تازہ ترین

شاہ فیصل کی سرگرم سیاست سے کنارہ کشی

پارٹی سے مستعفی،جاوید مصطفیٰ میر کا بھی خیر باد

تاریخ    11 اگست 2020 (00 : 02 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//سابق آئی اے ایس افسر اورجموں کشمیر پیپلز مومنٹ صدر شاہ فیصل نے پارٹی کی صدارت سے استعفیٰ دیکر سرگرم سیاست سے کناری کشی اختیار کرنیکا فیصلہ کیا ہے۔اس سے قبل پارٹی چیئر مین جاوید مصطفی میر بھی مستعفی ہوگئے ہیں۔ شاہ فیصل  نے 2010میں آئی اے ایس میں پہلی پوزیشن حاصل کی تھی اور انہوں نے 8سال تک مختلف عہدوں پر کام کیا۔ 2018کو شاہ فیصل نے ہاورڈ یونیورسٹی امریکہ میں ایک سال کا تعلیمی کورس کرنے کیلئے رخصت لی لیکن واپسی پر انہوں نے استعفیٰ دیا اور مارچ 2019میں انہوں نے جموں کشمیرپیپلز مومنٹ کے نام سے اپنی سیاسی پارٹی کا قیام عمل میں لایا۔لیکن 5اگست کو دفعہ 370کے خاتمے کے بعد جموں کشمیر میں سیاسی صورتحال یکسر تبدیل ہوئی ۔ 14اگست 2019کو شاہ فیصل کو نئی دہلی ہوائی اڈے پر اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ استنبول جانے کی کوشش کررہے تھے۔انہیں سرینگر لایا گیا اور یہاں دیگر 34سیاستدانوں کیساتھ ہوٹل سنتور کے سب جیل میں رکھا گیا۔انہیں قریب ایک سال بعد 3جون کو رہا کیا گیا تاہم بدستور خانہ نظر بند رکھا گیا۔ادھر حکومت ہند نے انکا استعفیٰ ابھی تک منظور نہیں کیا ہے۔شاہ فیصل نے ایک میڈیا چینل کو انٹر ویو دیتے ہوئے کہا ’’ وہ جموں کشمیر کے عوام کو دھوکے میں نہیں رکھنا چاہتے، جو کچھ بھی ہوا وہ اب حقیقت ہے ، اسکے ساتھ ہی ہمیں رہنا ہوگا‘‘۔انہوں نے کہا ’’ میری سمجھ میں نہیں آتا کہ کیوں کوئی بھارت مخالف ہوسکتا ہے، میں نہیں چاہتا کہ مجھے غدار کہا جائے، میں آگے بڑھنا چاہتا ہوں کیونکہ یہاں کے عوام کی بہت طریقوں سے خدمت کی جاسکتی ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ زندگی رک نہیں جاتی۔ادھر پارٹی نے نائب صدر فیروز پیرزادہ کو قائمقام صدر منتخب کیا ہے۔پارٹی کا کہنا ہے’’ جموں کشمیر پیپلز مومنٹ کی ایگزیکٹو کمیٹی کے آن لائن اجلاس کے دوران خطے میں موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ۔ اجلاس کے دوران ڈاکٹر شاہ فیصل کی طرف سے دی گئی درخواست، کہ انہیں تنظیمی ذمہ داروں سے فارغ کیا جائے، کو زیر غور لایا گیا۔‘‘ مزید بتایا گیا ’’ میٹنگ کے دوران ڈاکٹر شاہ فیصل نے ریاستی ایگزکیٹو کمیٹی کو مطع کیا کہ وہ اس پوزیشن میں نہیں ہیں کہ وہ سیاسی سرگرمیوں کو جاری رکھ سکیں،اور چاہتے ہیں کہ انہیں تنظیمی ذمہ داریوں سے دستبردار کیا جائے‘‘۔پیپلز مومنٹ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ درخواست کو مد نظر رکھتے ہوئے’’اس بات کا فیصلہ لیا گیا کہ انکی درخواست کو منظور کیا جائے،تاکہ وہ اپنی زندگی بہتر طریقے سے جاری رکھ سکیں اور انہوں نے جس کسی بھی راستے کو تلاش کیا ہے،اس  پراپنی خدمات فراہم کریں‘‘۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ پارٹی کے نائب صدر فیروز پیرزادہ کو پارٹی کا قائمقام صدر بنایا گیا ہے جو پارٹی کیلئے صدارتی انتخابات تک یہ ذمہ داری سنبھالیں گے۔پارٹی نے چیئر مین جاوید مصطفے میر کا استعفیٰ بھی منظور کرلیا ہے۔جاوید مصطفی میر نے گذشتہ برس پی ڈی پی چھوڑکر شاہ فیصل کی پیپلز مومنٹ میں شمولیت اختیار کی تھی۔
 

تازہ ترین