تازہ ترین

شہر کی 8بستیوں میں 10دنوں کیلئے کرفیو نافذ

لازمی خدمات کو چھوڑ کر تمام غیر ضروری سرگرمیوں پر پابندی

تاریخ    25 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   
(File Photo)

پرویز احمد
سرینگر//سرینگر میں متواتر طور پر کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ کے بعد ضلع انتظامیہ نے8علاقوں میں 10دنوں تک کورونا کرفیو نافذ کرنے کا حکم صادر کیا ہے۔ ضلع مجسٹریٹ اعجاز اسد کی جانب سے جاری کئے گئے حکمنامہ میں کہا گیا ہے’’ پچھلے کچھ دنوں کے دوران کورونا مثبت آنے والے کیسوںمیں سے 70فیصدشہر کے چند علاقوں سے سامنے آرہے ہیں اور قوائد و ضوابط کے اطلاق کے باوجود بھی ان علاقوں میں متاثرین کی تعداد میں کمی نہیں آرہی ہے‘‘۔ حکمنامہ میں مزیدکہا گیا ہے کہ متاثرین کی تعداد میں کمی کیلئے چند علاقوں میں سخت پابندیاں عائد کرنے کی ضرورت ہے، اسلئے تمام صورتحال کا جائزہ لیا گیااور چند علاقوں میں پابندیاں عائد کرنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔ حکم نامہ کے مطابق ضلع مجسٹریٹ سرینگر نے دفعہ 144سی آر سی پی کے تحت اپنے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے زڈی بل کے وارڈ 55حول،وارڈ 56 علمگری بازار، وارڈ 63کاٹھی دروازہ، وارڈ نمبر 59 لال بازار،وارڈ 60بٹہ شاہ محلہ اور وارڈ 61عمر کالونی سی میں 10دنوں کیلئے سخت کورونا کرفیو لاگو کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ کورونا کرفیو کے دوران ان علاقوں میں صبح 7بجے سے 11بجے تک نجی اور سرکاری سطح پر دستیاب لازمی خدمات کو جاری رکھنے کی اجازت ہوگی جن میںعلیحدہ پرچون کی دکانیں،سبزیاں،گوشت اور دودھ کی دکانیں شامل ہیںلیکن ضلع انتظامیہ کی طرف سے ان علاقوں میں ضروری سپلائی کی معمول کے مطابق جاری رکھنے کی اجازت ہوگی۔ تمام ملازمین کو شناختی کارڈ دکھانے کے بعد ڈیوٹی پر جانے کی اجازت دی جائے گی۔ ان علاقوں میں ترقیاتی کاموں اور کورونا مخالف ٹیکہ کاری بھی معمول کے مطابق جاری رکھنے کی اجازت ہوگی۔ ضلع انتظامیہ نے ان علاقوں میں24گھنٹوں تک جاری رہنے والے کرفیو کے دوران تمام تعلیمی ادارے، شاپنگ کمپلیکس، بازار، سینما، ریستوران، کھیل میدان، جیم، پارکوں کو بند رکھنے کی ہدایت دی ہے۔حکم نامہ میں باہر یا کسی بلڈنگ میں کوئی بھی سماجی پروگرام منعقد کرنے کی اجازت نہیں ہوگی جبکہ شادیوں میں20اورآخری رسومات کے اجتماعات میں صرف 10افراد کو شامل ہونے کی اجازت دی جائے گی۔ 
 

تازہ ترین