پاکستان میں درماندہ 404شہریوں کی بذریعہ بس واپسی

تاریخ    27 جون 2020 (00 : 03 AM)   


سید امجد شاہ
جموں //جموں وکشمیر کے 404افراد کو بذریعہ بس واپس لایاگیاہے جو کورونالاک ڈائون کی وجہ سے پاکستان میں درماندہ ہوکر رہ گئے تھے ۔ڈپٹی کمشنر کٹھوعہ اوپی بھگت نے بتایا’’204افراد لکھنپور پہنچے ، ان کا استقبال کیا گیا اور انہیں کھانے پینے کی اشیاء فراہم کرکے اپنے متعلقہ اضلاع کیلئے روانہ کردیا گیا‘‘۔بھگت نے بتایاکہ یہ افراد8بسوں اور2چھوٹی گاڑیوں کے ذریعہ پہنچے اور سانبہ ضلع انتظامیہ نے ان کیلئے رات کے کھانے کا بندوبست کیاہے ۔انہوں نے بتایاکہ 200مزید افراد پاکستان سے واپس آگئے ہیں اور دیر گئے شام تک وہ بھی لکھنپور پہنچیں گے ۔انہوں نے بتایاکہ اس طرح سے کل 404افراد واپس آئے ہیں ۔امتیاز احمد لون پچھلے تین ماہ سے اسلام آباد میں درماندہ تھے جو واپس پہنچے ہیں ۔ ان کاکہناہے کہ ان کے ساتھ آنیوالے کئی طلباء ہیں جبکہ کچھ اپنے رشتہ داروں سے ملاقات کیلئے پاکستان گئے تھے ۔اسی طرح سے رئوف احمد بٹ نے 4ماہ لاہور میں گزارے ۔انہوں نے بتایا’’ہم حکومت ہند کے شکر گزار ہیں جس نے ہمیں جموں وکشمیر واپس لانے میں مدد کی ‘‘۔راجوری کے خلیق الرحمن بھی واپس پہنچے ہیں جو اپنے رشتہ داروں سے ملاقات کیلئے پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے علاقہ میرپور گئے تھے۔
 

تازہ ترین