تازہ ترین

اگلے قدم کے بارے میں کچھ نہیں معلوم

انتظامیہ میں واپس لیناحکومت کااستحقا ق:شاہ فیصل

تاریخ    12 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//سابق آئی اے ایس آفیسر ڈاکٹر شاہ فیصل نے کہاکہ ہم وقت کیساتھ ساتھ خودکونئی صورتحال کامقابلہ کرنے کیلئے تیار کرتے ہیں ۔انہوں نے  کہاکہ خصوصی پوزیشن کی منسوخی کے بعدکشمیر میں ایک نئی سیاسی حقیقت جنم لے چکی ہے ۔شاہ فیصل نے کہا’دوران نظر بندی میں نے بہت سوچ بچار کیا،اورمجھے احساس ہواکہ میں وہ شخص نہیں جولوگوں سے یہ وعدہ کرسکوں کہ میں پانچ اگست 2019کے فیصلوںکوبدلنے کی جدوجہد کرئونگا۔انہوں نے کہا’’ میرا نظریہ اس پر صاف ہے کہ1949میں دفعہ 370 کوآئین ہندمیں شامل کرتے وقت سیاسی اتفاق رائے تھا، 2019میں اس آئینی دفعہ کی منسوخی عمل میں لاتے وقت بھی ویساہی سیاسی اتفاق رائے موجود تھا‘‘۔شاہ فیصل کے بقول میں نے خود سے کہاکہ میں جھوٹے خواب دکھاکر سیاست نہیں کرپائوں گا،اورنہ لوگوں سے یہ کہہ پائوں گاکہ مرکز کے فیصلے بدلے جائیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں سابق بیوروکریٹ کاکہناتھاکہ مجھے نہیں پتہ کہ وقت نے میرے لئے کیالکھا ہے اورمیرامستقبل کیایاکیسا ہوگالیکن میری یہ خواہش اورخواب ہے کہ جموں وکشمیر میں امن وامان ہواوریہاں تعلیم ،صحت اورروزگار کے حوالے سے بہترین موقعے ہوں ۔شاہ فیصل نے تاہم کہاکہ مجھے نہیں لگتاکہ ایسا فی الوقت ہوگا۔انہوں نے کہاکہ مجھے ابھی نہیں معلوم کہ میری زندگی کااگلاقدم کیا ہوگا۔اس سوال کہ اگرآپ کوواپس انتظامیہ میں لیاجائے گا،شاہ فیصل کاکہناتھاکہ یہ حکومت کااستحقا ق ہے ۔انہوں نے کہاکہ میں ہمیشہ کہتارہوں کہ میں سسٹم کے اندررہ کرکام کرناچاہتاہوں۔
 

تازہ ترین