شہر کے متعدد علاقوں میں پانی کا بحران | مہجور نگر اور آلوچی باغ میں کنویں تعمیر کئے جائیں: اپنی پارٹی

تاریخ    28 جولائی 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//جموں وکشمیر اپنی پارٹی لیڈر جگموہن سنگھ رینہ نے شہر کے متعدد علاقہ جات میں لوگوں کوصاف پانی کی قلت پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ایک بیان میں رینہ نے کہا کہ سرینگر کے متعدد علاقہ جات جن میں مہجور نگر، آلوچی باغ، سرائے بالا، بائے علی مردان خان، لال بازار کے زیلی علاقے بوٹہ کدل، بٹ شاہ محلہ، مغلاں محلہ، گینز باغ، عمر کالونی، باغوان پورہ، آمدہ کدل، زونی مار اور نوشہرہ شامل ہیں، میں خاص کر کورونا کے دوران پینے کا پانی دستیاب نہیں۔ مہجور نگر اور آلوچی باغ جیسے علاقوں کی خواتین کو پانی کی قلت سے رسوئی چلانا مشکل ہورہا ہے۔اپنی پارٹی لیڈر نے کہاکہ پانی کی قلت کی وجہ سے کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے جاری صفائی رہنما خطوط پر بھی عملدرآمد نہیں ہوپارہا۔ انتظامیہ کو فوری پختہ اقدامات کرنے چاہئے تاکہ اِس طرح کی صورتحال سے بچا جاسکے۔ انہوں نے کہاکہ سرینگر میں دو لاکھ سے زائد گھر پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی سے متاثر ہیں اور اِس بحرانی صورتحال میں انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اٹل جل یوجنہ کو دسمبر2019میں لانچ کیاگیاتھا لیکن اِس کے مستفیدین صرف دیہی علاقہ جات میں ہیں، حکومت کو شہری علاقوں خاص طور سے شہر ِ سرینگر میںلوگوں کو درپیش پانی بحران کے مسئلہ کو حل کرنا چاہئے۔ رینہ نے کھادی مل گراؤنڈ آلوچی باغ اور مہجور نگر علاقوں میں واٹر فلٹریشن پلانٹ لگانے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ پانی بحران کے مسئلہ کو حل کرنے کیلئے سرینگر کے متعدد مقامات پر بوریل ویل نصب کئے جائیں۔
 

تازہ ترین