کولگام میں مسلح تصادم کے دوران جنگجو فرار | شوپیان سے سکار پیوگاڑی کی چوری کے بعد ہائی الرٹ ،سرینگر سے بر آمد

تاریخ    10 اگست 2020 (30 : 01 AM)   


خالد جاوید+ عارف بلوچ
کولگام+اننت ناگ // کولگام کے ایک مضافاتی گائوں میں جنگجوئوں اور فورسز کے درمیان کریک ڈائون کے دوران شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا، تاہم جنگجو فرار ہوگئے۔ادھر17جولائی کو دمحال ہانجی پورہ میں جس مکان میں جھڑپ کے دوران 3جنگجو جاں بحق ہوئے تھے، اسکے مالک نے خود کو پھانسی دیدی۔دریں اثناء شوپیان میں سکارپیو چوری ہو نے کے بعد پوری وادی میں فورسز کو الرٹ کیا گیا اور مذکورہ گاڑی کو فور شور روڑ سرینگر میں بر آمد کیا گیا۔مقامی لوگوں کے مطابق شگن پورہ کولگام نامی گائوں کا34آر آر،18سی آر پی ایف اور پولیس نے دوران شب ہی محاصرے میں لیا اور گائوں کی سخت ترین ناکہ بندی کی گئی۔رات کے قریب 3بجے جنگجوئوں اور فورسز میں فائرنگ کا تبادلہ شروع ہوا جو کافی دیر تک جاری رہا۔بتایا جاتا ہے کہ جنگجو رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھا کر فرار ہونے میں کامیاب ہوئے لیکن یہاں محاصرہ جاری رکھا گیا اور صبح ہوتے ہی وسیع تلاشی آپریشن شروع کیا گیا جو کئی گھنٹوں تک جاری رہا۔اس دوران اتوار کی صبح ناگنڈ ژمر دمحال ہانجی پورہ کولگام میں ایک شخص کی لاش بر آمد کی گئی۔اس نے اپنے ہی مکان میں خود کو پھانسی دی تھی۔بلال احمد لون ولد غلام محمد کے مکان میں موجود جنگجوئوں اور 9آر آر، ایس او جی اور18بٹالین سی آر پی ایف اہلکاروں کے درمیان17جولائی کو مسلح جھڑپ ہوئی تھی جس میںغیر ملکی جنگجو کمانڈرولید بھائی کے علاوہ دو مقامی جنگجو جاں بحق ہوئے تھے۔اس جھڑپ میں3فورسز اہلکار بھی زخمی ہوئے تھے۔پولیس نے کہا ہے کہ اس واقعہ کا مسلح جھڑپ کیساتھ کوئی تعلق نہیں ہے اور سوشل میڈیا پر پولیس کیخلاف پروپگنڈا کیا جارہا ہے، جو سراسر غلط ہے۔ادھر شوپیان ٹائون میں نامعلوم افراد نے دوران سکارپیو  زیر نمبر CH048/1767اڑا لی ، جسے فور شور روڑ نشاط میں پایا گیا۔ اس موقعہ پر گاڑی میں سوار دو افراد فرار ہوئے۔ گاڑی اڑانے کی اطلاع کے فوراً بعد پوری وادی میں فورسز کو الرٹ کیا گیا تھا۔
 
 

تازہ ترین