نیشنل کانفرنس اراکین لوک سبھا اسپیکر سے ملاقی

جموں کشمیرکی صورتحال پر پارلیمنٹ میں بحث کرنے کا مطالبہ

تاریخ    16 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
نئی دہلی//نیشنل کانفرنس ارکین پارلیمان نے ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی قیادت میں لوک سبھا اسپیکر اوم برلا کے ساتھ ملاقات کرکے مطالبہ کیا کہ  جموں کشمیرمیں یکطرفہ ،غیرآئینی اورغیر جمہوری طوردفعہ370کی تنسیخ کے بعد کی موجودہ صورتحال پرپارلیمنٹ کے رواں اجلاس میں بحث ومباحثہ کیا جائے۔اس سے قبل ارکان پارلیمان نے ضابطہ نمبر193کے تحت جموں وکشمیرکی صورت حال پر بحث کرنے کیلئے نوٹس دی تھی۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ،محمداکبر لون اور حسنین مسعودی نے اسپیکر کو جموں کشمیرکی صورتحال سے آگاہ کیا۔ممبران نے سپیکر کو گزشتہ سال حکومت کی طرف سے دفعہ370اور35Aکویکطرفہ طور غیرجمہوری اور غیرآئینی طریقے سے منسوخ کرنے کے فیصلے کے نتائج کی جانکاری دی اور کہا کہ ملک کے مفاد کیلئے اس پر تفصیلی بحث ہونی چاہیے ۔ممبران نے کہا کہ اس معاملے پر بحث اس لئے بھی ضروری بن گئی ہے کیوں کہ لوگوں کی مشکلات ومصائب میں دفعہ370کی تنسیخ کے بعد اضافہ ہوا ہے اورحکومت اس دفعہ کو ختم کرنے کے وقت کئے گئے وعدوں کوپورا کرنے میں ناکام ہوئی ہے ۔اس دوران حسنین مسعودی نے مبینہ شوپیان جعلی تصادم کا معاملہ پارلیمنٹ میں اُٹھانے کیلئے نوٹس دی ہے۔مسعودی نے کہا کہ ڈی این اے نمونے ایک ماہ قبل لئے گئے ہیں اور تحقیقات میں تاخیر کا کوئی جوازنہیں ہے ۔ 
 

تازہ ترین