تازہ ترین

درجہ چہارم اسامیوں کی خصوصی بھرتی مہم کیلئے قواعد و ضوابط مرتب

عارضی ملازمین،طلاق یافتہ خواتین اور یتیموں لڑکیوں کو 5نمبرات کی چھوٹ

تاریخ    5 جون 2020 (00 : 03 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//حکام نے جموں کشمیر  کے سرکاری محکموں میں درجہ چہارم کی اسامیوں کو پُر کرنے کیلئے ضوابط کی نشاندہی کی ہے۔حکام نے ان قواعد کو جموں کشمیر درجہ چہارم تعیناتی عمل(خصوصی بھرتی) ضوابط2020کا نام دیا گیا ہے۔ عمومی انتظامی محکمہ کے سیکریٹری فاروق احمد شاہ  نے جموں کشمیر کے لیفٹنٹ گورنر کی ہدایت پر جمعرات کو ایک نوٹیفکیشن  جاری کی،جس کے تحت ان اسامیوں کو پُر کرنے کیلئے ضوابطی طریقہ کار کی نشاندہی کی گئی۔ نوٹیفکیشن کے ذریعے تمام انتظامی محکموں کو ہدایت دی گئی کہ  عمومی انتظامی محکمہ کی طرف سے مقرہ کردہ تاریخ کے اندر مختلف زمروں میں براہ راست تعیناتی کیلئے درجہ چہارم کی اسامیوں کی ایک فہرست تیار کریں،اور ان کو جنرل ایڈمنسٹریشن محکمہ کو روانہ کریں،تاہم انتظامی محکموں کو ریزرویشن  ایکٹ 2004کا خیال رکھنے کی تاکید کی گئی ہے۔ جے اے ڈی محکمہ کو بھی کہا گیا ہے کہ وہ  یہ فہرست سروس سلیکشن بورڈ کو روانہ کریں،جبکہ بورڈ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ان اسامیوں کو پُر کرنے کیلئے مرتب شدہ رطقہ کار کو عملائے۔ مرکزی زیر انتظام والے علاقے ،صوبائی اور ضلع  سطح پر مشتمل ان اسامیوں کی بھرتی سروس سلیکشن بورڈ جموں وکشمیر کی طرف سے کی جائے گی اور بھرتی عمل تحریری امتحان پر مشتمل ہوگا جس کی پہلے سے ہی ایس آر او404بتاریخ 15ستمبر2018کے مطابق  نشاندہی کی گئی ہو۔قواعد کے تحت  مرکزی زیر انتظام اکائی کی سطح کیلئے انتخاب کا طریقہ کار تحریری امتحان کیلئے 85نمبرات پر ہوگااور5نمبرات ان کنبوں کیلئے ہوں گے جن کے گھر سے کوئی بھی فرد سرکاری یا نیم سرکاری ملازم نہ ہو۔اس کے علاوہ 5نمبرات طلاق یافتہ،بیوائوں اور علیحدہ رہنے والی خواتین ویتیم لڑکیوں کیلئے مختص رکھے گئے ہیں جبکہ 5نمبرات ان عارضی ملازمین کے لئے مختص ہیں جنہوں نے کم سے کم پانچ سال اپنی خدمات انجام دی ہیں ۔اسی طرح سے حکومت نے صوبائی سطح کیلئے بھی قواعد کی نشاندہی کی گئی ہے جن کے مطابق تحریری امتحان کے 80نمبرات ہوں گے جبکہ اس کے علاوہ 5نمبرات طلاق یافتہ،بیوائوں اور علیحدہ رہنے والی خواتین ویتیم لڑکیوں کیلئے مختص رکھے گئے ہیں جبکہ 5نمبرات ان عارضی ملازمین کے لئے مختص ہیں جنہوں نے کم سے کم پانچ سال اپنی خدمات انجام دی ہیں ۔وہیں ضلع سطح کیلئے تحریری امتحان 75نمبرات پرمشتمل ہوگاجس کے علاوہ 10نمبرات طلاق یافتہ،بیوائوں اور علیحدہ رہنے والی خواتین ویتیم لڑکیوں کیلئے مختص رکھے گئے ہیں جبکہ 5نمبرات ان عارضی ملازمین کے لئے مختص ہیں جنہوں نے کم سے کم پانچ سال اپنی خدمات انجام دی ہیں ۔سروس سلیکشن بورڈ کی طرف سے امیدواروں کی نامزد مشتہر کی گئی اسامیوں میں سے ایک چوتھائی پر ہوگی ۔نوٹیفکیشن میں واضح کیا گیا ہے کہ اگر کوئی اسامی منتخب شدہ شخص حاضر نہ نہ ہونے سے خالی رہ گئی تو انتظامی محکمہ تین ماہ کے اندر اس سلسلے میں محکمہ عمومی انتظامی کو مطلع کرے گاجس کے بعد مذکورہ محکمہ یہ اسامی سروس سلیکشن بورڈ کو ر روانہ کرے گاتاکہ اہلیت کی فہرست میں شامل امیدواروں کی اگلی فہرست جاری کی جاسکے۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ سروس سلیکشن بورڈ جموں کشمیر کے اقامتی لوگوں سے درخواست طلب کریں گی
 

سروس سلیکشن بورڈ میں2ممبران کی تقرری

سرینگر// حکام نے سرکاری محکموں میں بھرتی کرنے والے ادارے سروس سلیکشن بورڈ میں2 ممبران کو نامزد کیا ہے۔ جمعرات کو عمومی انتظامی محکمہ کے ایڈیشنل سیکریٹری چرن دیپ سنگھ کی طرف سے ایک حکام نامہ جاری کیا گیا جس میںصوبائی کمشنر کشمیر کے دفترمیں تعینات نذیر احمد خواجہ اورایڈیشنل ڈپٹی کمشنر سوپور عاشق حسین للی کو سروس سلیکشن بورڈ  میں ممبر ان کے بطور نامزد کیا ہے۔