بانہال قصبہ میں نکاسی آب کی نالی خستہ حال،لوگ پریشان

کروڑوں کی لاگت سے ڈرین کا کام شروعات کے فوراً بعد بند

تاریخ    21 جولائی 2021 (00 : 01 AM)   


محمد تسکین
بانہال// جموں سرینگر شاہراہ پر واقع قصبہ بانہال میں گندے پانی کے نکاسی کیلئے سڑک کے برلب دہائیوں پہلے بنی چادر روڈ آرگنائزیشن کی طرف سے شاہراہ اور قصبہ کیلئے بنائی گئی مین ڈرین اب تباہ حال ہے اور کچرا اور غلاظت سے بھری پڑی اس ڈرین کا پانی معمولی بارشوں کی صورت میں بھی قصبہ بانہال کے متعدد مقامات پر جموں سرینگر شاہراہ پر آ جاتا ہے اور بھاری ٹریفک کے بیچ عام راہ گیروں کا چلنا دو بھر ہوجاتا ہے۔ اگرچہ میونسپل کمیٹی بانہال کی طرف سے کئی کروڑ روپئے کی لاگت سے قصبہ بانہال میں ایک بڑی ڈرین کا منصوبہ چند مہینے پہلے شروع کیا گیا تھا لیکن اس پر ایس ڈی ایم دفتر کے پاس کام کی شروعات کی بھی گئی تھی لیکن زائد از ایک کلومیٹر کی لمبائی والی ڈرین کا کام کچھ وقت بعد نامعلوم وجوہات ںکی بنا پر بن کیا گیا اور اب تک اسے دوبارہ شروع نہیں کیاجا سکا ہے۔ گزشتہ دو روز سے معمول بارشوں کے دوران ڈاک بنگلہ ، گرلز ہائیر سیکنڈری ، ہسپتال روڈ اور نابل کو کے پاس گندی نالی کا پانی سیدھے سڑک پر چل رہا تھا اور عید عرفہ کے پیش نظر عوام کو مشکلات کا سامنا رہا۔ گاڑیوں کے چلنے سے گندے پانی کی چھینٹیں انسانوں کے ساتھ ساتھ دکانوں کو لگتی ہیں۔ اس کے علاو¿ہ بدبو سے مقامی خان محلہ ، عیدگاہ اور ناگ بل کے لوگ میونسپل کمیٹی کی عدم توجہی کے خلاف کئی بار اپنے غم وغصے کا اظہار کر چکے ہیں۔ خان محلہ کے مقامی شہریوں نے بتایا کہ شاہراہ کے برلب گندی نالی بیکن کے دور میں بنائی گئی ہے لیکن اب تک اس کی کوئی مرمت نہیں کی گئی ہے انہوں نے کہا کہ ہائیر سیکنڈری سکول بانہال گرلز کے نزدیک معمولی بارشوں کے بعد بھی سڑک پر جیسے باڑ اتی ہے اور مومی لفافے اور دیگر گندگی سڑک پر تیرتی نظر آتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شفا پانی سے ایس ڈی ایم بانہال کے دفتر تک ایک بڑی نالی کا منصوبہ شروع کرنے کے بعد رک گیا ہے اور کئی مہینے بعد بھی اس میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ہے اور کروڑوں روپئے کے ٹینڈرز کے بعد شروع کیا گیا کام ابھی نامعلوم وجوہات کی وجہ سے بند ہے۔ انہوں نے حکام سے بانہال قصبہ کی نالی کی وسعت اور صفائی کی اپیل کی ہے۔ 

تازہ ترین