تازہ ترین

زوجیلہ سرنگ پروجیکٹ

ایک ٹنل کی کھدائی کا کام مکمل

تاریخ    23 نومبر 2021 (00 : 01 AM)   


نئی دہلی//میگھاانجینئرنگ اینڈانفراسٹرکچرلمیٹڈنے پیر کو کہا کہ اُس نے زوجیلاٹنل منصوبے کی ایک ٹنل کی کھدائی کاکام مکمل کیا ہے۔ایک بار مکمل ہوجانے کے بعد ہمہ موسمی سرنگ سے سرینگر اورلداخ کے درمیان موسم سرما میں رابطے کا فقدان ختم ہوجائے گااور دونوں مقامات کے درمیان سفر کے دورانیہ میں بھی پانچ گھنٹے کی کمی ہوگی۔ایک بیان میںمیگھاانجینئرنگ اینڈانفراسٹرکچرلمیٹڈنے کہا کہ انہوں نے جموں کشمیراورلداخ خطوں میں زوجیلاپہاڑ پر ہمہ موسمی ٹنل منصوبے میں نمایاں پیش رفت حاصل کی ۔پیر کوٹنل نمبر1کے 472میٹر دوسرے ٹیوب کی کھدائی مکمل ہوئی ۔ 448میٹرٹیوب ایک کی دیوالی کے موقعہ پر4نومبر کو کھدائی مکمل کی گئی۔میگھاانجینئرنگ اینڈ انفرا سٹرکچر لمیٹڈکے مطابق دوسری ٹنل کی کھدائی جاری ہے۔ 4600کروڑروپے کا یہ پروجیکٹ یکم اکتوبر کوانجینئرنگ پروکیورمنٹ اینڈ کنسٹرکشن موڈ میں دیاگیا۔پہلے جاری کئے گئے سرکاری بیان کے مطابق زوجیلہ پروجیکٹ کے تحت سطح سمندر سے3000میٹر بلندی پر14.15کلومیٹر طویل ٹنل تعمیر کرنی ہے جس سے سرینگر کارابطہ ہرموسم میں دراس اور کرگل سے ہوتے ہوئے لیہہ سے ہوگا۔یہ پوری دنیا میں گاڑی چلانے کیلئے دشوار گزار راستہ ہے اوریہ پروجیکٹ بھی دفاعی اہمیت کا حامل ہے۔اس سرنگ سے سرینگر کی وادی اور لیہہ کے سطح مرتفع کے درمیان ہمہ موسمی رابطہ ہوگااورجموں کشمیر اورلداخ کی سماجی وتہذیبی اوراقتصادی منظر نامے میں ہرسواتحاد ہوگا۔