تازہ ترین

شبانہ ٹھنڈ اوریخ بستہ ہوائیں جان لیوا ثابت| 2کمسن بچے ٹھٹھرتی سردی سے لقمہ ٔ اجل

دیوسر میں خانہ بدوش بکروال کنبے پر افتاد،منفی درجہ حرارت میں تھوڑی بہتری،سرینگر میں پارہ 6.4

تاریخ    19 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


خالد جاوید+اشفاق سعید
کولگام+سرینگر//دیوسر کولگام میں خانہ بدوش بکروال کنبے کے 2کمسن بچے شدید سردی کے باعث لقمہ اجل بن گئے ۔ یہ واقعہ برنل لامڑ دیوسر  علاقے میں پیش آیا ، جہاں مذکورہ خانہ بدوش بکروال کنبہ پالتھین سے بنے ایک عارضی خیمے میں رہائش پذیر تھا ۔ مذکورہ کنبہ کا تعلق ریاسی سے ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ امسال  غیر متوقع برفباری کی وجہ سے زبیر احمد مندر کا کنبہ ریاسی نہیں جاسکا اور وہ ایک عارضی خیمے میں رہائش اختیار کرنے پر مجبور ہوئے۔سنیچر اور اتوار کی درمیانی رات 10 سالہ ساحل زبیر شدید سردی کے باعث لقمہ اجل بن گیا ،جب کہ مہلوک کی بہن 6سالہ شازیہ جان کو نمونیہ ہوگیا اور اُس کو نازک حالت میں ایمرجنسی اسپتال قاضی گنڈمیں داخل کیا گیا جہاں سے اُسے مزید علاج معالجہ کیلئے جی ایم سی اننت ناگ منتقل کیا گیاجہاں پیر کی صبح بچی دم توڑ بیٹھی ۔2بچوں کی موت سے اہل خانہ پر قیامت ٹوٹ پڑی ہے ۔مقامی لوگوں نے انتظامیہ پر لاپرواہی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ پہلے بچے کی موت کے بعد بھی انتظامیہ نے کنبے کو محفوظ مقام پر منتقل نہیں کیا جس کی وجہ سے 2پھول مرجھا گئے ۔اُنہوں نے کہا کہ علاقہ میں آج بھی کافی برف جمع ہے جبکہ سڑک پر برف جمع ہونے کی وجہ سے نقل وحرکت میں بھی دشواری آرہی ہے ۔تحصیلدار دیوسر عبدالرشید نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ متاثرہ کنبے کو قبل ازوقت ہی نزدیکی اسکول میں پناہ لینے کا مشورہ دیا گیا تھا جس کو کنبے نے نظر انداز کیا ۔اُنہوں نے کہا کہ کنبے کو ہر ممکن امداد فراہم کی جائے گی۔

موسم

وادی کشمیر میںٹھٹھرتی سردی میں تھوڑی بہت کمی واقع ہوئی ہے اور شمال و جنوب میں منفی درجہ حرارت میں بہتری دیکھی گئی۔اتوار اور سوموار کی درمیانی رات شہر میں 5روز بعددرجہ حرارت میں بہتری آئی لیکن پھر بھی درجہ حرارت منفی 6.4ڈگری سیلسیش ریکارڈ کیا گیا ، تاہم وادی کے دیگر علاقوں میں ٹھنڈ بدستورپائی جا رہی ہے۔دن بھر دھوپ کھلنے سے برف آہستہ آہستہ دوپہر  بعد پگھلنا شروع ہوجاتا ہے لیکن منفی درجہ حرارت نے برف کو پتھر سے بھی سخت بنا دیا ہے۔ ٹھنڈی ہوائوں کے چلنے کا سلسلہ جا ری ہے جس سے لوگوں کو دن کے 12بجے تک کافی مشکلات پیش آتی ہیں ۔ ان دنوں وادی میں جھیل ڈل سمیت دیگر آبی ذخائر بھی منجمد ہیں جبکہ منجمد ڈل کو دیکھنے کیلئے مقامی اور غیر مقامی سیاحوں کی ایک بڑی تعداد پہنچ رہی ہے ۔وادی میں سردی کی شدت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ سیاحتی مقام گلمرگ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 6  جبکہ پہلگام میں منفی6.8 ڈگری گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔سرحدی ضلع کپواڑہ میںمنفی 5.2 اور قاضی گنڈ میں منفی8.3 ڈگری درج ہوا۔ کوکرناگ میں منفی 6.9، اننت ناگ میں منفی8.3، بانڈی پورہ میں منفی 4.3، سوپور میں منفی 4.1، بڈگام میں منفی 6.9 اور کولگام میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 6.8 ڈگری ریکارڈ ہوا ۔ ادھر جموں میں کم سے کم درجہ حرارت 8.4 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا ہے۔لداخ خطہ بھی شدید سردی کی لپیٹ میں ہے اور وہاں پر بھی لوگ سردی سے بے حد پریشان ہیں۔ کرگل ضلع میں رات کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 18.8ڈگری ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ دراس میں منفی 21.1ڈگری درج کیا گیا ۔اس دوران محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس نے برف باری کے ایک اور مرحلہ کی پیشگوئی کرتے ہوئے کہا کہ 21جنوری تک جموں وکشمیر اور لداخ میں موسم خشک رہے گا اور 12کی شام سے موسم میں تبدیلی آنی شروع ہو گی۔انہوں نے اپنی ایڈوائزری میں کہا ہے کہ 21سے24جنوری تک ہلکے سے درمیانہ درجہ کی برف باری کشمیر میں اور جموں کے بالائی علاقوں میں ہو گئی جبکہ جموں کے میدانی علاقوں میں بارشیں ہو ں گی ۔انہوں نے کہا کہ23اور24کو ہو نے والی برف باری کے سبب ہوائی سروس میں بھی خلل پڑ سکتا ہے ۔
 

حول سرینگر میں چھت سے برف گری

 عمر رسیدہ خاتون زد میں آکر فوت

ارشاد احمد
 
سرینگر//سرینگر کے علاقہ کنہ دیورحول میں اس وقت کہرام مچ گیا جب مکان کی چھت سے اچانک برف گر ی جس کے نیچے ایک عمر رسیدہ خاتون دب کر شدید زخمی ہوگئی اور بعد میں دم توڑ بیٹھی۔ کنہ دیور حول میں یہ واقعہ بعد دوپہر پیش آیا۔ 60 سالہ خاتون جواہرہ بیگم زوجہ محمد یاسین رنگریز شاہ  اس وقت بھاری بھر کم برف کے نیچے آکر دب گئی جب رہائشی مکان کی چھت سے برف گری اور معمر خاتون اسکی زد میں آگئی۔ اس موقع پر اہل خانہ کی جانب سے زخمی خاتون کو برف کے نیچے سے باہر نکالا گیا اور فوری طور پر میڈیکل انسٹیچوٹ صورہ منتقل کر دیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔مہلوک خاتون کی نعش جب آبائی گھر لائی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا۔