مزید خبریں

تاریخ    4 جون 2020 (00 : 03 AM)   


نیوز ڈیسک

سمارٹ میٹر دونوں صوبوںمیں یکساں طور تقسیم کئے جائیں :کنسل

پرنسپل سیکریٹری نے محکمہ بجلی کی کارکردگی کا جائزہ لیا

جموں//پرنسپل سیکرٹری محکمہ بجلی روہت کنسل نے جے پی ڈی سی ڈی ایل اور کے پی ڈی سی ایل ( ڈی آئی ایس سی او ایم ایس ) کو آتما نربھر ابھیان کے تحت خصوصی و جامع اقتصادی پیکیج سے استفادہ کرنے پر زور دیا۔سکیم کے تحت کووڈ ۔19کے سبب پیدا شدہ مالی بحران سے نمٹنے کے لئے ڈسکامز کو 90ہزار کروڑ روپے بجلی کمپنیوں کے بقایاجات کی ادائیگی کے لئے فراہم کئے جارہے ہیں۔اس کا اظہار پرنسپل سیکرٹری نے محکمہ کی جاری سکیموں اور التوا ٔ میں پڑے مختلف معاملات پر پیش رفت کا جائزہ لینے کے دوران کیا۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ جموں وکشمیر یوٹی میں بجلی میٹروں کی ناقص بھاری تنصیب اے ٹی اور سی نقصانات کی سب سے بڑی وجہ ہے جو کہ قومی 18.6فیصد کے مقابلے میں 48فیصد ہے۔میٹنگ میں مزید بتایا گیا کہ یوٹی میں صارفین کی تعداد لگ بھگ 21لاکھ ہیں جن میں سے 50فیصد صارفین کو ہی بجلی میٹروں کے دائرے میں لایا گیا ہے اور میٹروں کے بغیر صارفین مقرر کی گئی شرح کی بنیاد بجلی بِل ادا کرتے ہیںجس سے یوٹی میں محکمہ بجلی کی مالی امور پر منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں تاہم یک وقتی رقم کی فراہمی اور جامع مالی پیکیج سے ڈسکامز کی دیرینہ مالی مشکلات کو حل کرنے میں مدد ملے گی۔میٹنگ میں مزید بتایا گیا کہ ٹی ایم ڈی پی کے تحت جموں اور سری نگر شہروں میں دو لاکھ میٹر نصب کرنے کے پروجیکٹ فی الوقت کام ہور ہا ہے اور پروجیکٹ پر کا م کرنے والی ایجنسی آر ای سی پی ڈی سی ایل نے اب تک 1.15لاکھ میٹر خریدے ہیں ۔ پرنسپل سیکرٹری نے دستیاب میٹروں کو سری نگر اور جموں کے دوبڑے شہروں میں یکسان طور تقسیم کرنے کی ہدایت دی جبکہ باقی ماندہ 85ہزار میٹروں کی حصول کے لئے درکا ر رقم کا معاملہ حکومت ہند کی وزارت برائے بجلی کے ساتھ اُٹھایا جائے گاتاکہ جموں اور سری نگر کے دونوں شہروں میں ہر ایک شہر کے لئے ایک لاکھ میٹروں کی تنصیب کا ہدف پورا کیا جاسکے۔میٹروں کی تنصیب کا کام جولائی 2020ء سے شروع ہونے کی توقع ہے۔
 
 
 

پولیس سربراہ نے ترقی پانے والے افسروں کی عزت افزائی کی

سرینگر//جموں کشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ نے حالیہ ایام میں ترقی پاکر ڈپٹی سپر انٹنڈنٹ آف پولیس کے عہدوں پر تعینات ہونے والے افسران کی عزت افزائی کی۔اس سلسلے میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران ڈائریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے اندرجیت سنگھ اور منوج کمار کے کندھوں پر ستارے بھی سجائے۔ انہوں نے افسران اور انکے اہل خانہ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے  امید ظاہر کی کہ وہ اسی لگن اور محنت کے ساتھ عوامی خدمات اور پیشہ وارانہ خدمات کو جاری رکھیںگے۔اس موقعہ پر ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس سید جاوید مجتبیٰ گیلانی اور پولیس ہیڈ کواٹر کے دیگر سنیئر افسران بھی موجود تھے۔ان دونوں افسران کو پولیس ہیڈ کواٹر میں تعینات کیا گیا۔
 
 

