تازہ ترین

عرفہ کو بازاروں میں محدود گہما گہمی

مسلسل20ویں ہفتے بھی جامع مساجداور خانقاہوں کے در و دیوار خاموش

تاریخ    1 اگست 2020 (00 : 03 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//سرینگر میں یوم العرفہ کو لالچوک سمیت کئی دیگر علاقوں میں بیکری کی چند دکانوں پر لوگوں نے معمولی خریداری کی،جبکہ گزشتہ کئی دنوں کے مقابلے میں قربانی کے جانوروں کی خریداری بھی کچھ حد تک کی گئی۔جمعہ کو مسلسل20ہفتے بھی وادی کی تمام بڑی جامع مساجد اور خانقاہو کے علاوہ درگاہوں سے منسلک مساجد میں باجماعت نماز کی ادائیگی نہیں ہوئی۔جامع مسجد سرینگر،درگاہ حضرت بل،خانقاہ معلی،زیارت حضرت شیخ حمزہ مخدوم،آثار شریف شہری کاشپورہ،جناب صاحب صورہ سمیت دیگر درگاہوں میں مسلسل5ماہ سے نماز کی ادائیگی نہیں ہو رہی ہے۔اس دوران سیول لائنز کے ڈلگیٹ،لالچوک،جواہر نگر،راجباغ ،بٹہ مالو،صنعت نگر،سونہ وار،بٹوارہ،لسجن اور دیگر کئی علاقوں میں بیکری ،گوشت اور مرغ کی دکانیں کھل گئی۔لوگوں نے عید کی منابت سے بیکری،گوشت اور مرغ کی خریداری کی،تاہم روایتی گہماگہمی اور چہل پہل ماند رہی۔لالچوک کے ریذڈنس روڑ پر واقع بیکری کی دکانوں میں کچھ گھماگہمی نظر آئی،تاہم بیکری فروشوں کا کہنا تھا کہ عید کے موقعہ پر جس طرح وہ بیکری کو فروخت کرتے تھے،اس کی30فیصد بیکری بھی فروخت نہیں ہوئے۔سیول لائنز کے علاوہ پائین شہر میں بھی گوشت و بیکری کی دکانیں کھل گئیں ،اور لوگوں نے مقامی طور پر ہی بیکری،گوشت،پولٹری اور پنیر کی خریداری کی۔ ملبوسات ،جوتے اور خواتین کیلئے آرئش کا ساز و سامان فروخت کرنے والی دکانوں میں روایتی خریداری دیکھنے کو نہیں ملی۔شہر میں گونی کھن مارکیٹ،جس میں خواتین کی زیبائش و آرائش کا سامان اور کپڑے و تیار شدہ ملبوسات کی خریداری ہوتی ہیں،میں بھی کچھ حد تک گہما گہمی دیکھنے کو ملی۔ شہر کے راجباغ،لالچوک، بربر شاہ،سونہ وار، ڈلگیٹ،نائو پورہ اور دیگر علاقوں میں سڑکوں پر قربانی کے جانوروں کی خریداری کے مناظر نظر دیکھنے کو ملے۔

تازہ ترین