بھارت میں تیار ویکسین کی قیمتیں

سرکاری ہسپتالوں کیلئے۔400اور نجی ہسپتالوں کیلئے 600روپے مقرر

تاریخ    22 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
 نئی دلی//سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا نے بھارت میں تیار ویکسین کی قیمتیں ظاہر کردی ہیں اور مرکزی سرکار کی جانب سے ریاستوں اور نجی اسپتالوں کو ویکسین فروخت کرنے کی اجازت مل گئی ہے۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ نے ٹیوٹر پر مرکزی سرکار کی سراہانہ کرتے ہوئے  لکھا ہے کہ آئندہ  2ماہ کے اندر ویکسین کی پیداوار میں اضافہ کیا جائے گااور پیداوار میں سے  50 فیصد مرکزی سرکار جبکہ 50فیصد مختلف ریاستوں اور نجی اسپتالوں کو فراہم کئے جائیں گے۔ آکسفورڈ ویکسین اور اسٹرا زینکا کو بھارت میں کوویشیڈ کے نام سے تیار کیا جارہا ہے۔آئی آئی آئی نے ریاستوں کیلئے ویکسین کی قیمت  400جبکہ نجی اسپتالوں کیلئے 600روپے رکھی ہے۔ایس آئی آئی کا کہنا ہے کہ امریکن ویکسین کی قیمت 1500روپے، روسی ویکسین کی قیمت 750روپے اور چینی ویکسین کی قیمت بھی 750روپے ہے۔ ایس آئی آئی نے نجی کمپنیوں کو سرکار اور نجی ہیلتھ سیکٹر کے ساتھ مل کر کام کرنے کی اپیل کی ہے۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ کا کہنا ہے کہ ویکسین آئندہ 4سے 5 ماہ بعد مارکیٹ میں دستیاب ہوگی۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایس آئی آئی مرکزی سرکار کو ویکسین 150روپے کے حساب سے فراہم کرتا ہے۔مرکزی سرکار نے یکم مئی سے 18سال سے اوپر کی عمر کے تمام لوگوں کو ویکسین لگانے کی اجازت دی ہے جبکہ مرکزی سرکار نے ریاستی حکومتوں اور نجی اسپتالوں کو ویکسین خریدنے کی ہدایت دی ہے۔ اس دوران مرکزی سرکار نے سریم انسٹی ٹیوٹ اور ویکسین بنانے والی کمپنی بھارت بھائوٹیک کو 4500کروڑ روپے امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ  سربراہ آدھار پونیوالا نے کہا کہ مئی کے آخرمیں ویکسین کی پیداوار میں 15سے 20فیصد اضافہ ہوگا اور کووشیلڈ مارکیٹ میں بھی دستیاب ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ انکی کمپنی جولائی کے بعد ہر ماہ 100ملین ویکسین تیار کرے ۔
 

تازہ ترین