کیرن سیکٹر میں ہند پاک کے درمیان گولہ باری کاتبادلہ

جموں//پاکستان کی طرف سے حدمتارکہ پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیوں کاسلسلہ جاری ہے اوربدھ کو پونچھ ضلع میں حدمتارکہ پر ایک بار پھر اُس نے بھارت کی چوکیوں کو نشانہ بنایا۔فوجی ترجمان کے مطابق بھارت نے پاکستان کی گولہ باری کابھرپور جواب دیا۔ترجمان کے مطابق کیرنی سیکٹر میں پاکستان نے دن کے پونے دو بجے بلااشتعال فائرنگ شروع کی۔ترجمان نے بتایا کہ بھارتی فوج نے بھی پاکستان کی گولہ باری کا بھر پور جواب دیا۔انہوں نے مزید کہا کہ گولہ باری کاتبادلہ طرفین کے مابین کچھ وقت تک جاری رہا تاہم اس دوران اس طرف  کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے ۔
 
 
 
 
 
 

مرکزجموں کشمیرکومحتاج بنانے کے درپے :ڈاکٹر مصطفی کمال

سرینگر// مرکزی حکومت جموں کشمیر کوہرلحاظ سے محتاج بنانے کی مذموم کوششیں کررہی ہیں اور ایک ایسے وقت میں جب دنیا کے تمام ممالک کی توجہ کورونا وائرس سے بچائو کی طرف مرکوزہے، نئی دلی جموں وکشمیر میں اپنے غیر جمہوری اور غیر آئینی منصوبے عملانے میں مصروف ہے۔ان باتوں کااظہار نیشنل کانفرنس کے معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفی کمال نے ایک بیان میں کیا ۔انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت کورونا وائرس کی آڑ میں جموں وکشمیر پر جبری فیصلے مسلط کررہی ہیں،جو یہاں کے تینوں خطوں کے عوام کو کسی بھی صورت میں قبول نہیں۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ میں بھاجپا حکومت کے یہ اقدامات جبری، غیر جمہوری اور غیر آئینی درج ہونگے اور آنے والی نسلیں اُنہیں اس کیلئے معاف نہیں کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ بھاجپا حکومت نے یہاں کی خصوصی پوزیشن کو غیر جمہوری اور غیر آئینی طور ختم کرکے یہاں کے لوگوں کیساتھ بہت بڑی ناانصافی کی ہے۔ مرکزی حکومت اپنے غلط اقدامات کو صحیح جتلانے کیلئے گذشتہ10ماہ سے جھوٹ اور فریب پر مبنی بیانات دیکر لوگوں کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے جبکہ زمینی سطح پر جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن ختم کئے جانے کے بعد سے آج تک ہر ایک شعبہ بری طرح متاثر ہوگیا ہے۔ ڈاکٹر کمال نے کہا کہ مرکزی حکومت کے طریقہ کار سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ جموں وکشمیر کو ہر لحاظ سے محتاج بنانے کی مذموم کوششیں کی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس عوامی اشتراک اسے اپنے حقوق کی بحالی کیلئے جدوجہد کرتی رہے گی ۔ جموں وکشمیر کیخلاف ماضی بھی مذموم سازشوں کے جال بُنے گئے لیکن ہر بار دشمنوں کے مکروہ ارادے ناکام ہوگئے ۔ 
 
 
 

نانیل اننت ناگ میں بارودی مواد ضبط :پولیس

چار افراد گرفتار، معاملہ درج

سرینگر//پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ جنوبی کشمیر کے نانیل اننت ناگ میں چھاپے کے دوران24کلو غیر قانونی بارودی مواد کو ضبط کیا گیا،جبکہ4افراد کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔پولیس نے بتایا کہ مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد عادل مقبول ولد محمد مقبول  وانی ساکن نانل اننت ناگ کے گھر پر چھپاہ مارا،جس کے دوران پالی تھین لفافوں میں بند24کلو بارودی مواد کو ضبط کیا گیا۔پولیس نے بتایا کہ ابتدائی تحقیقات میں پتہ چلا کہ اس معاملے میں مزید3افراد ملوث ہے،جن کی شناخت محمد شاہد پڈر ساکن ہٹمورہ،فیضان احمد ساکن نانیل اور عدنان احمد ساکن چند پورہ بجبہاڑہ کے بطور ہوئی۔انہوں نے بتایا کہ تمام چاروں نوجوانوں کو حراست میں لیا گیا،اور پولیس تھانہ مٹن میں نظر بند رکھا گیا۔پولیس نے اس سلسلے میں ایک کیس زیر نمبر51/2020متعلقہ دفعات کے تحت پولیس اسٹیشن مٹن میں درج کرکے مزید تحقیقات شروع کی۔
 
