تازہ ترین

این ای ای ٹی نتائج| باسط بلال فاروق خان سے ملاقی

کامیاب اُمیدواروں کو ڈاکٹر فاروق، عمر عبداللہ اور الطاف بخاری کی مبارکباد

تاریخ    18 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


  بچوں نے صلاحیتوں کالوہا منوایا:کوچنگ مراکزانجمن 

سرینگر//ملکی سطح کے باوقار امتحانات این ای ای ٹی  میں کامیابی حاصل کرنے والے پلوامہ کے امیدوار کولیفٹینٹ گورنر کے مشیرفاروق احمد خان، نیشنل کانفرنس کے صدرڈاکٹر فاروق عبداللہ اور نائب صدر عمرعبداللہ ، اپنی پارٹی صدر محمد الطاف بخاری ودیگر رہنمائو ں سمیت کوچنگ مراکزکی انجمن نے مبارکباد دی ہے۔لیفٹینٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے نیٹ امتحان میں 99.98فیصد نمبرات حاصل کرکے کامیاب ہوئے پلوامہ کے طالب علم باسط بلال کو مبارکباد پیش کی ہے ۔پلوامہ ضلع کے نرواگائوں سے تعلق رکھنے والے باسط نے جموں کشمیرمیں نیٹ امتحان میں پہلی پوزیشن حاصل کی جبکہ کل ہندسطح پروہ188ویں پائیدان پررہے اوروہ اب ایم بی بی ایس میں داخلہ لینے کیلئے تیار ہے ۔باسط نے سنیچر کو لیفٹینٹ گورنر کے مشیر فاروق احمد خان سے  اُن کی رہائش گاہ پرملاقات کی۔مشیر نے باسط سے اُس کی تعلیم اور دیگر مشاغل کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔انہوں نے باسط کو مبارکبار دی  ۔اس موقعہ پر مشیر نے کہا کہ جموں کشمیرکے نوجوانوں میں قابلیت کی کوئی کمی نہیں ہے لیکن لازمی ہے کہ اس کیلئے انہیں مناسب ماحول فراہم کیاجائے جہاں ان کی صلاحیتیں نکھر جائیں ۔اس موقعہ پر مشیر نے باسط کو طب سے متعلق کتب کاسیٹ بھی پیش کیا۔باسط نے اس عزت افزائی کیلئے مشیر کا شکریہ ادا کیا۔ڈاکٹر فاروق عبداللہ اور عمرعبداللہ نے اُمید ظاہر کی کہ کامیاب اُمیدوار زمینی سطح پرلوگوں کیلئے کام کریں گے۔کامیاب امیدواروں کو مبارکباد دیتے ہوئے پارٹی لیڈران نے کہا کہ یہ بات انتہائی خوش آئند ہے کہ اِن اُمیدواروں میں سے بیشتر نے وسائل کی کمی اور مشکلات کے باوجود اپنی قابلیت اور صلاحیت کا لوہا منوایا ۔ ہم جموں و کشمیر کے ان تمام امیدواروں کو مبارکباد پیش کرتے ہیں جنہوں نے اس باوقار امتحان میں کامیابی حاصل کی ہے۔ محنت، عزم اور استقامت ہمیشہ اپنا ثمر دیتی ہے۔ انہوں نے تمام کامیاب امیدواروں خصوصاً جموں وکشمیر میں کلیدی پوزیشن حاصل کرنے والے باسط خان اور اُن کے اہل خانہ کیلئے بھی نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ اِن اُمیدواروں کی یہ شاندار کامیابی اُن نوجوانوں کیلئے مشعل راہ ہے جو ایسے امتحانات میں حصہ لیکر کامیابی حاصل کرنے کے خواہاں ہیں۔ پارٹی جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی اور ترجمان عمران نبی ڈار نے بھی کامیاب اُمیدوروں کو مبارکباد پیش کی ہے اور کہا ہے کہ ہمیں اُمید ہے کہ کامیاب امیدوار انتہائی پیشہ ورانہ مہارت ، تن دہی ، لگن اور خلوص کیساتھ مستقبل میں اپنے فرائض انجام دیں گے اور ہر حال میں لوگوں کی راحت کیلئے کام کریں گے۔ اس دوران کشمیرکے کوچنگ مراکزکی انجمن نے بھی NEETامتحان میں کامیاب ہوئے امیدواروں کو مبار کباد پیش کی ہے۔انجمن نے کہا کہ یہ ہمارے لئے باعث فخر ہے کہ ہمارے طالب علموں نے NEETامتحان میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ادھراپنی پارٹی صدر سعید محمد الطاف بخاری نے امسال جموں وکشمیر سے ملکی سطح کے تقابلی امتحان نیٹ میں کامیابی حاصل کرنے والے اُمیدواروں کو مبارک باد پیش کی ہے۔ ایک بیان میں بخاری نے کہاکہ جموں وکشمیر کے نوجوانوں میں بے پناہ صلاحیت ہے جس کا انہوں نے جموں و کشمیر کے ساتھ ساتھ قومی سطح پر ہرسال مسابقتی امتحان میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرکے ثبوت بھی پیش کی ہے۔بخاری نے کہاکہ میں اپنی پارٹی کی پوری ٹیم کی جانب سے جموں و کشمیر کے اُن طلباء کو مبارکباد پیش کرتا ہوں جنہوں نے قومی سطح پر کامیابی حاصل کر کے اپنے کنبہ ، اُساتذہ اور پریشان حال سماج کوخوش کیا۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر سے نیٹ میں کامیابی حاصل کرنے والے آنے والے سال نیٹ خواہشمندوں کے لئے یقینی طور باعثِ تحریک بنیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ غیر یقینی صورتحال اور مالی طور کمزور ہونے کے باوجود جموں وکشمیر کے نوجوانوں نے یہ کامیابی حاصل کی اور بتایاکہ اگر ماحول سازگار ہوتو پھر وہ کتنا بڑا کمال بھی کرسکتے ہیں۔ انہوں نے نیٹ میں کامیابی حاصل کرنے والے خاص کر جن کا تعلق جموں وکشمیر سے ہے، کے تئیں نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی ہے کہ وہ مستقبل میں تعلیمی اور پیشہ وارانہ شعبہ جات میں مزید کامیابی کی منازل طے کریں۔بیان میں انجمن کے نائب چیئرمین انجینئرمحمدشاہدڈار نے کہا کہ گزشتہ ایک برس کے حالات ہم سب کیلئے انتہائی کٹھن تھے اورہمارے بچے اس سے بہت متاثر ہوئے ۔گھروں میں فونوں کے بغیربند،باہر کی دنیا تک عدم رسائی اوردیگر مشکلات کے باوجود ہمارے بچوں نے اپنی صلاحیتوں کا لویا منوایااورمشکل حالات کے باوجود انہوں نے شکست قبول نہیں کی اور کامیابی کوحاصل کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے یہ عیاں ہوتا ہے کہ ہمارے بچے کسی سے کم نہیں ہے ۔اس دوران میڈک میٹرکس میڈیکل فاونڈیشن کے چیئرمین عمر مشتاق ڈار نے  پلوامہ کے باسط احمد کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔اُنہوں نے کہا کہ سست رفتار انٹرنیٹ اور نامساعد حالات کے باوجود جموں و کشمیر کے جن طلبا ء نے اس مسابقتی امتحان میں کامیابی حاصل کی وہ واقعی قابلِ داد اور قابلِ سراہنا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ جو طلاب محنت کے باوجود اس امتحان میں کامیاب ہونے سے قاصر رہے،اُنہیں ہمت نہیں ہارنی چاہیے کیونکہ ناکامی بھی کامیابی کا ایک زینہ ہے۔اُنہوں نے پرزور مطالبہ کیا کہ جموں و کشمیر میں اب تیز رفتار فور جی انٹرنیٹ کو بحال کیا جائے تاکہ عوام الناس کی مشکلات کا ازالہ ہوسکے۔
 
