تازہ ترین

ریلوے تعمیراتی کمپنی میں بھرتی نہ کرنے کا الزام | بانہال کے شہری نے زہر پی کر خودکشی کی کوشش کی

تاریخ    8 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


محمد تسکین
 بانہال// بانہال کے بنکوٹ گاوں میں ریلوے ٹنل کی تعمیراتی کمپنی میں نوکری نہ دیئے جانے کے خلاف احتجاج کے طور ایک شخص نے کوئی زہریلی شے کھا کر اقدام خودکشی کی کوشش کی ہے اور اسے ایمرجنسی ہسپتال بانہال سے گورنمنٹ میڈیکل کالج اننت ناگ منتقل کیا گیا ہے۔ پولیس نے انتہائی اقدام اٹھانے والے شخص کی شناخت محمد اسحاق نجار عمر 46 ولد مرحوم عبدالغفار نجار ساکنہ بنکوٹ بانہال کے طور کی ہے اور اس کے خلاف اقدام خودکشی کا کیس درج کیا گیا ہے۔ محمد اسحاق نجار کے رشتہ داروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ وہ ریلوے تعمیراتی کمپنی کی طرف سے بنکوٹ میں زیر تعمیر ریلوے ٹنل میں نوکری حاصل کرنے کیلئے پچھلے کئی مہینے سے کوشاں تھا اور اسے کمپنی میں نوکری دینے کے بجائے ایک ٹھیکیدار کے ساتھ کام پر لگایا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ بار بار کی یقین دہانیوں اور کمپنی کے کچھ ذمہ داروں کی طرف سے بار بار ہراساں کرنے کے مدعے کو لیکر محمد اسحاق نجار نے بدھ کی صبح قریب گیارہ بجے کوئی زہریلی شے نگل لی اور اسے فوری طور پر ایمرجنسی ہسپتال بانہال منتقل کیا گیا جہاں سے ڈاکٹروں نے اس کی شدید حالت کے پیش نظر مزید علاج معالجہ کیلئے گورنمنٹ میڈیکل کالج اننت ناگ منتقل کیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ اس بلاجواز حرکت پر مذکورہ شخص کے خلاف پولیس سٹیشن بانہال میں اقدام خودکشی کے جرم کے تحت ایک کیس درج کیا گیا ہے۔ اس دوران ریلوے ٹنل کمپنی ABCI کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ مذکورہ شخص کو ایک ٹھیکیدار کے ساتھ پچھلے کئی مہینے سے کام پر رکھا گیا ہے اور وہ پچھلے کئی روز سے خودکشی کی دھمکیاں دے دے کر کمپنی ملازمین کو پریشان کررہا تھا۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس سلسلے میں کئی روز پہلے ہی پولیس سٹیشن بانہال کو محمد اسحاق نجار کی طرف سے خودکشی کرنے کی دھمکی کے بارے میں ایک تحریری شکایت درج کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقدامات خودکشی کے بعد مذکورہ ورکر کو بانہال سے اننت ناگ ہسپتال لیجانے کیلئے اے بی سی آئی کمپنی کی طرف سے ایمبولینس اور کمپنی ورکر ساتھ بھیجے گئے ہیں اور گورنمنٹ میڈیکل کالج اننت ناگ میں بدھ کی شام اس کی حالت بہتر تھی۔ 
 

تازہ ترین