 
 

اسکولوں کو کھلونے کا منصوبہ  | سنگین نتائج برآمد ہوں گے:حکیم یاسین ، قیوم وانی 

سرینگر//محکمہ تعلیم کی طرف سے ریاست میں رواں ماہ کے وسط میں اسکول کھولنے کے منصوبے پرتشویش کااظہار کرتے ہوئے پیپلزڈیموکریٹک فرنٹ کے چیئرمین حکیم محمدیاسین  اور سابق ایجیک صدر عبدالقیوم وانی نے کہا کہ جموں کشمیرمیں کووِڈ-   19کے معاملات میں آئے روزاضافہ ہونے سے فی الحال اسکولوں کو کھولنے کا فیصلہ ہلاکت خیزہوگا۔ایک بیان میں حکیم یاسین نے کہا کہ محکمہ تعلیم کی طرف سے جموں کشمیرمیں اسکولوں کو رواں ماہ کے وسط میں کھولے جانے سے متعلق سرکیولر انتہائی  پریشانی کا باعث ہے کیونکہ بچوں کیلئے اسکولوں کو سماجی دوری کو بنائے رکھنا ممکن نہیں ہے ۔حکیم یاسین نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ اسکولوں کو کھولنے سے قبل والدین کو اعتماد میں لیں۔انہوں نے کہا کہ تعلیمی امور کو پورا کرنے سے قبل بچوں کی صحت اوران کی سلامتی کو پہلی ترجیح دینی ہوگی۔انہوں نے لیفٹنٹ گورنرسے اس معاملے میں مداخلت کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ مجوزہ منصوبے کو فوری طور موخر کیا جائے۔ادھرایجیک کے سابق صدر اور سول سوسائٹی ممبر عبدالقیوم وانی نے بھی اسکولوں کو رواں ماہ کے وسط میں کھولے جانے کی تجویز کوجلدبازی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ اگر اس فیصلے پر عمل کیاگیا تویہ ہماری نئی پود کیلئے سم قاتل کے مترادف ہوگا۔انہوں نے کہا کہ اب جموں کشمیر میں پہلے سے زیادہ لوگ کووِڈ-  19کاشکار ہوتے ہیں۔انہوںنے خبردارکیا کہ اگر کوروناوائرس کے وباء کے دوران اسکولوں کو کھولا گیا تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔
 
 
 

قازقستان میں درماندہ طلاب | 14جون سے قبل وادی پہنچائے جائیں گے:سوز

سری نگر//قازقستان میں درماندہ 80کشمیری طلبہ کو 14جون سے قبل وادی پہنچایا جائے گا۔اس بات کی یقین دہانی قازقستان میں بھارت کے سفیرپربھات کمار نے سابق مرکزی وزیر اور کانگریس رہنما پروفیسرسیف الدین سوز کو ایک مکتوب میں دی ہے ۔پروفیسر سوزکے ایک بیان کے مطابق قازقستان میں بھارت کے سفیر پربھات کمار نے انہیں بتایا کہ وندے بھارت مشن کے تحت پروازوں کا شیڈول طے کیا جارہا ہے۔سوز نے کہا کہ پربھات کمار نے انہیں یقین دلایا کہ وہ جلد ازجلدکشمیری طلاب کو وادی پہنچانے کی کوشش کریں گے اوراس سلسلے میں ان طلاب کو باخبررکھاجائے گا۔سوز نے وزارت خارجہ کے سینئرافسرمنیشن پربھات اور قازقستان میںبھارت کے سفیرپربھات کمار کاشکریہ اداکیاجنہوں نے قازقستان کو درماندہ کشمیری طلاب کو کشمیر لانے کے سلسلے میں ان کی گزارشات کی بھر پورحمایت کی۔
 
 

احکامات کی عدولی ، کولگام میں8گرفتار

سرینگر //کولگام پولیس نے کووِڈ-   19کی وباء کو پھیلنے سے روکنے کیلئے ضابطوں کی خلاف ورزی کرنے والے8افراد کو گرفتار کرکے ان کے خلاف کیس درج کیا ہے۔پولیس بیان کے مطابق پولیس نے عوا م سے اپیل کی ہے کہ وہ کوروناوائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کیلئے سرکاری احکامات کی عدولی سے اجتناب کریں۔بیان میں کہا گیا ہے کہ خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔
 