ٹنگمرگ کے جڑواں بھائیوں کی کامیابی 
نوجوانوں نے رقص کرکے خوشی کااظہارکیا
 ٹنگمرگ//مشتاق الحسن//تکیہ بٹہ پورہ کنزرٹنگمرگ کے جڑواں بھائیوں جنہوں نے NEETامتحان میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا،کے گھر مبارکباد دینے والوں کاسنیچر وار کوتانتا بندھا رہا جبکہ نوجوانوں کی خاصی تعداد نے رقص کرکے اپنی خوشی کااظہار کیا۔سب ڈویژن گلمرگ کے تکیہ بٹہ پورہ کنزر کے فیئرپرائس شاپ چلانے والے بشیراحمدبٹ کے جڑواں بیٹوں شاکر بشیراورگوہر  بشیر  نے بالترتیب 651 اور 657 نمبرات حاصل کرکے نیٹ امتحان میں شاندار کامیابی حاصل کرکے جہاں اپنے والدین کاسرفخر سے اونچا کیا وہیں ٹنگمرگ میں بھی ہرسو لوگ اس کامیابی پر خوش نظر آرہے ہیں ۔ شاکر بشیر اور گوہر بشیر 8 اکتبوبر سال 2001 کو پیدا ہوئے ہیں۔ جڑاوں بچوں کی پیدائش پر جہاں  بشیر احمد بٹ کو سال 2001 میں اللہ تعالی نے خوشی عطا کی تھی، وہی خدا کی مہربانی سے 19 سال کے بعد جڑاوں بھائیوں نے سخت محنت اور انٹرنیٹ کی محرومی کے باوجود نیٹ کا امتحان اچھے نمبرات سے پاس کیا ۔شاکر بشیر اور گوہر بشیر کے والد بشیر احمد نے ذرایع ابلاغ کے نمائندوں کو بتایا کہ انٹرنیٹ بند ہونے کے باوجود دونوں بھائیوں نے کمرکس کر محنت کی جو کہ ثمر آور ثابت ہوئی۔بشیر احمدکہا جہاں دونوں بھائی دنیاوی تعلیم میں مشغول تھے وہیں دونوں بھائی اسلامی تعلیم میں زبردست دلچسپی رکھتے ہوئے پانچوں وقت نماز کے پابندہیں۔ شاکر بشیر اور گوہر بشیر نے بتایا کہ انھوں نے ابتدائی تعلیم مقامی سکول سے حاصل کی اور نیٹ کی کوچنگ سرینگر کے ایک نجی کوچنگ سینٹر میں حاصل کی جس کے لیے دونوں نے اپنے اساتذہ کا شکریہ ادا کیا۔