تازہ ترین

کشمیر میں دودھ کی یومیہ پیداوار40لاکھ لیٹر

ڈیری اَنٹرپرینیور شپ کی جموںوکشمیر میں کافی صلاحیت موجو : شرما

تاریخ    16 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


 سرینگر// جموںوکشمیر اَنٹرپورینیور شپ ڈیولپمنٹ اِنسٹی چیوٹ( جے کے اِی ڈی آئی) نے فیڈ ریشن آف انڈیا چیمبرس آف کامرس انڈسٹریزکے اشتراک سے جموںوکشمیریوٹی میں ڈیری فارمنگ شعبے کے فروغ دینے سے متعلق ایک روزہ طویل ویب نار کا اِنعقاد کیا۔ ویب نار کی صدارت لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر کے کے شرمانے کی ۔ مشیر نے ڈیری اَنٹرپرینیور شپ کی اہمیت اُجاگر کرتے ہوئے نوجوانوں کو آگے آنے اور جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لا کر پیداوار میں اِضافہ کرنے کے لئے کہا۔اُنہوں نے کہا کہ ہمیں ڈیری اَنٹرپرینیورشپ کے ہر پہلو پر غور کرنا چاہیئے کیوں کہ اِس شعبے میں ابھی بھی کچھ ایسے مارکیٹ ہیں جنہیں بروئے کار نہیں لایا گیا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ بکری کے دودھ اور اس سے بنی مصنوعات کی کافی مانگ ہے اور ہمیں ایسے شعبوں کا بغور مطالعہ کرنا چاہیئے تاکہ نوجوان اَنٹر پرینیور اس کی صلاحیت بروئے کار لاسکے۔ مشیرنے مختلف سرکاری ایجنسیوں کو کسان دوست پالیسیان وضع کرنے کے لئے کہا کہ او رانٹرپرینیورو کو حکومت کی جانب سے ہر ممکن مدد کا یقین دِلایا۔ منیجنگ ڈائریکٹر گجرات کواپریٹیو مِلک مارکیٹنگ فیڈریشن لمٹیڈ آر ایس سوڈھی نے اس موقعہ پر ویب نار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتیہ غذائی اور ڈیری شعبہ 40 لاکھ کروڑ روپے کی مالیت ہے جس میں سے 4 لاکھ کروڑ منظم شعبے کے آتے ہیں جس میں جموںوکشمیر کاحصہ 2سے 3 فیصد تک ہے ۔ڈائریکٹر جے کے اِی ڈی آئی نے کہا کہ جموںوکشمیرڈیری شعبے کی توسیع جدید خطوط اور تکنیکوںکی ضرورت ہے تاکہ لوگوں کے معیاری دودھ دستیاب رکھا جاسکے۔اُنہوں نے کہا کہ جموںوکشمیر میں یومیہ 70لاکھ لیٹر دودھ کی پیداوار درج کی گئی ہے جس میں سے صوبہ کشمیر میں 40لاکھ لیٹر جبکہ جموں میں30 لاکھ لیٹردودھ یومیہ پیداوار درج کی گئی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ جموںوکشمیرمیں ڈیری شعبے میں ہزاروں بے روزگار نوجوانوں کے لئے روزگار کے وسائل پیدا کرنے کی بھاری صلاحیت موجودہے۔ڈائریکٹر محکمہ صنعت وحرفت نے اِس موقعہ پر ملک چلنگ پلانٹس یوٹی میں قائم کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔ویب نار تعلیم یافتہ بے روز نوجوانوں کے لئے شروع کی گئی سیریز کا ایک حصہ تھی ۔ ۔ ویب نار میں چیئرمین ایف آئی سی سی آئی جے اینڈ کے، ایچ آر ایڈمن ہیڈ، جے اینڈ کے ایم پی سی ایل ، جوائنٹ ڈائریکٹر پشو پالن او رجے کے ای ڈی آئی کے فیکلٹی ممبران نے شرکت کی ۔