تازہ ترین

جموں میں دو روزہ’ قبائلی اَدبی و ثقافتی فیسٹول‘ اِختتام پذیر

تاریخ    26 نومبر 2021 (00 : 01 AM)   


جموں//آزادی کا امرت مہااُتسو کے تحت منائے جانے والے جنجاتیہ گورو سپتہ کے ایک حصے کے طور پر جاری’ قبائلی ادبی و ثقافتی فیسٹول ‘ جموں یونیورسٹی کے جنرل زورآور سنگھ آڈیٹوریم میں اختتام پذیر ہواجس فیسٹول کا ایک دِن پہلے لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے اِفتتاح کیا تھا۔ڈاکٹر شاہد اِقبال چودھری کی سربراہی میں ٹرائبل ریسرچ اِنسٹی چیوٹ کے زیر اہتمام دو روزہ فیسٹول میں متنوع ثقافتی ورثے ، ثقافت، فن، دستکاری ، ضیافتیں ، جڑی بوٹیوں کی ادویات وغیرہ کے ساتھ مختلف قبائلی برداریوں کے ادبی ورثے کی نمائش کی گئی ۔اِس فیسٹول نے بہت سے فنکاروں کو پہلی بار یوٹی سطح پر اَپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے کا موقعہ فراہم کیا اور اُنہوں نے حوصلہ اَفزا کام کیا اور قبائلی ثقافت کے تحفظ کو بھی فرو غ دیا ۔ دو دن کے دوران زائد اَز 300 فنکاروں اورسکالروںنے مختلف تقریبات میں شرکت کی۔اِختتامی دِن کی جھلکیاں گجر ، بکروال ، گڈی ، سپی اور شینا قبائل پر محققین کی طرف سے مشاعرہ ، پیپر ریڈنگ سیشن، تھیٹرپرفارمنس ، لوک موسیقی اور گجر ، گڈی اور شینا قبائل کے رقص تھے۔ گوجری زبان میں ایک مشاعرہ منعقد کیا گیا جس میں 60 سے زائد شعرا¿ نے شرکت کی ۔دورانِ اِختتامی تقریب ڈائریکٹر قبائلی اَمور محکمہ مشیر احمد مرزا نے جموں وکشمیر میں جنجاتیہ گورو ہفتہ کے دوران منعقدہ تقریبات پر روشنی ڈالی اور آزادی کی جدوجہد میں قبائلی برادریوں کے تعاون کے بارے میں بھی روشنا س کیا۔اُنہوں نے اُمید ظاہر کی کہ اس قسم کی تقریب کو قبائلی برادریوں کی جانب سے ایک پلیٹ فارم کے طور پر استعمال کیا جائے گا تاکہ نہ صرف اَپنے ورثے اور ثقافت کو ظاہر کیا جاسکے بلکہ نوجوان پود کو اَپنی ثقافت کو محفوظ رکھنے کی ترغیب دی جاسکے۔ دو روزہ فیسٹول میں 2,500 سے زائد سیاحوں اور فنکاروں نے شرکت کی۔