تازہ ترین

حدی بندی کمیشن رپورٹ 6مارچ کو

ریاستی درجہ بحالی بعد میں ، پہلے الیکشن :اشوک کول

تاریخ    30 نومبر 2021 (00 : 01 AM)   


عازم جان
بانڈی پورہ// جموں کشمیر میںبھارتیہ جنتا پارٹی کے جنرل سیکریٹری (آرگنائزیشن ) اشوک کول نے کہا ہے کہ حد بندی کے بعد اسمبلی انتخابات ہونگے لیکن وادی میںپر امن صورتحال کی واپسی کے بعد ہی ریاستی درجہ کی بحالی ممکن ہے۔ بانڈی پورہ میں نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسمبلی نشستوں کی سر نو حد بندی کا عمل مکمل ہونے کے فوراً بعد جموں وکشمیر میں انتخابات ہوں گے اورریاست کی بحالی کے حوالے سے موزون وقت پر فیصلہ کیا جائے گا۔موصوف نے کہا’’جموں وکشمیر میں اسمبلی نشستوں کی سر نو حد بندی کے فوراً بعد انتخابات منعقد ہوں گے ، الیکشن کمیشن کو حد بندی کے بعد نئے قوانین بنانے میں تھوڑا وقت لگے گا اور اس کے بعد ہی الیکشن منعقد کرائے جائیں گے‘‘ ۔اُن کا کہنا تھا کہ حکومت نے حد بندی کمیشن کو اپنی رپورٹ پیش کرنے کیلئے 6 مارچ کا وقت دیا ہے اوراس کے بعد ڈیڈ لائن میں کوئی توسیع نہیں کی جائے گی۔ایک سوال کے جواب میں جنرل سیکریٹری نے کہا کہ حالات پوری طرح معمول پر آنے کے بعد ہی جموں وکشمیر کو ریاست کا درجہ واپس ملے گا۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر داخلہ امیت شاہ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ بہت جلد ریاستی درجہ کی بحالی کا فیصلہ لیا جائے گا۔شہری ہلاکتوں کے بارے میں اشوک کول نے کہا کہ کوئی مذہب عام شہریوں کو قتل کرنے کی اجازت نہیں دیتا ۔انہوں نے کہا کہ سلامتی ادارے عام شہریوں کو تحفظ فراہم کرنے کی خاطر زمینی سطح پر کام کر رہے ہیں۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کی قیادت میں سرکار اچھی طرح سے چل رہی ہے اور جب منتخب نمائندے آئیں گے تو اور اچھی طرح سے چلے گی۔
 ، عوام کو اس حوالے سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے ۔
 

تازہ ترین