تازہ ترین

اسٹامپ فروشوں کا ڈوڈہ میں احتجاج

محکمہ انکم ٹیکس کے حکم نامے کو منسوخ کرنیکا مطالبہ

تاریخ    18 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


نصیر احمد کھوڑا
ڈوڈہ //اسٹامپ فروشوں نے سنیچر کو ایک بار پھر ضلع کے صدر مقام ڈوڈہ میں احتجاج بلند کیا۔ان احتجاجی مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ محکمہ انکم ٹیکس اس حکم نامے کو فوراً ًمنسوخ کرے جس میں ان سے کہا گیا ہے کہ وہ کمپیوٹر میں تربیت حاصل کریںاور اپنا تمام ریکارڈ اور کام کاج ڈیجیٹلائزڈ کریں تب جا کر وہ عدالتوں اور دیگر جگہوں پر کام کرنے کے اہل ہونگے۔ان کا مزید کہنا ہے کہ ان کو اس حکم نامے کی رو سے ایک مخصوص اور نا مزد کمپنی کے ٹھیکیدار سے یہ تمام کمپیوٹر مشنری اور الیکٹرانک آلات خریدنے کا پابند بنا دیا گیا ہے۔ان کا الزام ہے کہ یہ صرف ایک مخصوص ٹھیکیدار کو فائدہ دینے کی غرض سے اس طرح کا حکم نامہ منظر عام پر لایا گیا ہے، عدلیہ میں کام کرنے والے افراد کو اس طرح سے ایک قسم کی ہدایت اور پابندی لگا دی گئی ہے کہ وہ کس دوسرے کمپنی یا افراد سے وہ یہ چیزیں نہ خریدیں جو کہ ان یومیہ اپنا کاروبار و روزگار کمانے والے افراد کے ساتھ نہ صرف سرا سر نا انصافی ہے بلکہ ان کے کے ساتھ ایک بہت بڑا ظلم ہے۔ان اسٹامپ فروشوں کا مطالبہ ہے کہ اس حکم نامے کو فوراً منسوخ کیاجائے تاکہ ان کا روزگار متاثر نہ ہو۔ان کا ماننا ہے کہ ایک فرد کو فائدہ دینے کی غرض سے کثیر آبادی کے ساتھ ظلم کرنے کا کیا جواز ہے۔انہوں نے اس تعلق سے لیفٹنٹ گورنر انتظامیہ سے بھی مداخلت کرنے کی اپیل کی ہے اور امید ظاہر کی ہے کہ ان کے اس مطالبے پر ہمدردانہ غور ہوگا اور وہ موقعہ کی نزاکت کو دیکھ کر فوری طور اس تعلق سے منسوخی کا حکم صادر کرینگے،ورنہ کووڈ لاک ڈاؤن کے دوران ان کا پہلے ہی روزگار بری طرح متاثر ہوا ہے اور اگر اس پر ہمدردانہ غور نہ کیا گیا تو یہ لوگ نان وشبینہ کے محتاج ہوکر رہ جائیں گے۔