 
 

ڈورو کے تین دیہات میں جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو

عارف بلوچ

اننت ناگ // ڈورو شاہ آباد کے کھاہ گنڈ،فتحرو اور بمڈل میں حاملہ خواتین کے کووِڈ- 19  ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد میونسپل کمیٹی عملہ نے ان تینوں گائوں میں جراشیم کش ادویات کا چھڑکائو کیا ۔کمیٹی سے وابستہ اہلکاروں نے ضلع ترقیاتی کمشنر اننت ناگ اور ڈائیریکٹر اربن لوکل باڈیز کی ہدایت پر گائوں میں چھڑکائو کیااور لوگوں سے تلقین کی کہ وہ گھروں میں ہی رہیں۔چیئر مین میونسپل کمیٹی ڈورو محمد اقبال کا کہنا ہے کہ اول روز سے ہی ڈورو اور ویری ناگ قصبوں میں وہ متحرک ہے اور وائرس سے بچنے کے لئے جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو جاری رکھے ہوئے ہیں۔اُنہوں نے لوگوں کو بیماری سے محفوظ رہنے کے لئے احتیاطی تدابیر پر مکمل عمل کرنے کی اپیل کی ۔
 
 
 

جموں کشمیربینک کے تازہ بھرتی عمل کو شفاف بنایا جائے:دلاورمیر

گزشتہ بھرتی عمل میں شامل امیدواروں کو مزید رعایات دینے کا مطالبہ

سرینگر//جموں کشمیربینک کی طرف سے تازہ بھرتی عمل شروع کئے جانے کی سراہنا کرتے ہوئے ’اپنی پارٹی‘کے سینئررہنماء اور سابق وزیر محمددلاورمیر نے اس عمل کو مزیدشفاف بنانے کیلئے اس سے قبل کے بھرتی عمل ،جسے موجودہ حکومت نے کالعدم قراردیاتھا،میں شامل ہوئے امیدواروں کومزیدرعایت دینے پرزوردیا۔انہوں نے بینک انتظامیہ سے کہا کہ وہ خواہشمندامیدواروں سے اقامتی سند پیش کرنے پرزوردینے کے بجائے جموں کشمیرکاپشتینی باشندہ ہونے کی سند کوہی بھرتی عمل میں رہائشی ثبوت کے طور تسلیم کرے۔ایک بیان میں میر نے کہا کہ خواہشمندامیدواروں سے اقامتی سند پیش کرنے کا نہیں کیا جاسکتا ہے کیونکہ اُن کے پاس جو جموں کشمیرکاپشتینی باشندہ ہونے کی سند موجود ہے ،وہ بھی بااختیار حکام نے وقت وقت پر جاری کئے ہیں۔میر نے کہا کہ بھرتی عمل کے قاعدوں اور ضوابط پر کووِڈ- 19کی وبائی صورتحال کی وجہ سے پیدا ہوئے حالات کی وجہ سے جموں کشمیرکے خواہشمندامیدواروں کیلئے دوبارہ غور کرنے کی ضرورت ہے۔جموں کشمیر اپنی پارٹی کے رہنما نے مطالبہ کیا کہ جموں کشمیر بینک کی طرف سے پروبیشنری افسروں اور بینکنگ ایگزیکیٹوکی1800اسامیاں پُر کرنے کیلئے بھرتی عمل قابل سراہنا ہے تاہم امید کی جاسکتی ہے کہ بینک انتظامیہ اس عمل کو مزید شفاف بنانے کیلئے اُن امیدواروں، جنہوں نے اس سے قبل کے  اسی بھرتی عمل میں حصہ لیاتھاجسے بعد میں حکومت نے کالعدم قراردیاگیاتھا،کومزید رعایت دے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سابق گورنر ایس پی ملک کے دور میں لاکھوں امیدواروں نے گزشتہ بھرتی عمل کے امتحان میں شمولیت کی تھی ۔ انہوں نے مزیدکہا کہ بدقسمتی سے موجودہ حکومت نے بھرتی عمل کو منسوخ کیاجس میں جموں کشمیر کے تمام خطوں کے لاکھوں امیدوارشریک ہوئے تھے۔سابق وزیر نے کہا کہ یہ حکومت کی ستم ظریفی ہے کہ اُسے ریزوبینک آف انڈیا کی نگرانی میں لئے گئے امتحان میں بھرتی عمل مکمل ہونے کے دو برس بعد’قانونی سقم‘ نظر آئے اور اُس نے اس بھرتی عمل کو منسوخ کیا۔ میر نے مانگ کی کہ اب انصاف کے تقاضوں کو پورا کرنے اور اپنی غلطیوں کو سدھارنے کیلئے  ،جموں کشمیربینک انتظامیہ کواُن امیدواروں کو مزیدرعایت دینی چاہیے جنہوں نے پہلے بھرتی عمل میں شمولیت کی تھی۔میر نے صلاح دی کہ پشتینی باشندہ ہونے کی اسناد ،جوجموں کشمیر کے باشندوں کے پاس موجود ہیں اورمائیگرنٹ کارڈکورہائشی ثبوت کے طور تسلیم کیا جانا چاہیے۔
 

