تازہ ترین

زلزلے کے جھٹکے،خطہ چناب میں سینکڑوں مکانات کو جزوی نقصان

تاریخ    13 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


اشتیاق ملک | محمد تسکین
ڈوڈہ+بانہال //پیر کی شام خطہ چناب میں ہوئے شدت کے زلزلے کے جھٹکے سے جہاں عوام میں خوف وہراس کا ماحول پیدا ہوا ہے وہیں سینکڑوں تعمیرات کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔بھدرواہ، ٹھاٹھری ،کاہرہ ،بھلیسہ ،گندنہ ،بونجواہ سے مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ شدت کے جھٹکے سے کئی رہائشی و غیر رہائشی تعمیرات کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ڈی ڈی سی ممبر کاہرہ معراج الدین ملک نے کہاکہ گذشتہ روز ہوئے 5.1 ریکٹر اسکیل زلزلہ سے کئی تعمیرات کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ انہوں نے انتظامیہ سے متاثرین کو معقول معاوضہ فراہم کرنے و وادی چناب میں زلزلوں کے پیش نظر ٹھوس اقدامات کئے جائیں۔ ادھر ڈپٹی کمشنر ڈوڈہ ڈاکٹر ساگر ڈی ڈوئی فوڈے نے سب ڈویژنل و تحصیل سطح کے آفیسران کو زلزلہ سے ہوئے نقصان کی مکمل رپورٹ طلب کی ہے اور ساتھ ہی لوگوں سے پر سکون رہنے کی اپیل کی ہے۔اس حوالے سے انہوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کوئی بڑا نقصان نہیں ہوا ہے تاہم کئی تعمیرات میں شگاف پڑے ہیں۔ادھر ضلع رام بن کے کئی علاقوں میں درجنوں رہائشی مکانوں میں دراڑیں پڑنے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ بانہال ، کھڑی مہومنگت ، رامسو نیل ، پوگل پرستان سمیت کئی علاقوں میں رہائشی مکانوں کو زلزلوں سے نقصان پہنچا ہے۔ڈپٹی کمشنر رام بن ناظم زئی خان نے منگل کی شام کشمیر عظمی کو بتایا کہ کچھ رہائشی مکانوں میں چھوٹی چھوٹی دراڑیں پڑنے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں تاہم کسی بڑے نقصان کی کوئی خبر نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ضلع رام بن کے تمام تحصیلداروں کو اپنے اپنے علاقوں میں زلزلے کی وجہ سے رہائشی مکانوں کو پہنچنے نقصانات کا جائزہ لینے اور نقصانات کی صورت میں رپورٹ تیار کرنے کیلئے کہا گیاہے۔اس دوران سیاسی لیڈروں ، ڈی ڈی سی اور بی ڈی سی عہداروں کے علاؤہ مختلف سرپنچوں نے ضلع حکام سے نقصانات کا جائزہ لیکر معاوضے کیلئے رپورٹ تیار کرنے کی اپیل کی ہے۔