تازہ ترین

بھنگائی میں خستہ حال پاپئیں عوام کیلئے پریشانی کا باعث | کئی جگہوں پر پانی کی سپلائی متاثر ،پائپوں کی مرمت کا مطالبہ

تاریخ    8 اپریل 2021 (10 : 12 AM)   


عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی // تھنہ منڈی کے پسماندہ اور دور افتادہ گاؤں بھنگائی کی عوام نے محکمہ آب رسانی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ علاقہ میں 1982میں نصب کی گئی پاپئیں اب ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکی ہیں جس کی وجہ سے پانی کی سپلائی شدید متاثر ہو رہی ہے لیکن متعلقہ ملازمین پانی کی معقول سپلائی کیلئے سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کررہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ حالیہ کئی عرصہ سے مذکورہ سپلائی لائنوں کی مرمت ہی نہیں کی گئی ۔تھنہ منڈی کی پسماندہ اور پہاڑی پر واقع بھنگائی پنچایت کئی ہزار افراد کی آبادی پر مشتمل ہے جہاں پر محکمہ پی ایچ ای نے سال 1982 میں پائپ لائنیں بچھائی تھیں تاہم اب یہ پاپئیں زنگ آلودہ ہو گئی ہیں ۔مکینوںنے بتایا کہ متعلقہ محکمہ کی لاپرواہی کی وجہ سے سپلائی کا پانی پائپوں میں سے کئی جگہوں سے خارج ہوتاہے اور جو پانی گھروں تک پہنچتا ہے وہ بھی پینے کے قابل نہیں رہتا واٹر سپلائی لائینوں میں زنگ آلود پانی کی سپلائی جاری ہے لیکن کوئی پرسان حال نہیں۔ علاقہ کے سرپنچ عبدالعزیز چوہدری نے روزنامہ کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس سلسلہ میں متعدد بار آواز اٹھائی گئی لیکن کہیں سے ہمیں مثبت جواب نہیں ملا۔ انھوں نے کہا کہ کئی مرتبہ متعلقہ محکمہ سے التجا کی گئی کہ بھنگائی میں پانی کے بوسیدہ نظام کو درست کیا جائے لیکن ابھی تک کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔عوام نے الزام عائد کیا کہ انتظامیہ ہماری کوئی بات سننے کو تیار نہیں۔ پنچائتی نمائندگان نے محکمہ صحت عامہ راجوری پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ محکمہ نہایت ہی سست روی سے کام لے رہا ہے جسے عوام کی کوئی پرواہ نہیں ہے۔لوگوں نے اخبار کی وساطت سے ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری راجیش کمار شاون سے مطالبہ کیا ہے کہ بھنگائی گاؤں کی پرانی اور بوسیدہ پائپ لائنوں کو تبدیل کر کے نئی پائپ لائنیں بچھا کر عوام کو راحت پہنچائی جائے۔
 

تازہ ترین