بھارت چین تعطل | سنیچر کو کمانڈروںکی بات چیت ہوگی

یواین آئی
 
نئی دہلی// بھارت اور چین کے سینئر فوجی کمانڈر مشرقی لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن (ایل اے سی) پر تقریبا گزشتہ ایک ماہ سے جاری تناؤ کی صورت حال کے پیش نظر سنیچر کو ایک اہم میٹنگ کریں گے ۔فوجی ذرائع کے مطابق یہ میٹنگ لداخ میں چوشول مولڈو میں واقع بارڈر پرسنل میٹنگ پوائنٹ پر ہوگی جو اس طرح کی میٹنگوں کے لئے لداخ میں متعین دو مراکز میں سے ایک ہے ۔ میٹنگ میں ہندوستان کی نمائندگی لیہ میں واقع 14 ویں کور کے کمانڈر کریں گے جبکہ چین کی جانب سے ان کے ہم منصب فوجی افسر بات چیت کے لئے آئیں گے ۔منگل کو فوج کی تین ڈویژن کے سربراہ جو میجر جنرل رینک کے افسر ہیں ،انہوں نے اپنے چینی ہم منصب کے ساتھ اس مسئلہ پر بات چیت کی تھی لیکن یہ بات چیت بے نتیجہ رہی تھی۔ اس کے بعد سنیچر کو اعلی سطحی میٹنگ کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے منگل کو ایک ٹیلی ویژن چینل کے ساتھ بات چیت کے بعد ٹوئٹ کرکے کہا تھا کہ چین کے ساتھ ہندوستان کی بات چیت کا سلسلہ جاری ہے اس لئے میں کسی طرح کے شبہ کا اظہار نہیں کرنا چاہوں گا۔بات چیت کے ذریعہ اگر مسئلہ حل ہوجاتا ہے تو اس سے اچھی بات اور کیا ہوسکتی ہے ۔ ہندوستان کا سر کسی بھی صورت میں نہیں جھکے گا۔ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ یہ مسئلہ دونوں ممالک کے اپنے اپنے مفروضہ کی وجہ سے ہے جس سے سرحد کے سلسلے میں تنازعہ ہے اور دونوں ملکوں کے فوجی سرحد پر اچھی خاصی تعداد میں جمع ہیں۔سرحد کے سلسلے میں دونوں ممالک کے درمیان ایک نظام ہے کہ ایک دوسرے کے فوجی متنازعہ علاقے میں ڈیرا نہیں ڈالیں گے ۔ فوجی گشت کرنے آتے ہیں اورچلے جاتے ہیں۔دونوں جانب کے فوجیوں کے درمیان گزشتہ ایک مہینے کے اندر کم سے کم تین مرتبہ معمولی جھڑپ ہوچکی ہے جس سے تناؤ کی صورت حال برقرار ہے ۔دونوں ممالک کے درمیان حقیقی کنٹرول لائن کا الائنمنٹ چائنا کلیم لائن آف 1956 کے تحت قبول ہے ۔ ہندوستان اورچین کے درمیان 3488 کلومیٹر طویل سرحد ہے لیکن اس کا قطعی تعین نہیں ہے ۔
 

