہ کی مہر

نئی دہلی //مرکزی کابینہ میں تینوں زرعی قوانین کو رول بیک کرنے والے بل کو منظوری دے دی گئی ہے۔واضح رہے کہ 19 نومبر کو گرونانک جینتی کے موقع پر ملک سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے تینوں زرعی قوانین کو واپس لینے کا اعلان کیا تھا۔ اب کابینہ میں منظور شدہ ’زرعی قوانین کی منسوخی بل2021‘کو پارلیمان کے ایوان زیریں یعنی لوک سبھا میں 29 نومبر سے شروع ہونے والے  سرمائی اجلاس میں منظوری کیلئے پیش کیا جائے گا۔ مرکزی وزیر برائے اطلاعات و نشریات انوراگ ٹھاکر نے کابینہ میٹنگ کے بعد بتایا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں مرکزی کابینہ نے تین زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کیلئے رسمی کارروائیاں مکمل کر لی ہیں۔مختصر پریس بریفنگ کے دوران انوراگ ٹھاکر نے کہاکہ وزیر اعظم کی قیادت میں مرکزی کابینہ نے تین زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کیلئے رسمی کارروائیاں مکمل کیں۔ پارلیمنٹ کے آئندہ ا