تازہ ترین

رعناواری میں فورسز پر گرینیڈ حملہ

کپوارہ میں فوجی کیمپ میں پورٹر آگ سے جھلس کر لقمہ اجل

تاریخ    14 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی+اشرف چراغ
 سرینگر+کپوارہ//سرینگر کے رعناواری علاقے میں بدھ کو مشتبہ جنگجوئوں نے فورسز پر گرینیڈ پھینکا۔ گرینیڈ حملے کے بعد سیکورٹی فورسز نے متعدد راہگیروں کی مار پیٹ کی۔ رعناواری سرینگر علاقے میں بعد دوپہر اس وقت افرا تفری کا ماحول پھیل گیا جب نامعلو م مسلح افراد نے سی آر پی ایف پارٹی کو نشانہ بنا کر گرینیڈ داغا ۔ مشتبہ جنگجوئوں نے چھٹی پادشاہی گرودوارے کے نزدیک 21بٹالین سی آر پی ایف سے وابستہ روڑ ڈیوٹی پر مامور پارٹی کو نشانہ بنا کر گرینیڈ پھینکاجو نشانہ چوک کر سڑک کے بیچوں و بیچ زور دار رھماکے کے ساتھ پھٹ گیا ۔تاہم گرینیڈ حملے میںکوئی زخمی یا ہلاک نہیںہوا ۔ پولیس نے بتایا کہ گرینیڈ حملے کے بعد پورے علاقے میں تلاشی آپریشن عمل میں لایا گیا تاہم کسی کی گرفتاری عمل میں نہیںلائی گئی اور نہ ہی کوئی قابل اعتراض مواد بر آمد ہوا ۔ مقامی لوگوں نے الزام لگایا کہ واقعہ کے بعد فورسز نے کئی راہگیروں کی مارپیٹ کی۔ادھر کپوارہ ضلع کے اندر ہامہ درگمولہ فوجی کیمپ میں آگ کی ایک واردات میں ایک فوجی کلی جھلس کر لقمہ اجل بن گیا جو بہرہ اور گونگا بھی تھا ۔ آسام سے تعلق رکھنے والا 32سالہ بھون پاترا ،جو بہرہ اور گونگا بھی تھا، اپنے کمرے میں بیٹھا تھا کہ اس دوران ان کے کمرے سے آگ نمودار ہوئی جسمیں بھون پاترا شدید طور جھلس گیا ۔فوج نے اگر چہ بچائو کارروائی کے دوران بھون کو زندہ نکالا اور درگمولہ فوجی کیمپ میں علاج و معالجہ کیلئے بھرتی کیا تاہم وہ زخمو ں کی تاب نالاکر دم تو ڑ بیٹھا ۔پولیس نے دفعہ 174کے تحت کیس درج کر کے تحقیقات شروع کی ۔پولیس کا کہنا ہے کہ لاش کا پو سٹ مارٹم کیا جائے گا جس کے بعد ورثا کو سونپی جائے گی۔