تازہ ترین

’’جموں کشمیرکودودوہاتھوں لوٹاجارہا ہے‘‘

محبوبہ مفتی کو نالہ رنبہ آرہ کادورہ کرنے سے روکاگیا

تاریخ    22 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


سید اعجاز
پلوامہ //پیپلزڈیموکریٹک پارٹی کی صدر اور سابق وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی نے الزام لگایا ہے کہ مرکزطاقت کے بل پر جموں کشمیر کے لوگوں سے انتقام لے رہا ہے اور جموں کشمیرکاآئین اور پرچم چھیننے کے بعد دوسری چیزیں بھی اسی طرح چھینی جارہی ہیں ۔ا س دوران پولیس نے پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کو نالہ رنبہ آرہ کا دورہ کرنے سے روک دیا،جس پر محبوبہ مفتی نے شدیدغصے کااظہار کیا۔محبوبہ مفتی نے کہا ،’’جس طرح کہیںڈاکوآکر لوٹ مچاتے ہیں اُسی طرح جموں کشمیر کوبھی دودوہاتھوں لوٹاجارہاہے ‘‘۔انہوں نے کہا کہ5اگست2019کے بعد یہاں کے لوگوں کو باہر جانے نہیں دیا جارہا ہے ،سب کو قیدکیاگیا ہے۔محبوبہ نے کہا کہ یہاں کے مقامی لوگوں کو ندی نالوں سے ریت باجری نکالنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جبکہ غیرمقامی لوگوں کو اس کے ٹھیکے الاٹ کئے گئے ہیں جس کے نتیجے میں یہاں کامزدور طبقہ بے روزگار ہوکر فاقہ کشی کاشکار ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مجھے یہاں کیوں جانے نہیں دیا گیا،کیا میں کوئی ملی ٹنٹ ہوں؟محبوبہ مفتی نے کہا کہ جہاں ایک فٹ باجری یاریت نکالنی مطلوب ہوتی ہے وہاں 20سے25فٹ ریت اور باجری نکالی جاتی ہے اوراس طرح یہاں کے وسائل کو لوٹا جارہا ہے اورندی نالوں کو برباد کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں دیکھنا چاہتی تھی کہ آخرہمارے نالوں کے ساتھ کیا ہورہا ہے اورکل جب پانی کی سطح بڑھ جائے گی تو اس کی پریشانی بھی مقامی لوگوں کو ہی اٹھانی پڑے گی،لیکن مجھے وہاں جانے نہیں دیاگیا۔پیپلزڈیموکریٹک پارٹی کی صدر نے کہا کہ جموں کا بھی یہی حال ہے اورلوگ وہاں بھی اس طرح لوگوں کاروزگار چھیننے پررورہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جموں کشمیرکو کنگال بنایا گیا ہے اورغیرریاستی لوگ یہی باجری اورریت ہمیں 500کے بجائے5000روپے میں فروخت کرتے ہیں ۔محبوبہ نے سوال کیا ،’’کیا یہی نیاکشمیرہے؟‘‘سابق وزیراعلیٰ نے کہا کہ اگر یہاں کے مزدور طبقے کے ساتھ انصاف نہیں ہوا،توکل یہی لوگ تشددپراُتر آئیں گے ،تواس کاذمہ دار کون ہوگا؟محبوبہ مفتی پلوامہ کے پتی پورہ لاسی پورہ ایک پارٹی ورکرکے گھر تعزیت پرسی کیلئے گئی تھی جس دوران انہوں نے مقامی مزدوروں کے اصرار پررنبہ آرہ کودیکھنے کاارادہ کیاجس کو حکام نے ناکام بنادیا۔
 
 

مرکزغیربھاجپاجماعتوں کی شرکت کو سبوتاژ کرنے کے درپے

بلال فرقانی
 
سرینگر//پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے جموں کشمیر کو کھلی جیل میں تبدیل کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی سرکار ضلع ترقیاتی کونسل انتخابات میں غیر بھاجپا جماعتوں کی شرکت کوسبوتاژکررہی ہے ۔ محبوبہ مفتی نے سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر تحریر کیا’’ جموں کشمیر کو کھلی جیل میں تبدیل کیا گیا ہے۔تاہم ہماری شناخت،وقار اور حقوق پر یلغار کے خلاف ہم سختی کے ساتھ جدوجہد کریں گے۔ محبوبہ نے ایک اور ٹویٹ میں لکھاہے کہ غیربھاجپا جماعتوں سے وابستہ اُمیدواروں کوانتخابی مہم چلانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔پی ڈی پی کی صدرمحبوبہ مفتی نے اپنے ٹویٹ میں لکھاہے ’’حکومت ہندضلعی ترقیاتی انتخابات میں غیر بھاجپاجماعتوں کی شرکت کوسبوتاژکررہی ہے ‘‘۔انہوں نے مزیدلکھاہے کہ پی ڈی پی کے ایک اُمیدوار بشیر احمد کے پاس پہلگام میں مناسب سیکورٹی ہے لیکن اُس کوبندرکھاگیاہے ۔انہوں نے بتایاکہ آج اس حلقے کیلئے کاغذات نامزدگی داخل کرانے کی آخری تاریخ ہے ،اورمیں نے اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنراننت ناگ کیساتھ بات کی۔