کالاکوٹ راجوری میں باپ بیٹے کی پنچایت میٹنگ میں رسوائی 

چہرے پرکالک پوت کرجوتوں کی مالا پہنا ئی گئی

سمت بھارگو
 
راجوری //راجوری کے کالاکوٹ علاقے میں ایک غیر انسانی فعل انجام دیتے ہوئے پنچایت میٹنگ کے دوران معمر شہری اور اس کے جوان بیٹے کی رسوائی کی گئی جس کی سماج کے ہر ایک طبقہ کی طرف سے پرزور مذمت کی جارہی ہے ۔ان دونوں کو میٹنگ میں رسواکرنے کرکے ان کے چہروں پر کالی سیاہی چھڑکی گئی اور بال مونڈنے کے ساتھ ساتھ انہیں جوتوں کی مالائیں پہناکر کئی کلو میٹر پیدل چلایاگیا۔یہ واقعہ سیالسوئی علاقے میں پیش آیاہے ۔متاثرہ شخص محمد بشیر اوراس کے جوان بیٹے امجدپرویزنے بتایاکہ 23مئی کو ایک مقامی ٹھیکیدار اجے سنگھ عرف بلو نے اس اراضی سے سڑک نکالنے کاکام شروع کیا جہاں قبرستان ہے جس پر بشیر کے بڑے بیٹے نے اعتراض کیا جس پر دونوں کے درمیان توتومیں میں ہوگئی ۔متاثرین نے بتایا’’27مئی کو مقامی سرپنچ محمد خان دیگر پنچایت ارکان کے ہمراہ ہمارے گھر آئے اور ہمیں بتایاکہ 28مئی کو اس مسئلے کو حل کرنے کیلئے پنچایت میٹنگ رکھی گئی ہے ‘‘۔انہوں نے بتایاکہ وہ دونوں (بشیر اور اس کا بیٹا)28مئی کو مقامی سکول میں رکھی گئی میٹنگ میں شریک ہوئے جس میں سات افراد بشمول مقامی ٹھیکیدار، مقامی سرپنچ، دو دیگر پنچایت ممبران نے ان کی رسوائی کی ۔تاہم اس دوران بشیر کا بڑا بیٹاوہاں سے بھاگ جانے میں کامیاب ہوا۔امجد پرویز نے بتایا’’مجھے اور میرے والد کو زبردستی ایک حجام کی دکان پر لیاگیاجہاں ہمارے سرمنڈواکر ہمارے چہروں پر سیاہ رنگ پھینکاگیااور پھر جوتوں کی مالاہمارے گلے میں ڈال کر ہمیں دو کلو میٹر پیدل چلایاگیا‘‘۔انہوں نے مزید بتایاکہ انہیں یہ دھمکی دی گئی کہ اگر اس سلسلے میں پولیس کیس درج کروایاگیاتو انہیں سنگین نتائج کاسامناکرناپڑے گاتاہم کسی نہ کسی طرح سے 31مئی کو انہوں نے پولیس تھانہ کالاکوٹ میں شکایت درج کروائی ۔امجد نے بتایاکہ ان کی صرف اور صرف غلطی یہ ہے کہ انہوں نے قبرستان سے سڑک نکالنے پراعتراض کیا ۔رابطہ کرنے پر ایس ایس پی راجوری چندن کوہلی نے کشمیر عظمیٰ کو بتایاکہ شکایت درج کروانے تک پولیس پنچایت میٹنگ سے بے خبر تھی ۔انہوں نے بتایاکہ امجد پرویز ولد بشیر احمد کی شکایت پرسات افراد کے خلاف کیس درج کیاگیاہے جن میں مقامی ٹھیکیدار اجے سنگھ ولد منشی سنگھ، سرپنچ محمد خان ولد نبی بخش، پنچ عبدالرشید ولد محمد دین، پنچ مکھن ولد منی،رنجیت سنگھ ولد چھتر سنگھ ، پشپندر سنگھ ولد جگدیش سنگھ اور سوارن سنگھ ولد جرنیل سنگھ ساکنان سیالسوئی شامل ہیں ۔ایس ایس پی کے مطابق اس سلسلے میں پولیس تھانہ کالاکوٹ میں ایف آئی آر زیر نمبر40/2020زیر دفعات 279, 341, 342, 323, 504, 506, 147, 500آئی پی سی کا کیس درج کیاگیاہے ۔ڈپٹی کمشنر راجوری محمد نذیر شیخ نے واقعہ کو افسوسناک قرا ردیتے ہوئے کہاکہ پولیس معاملے کی تحقیقات کررہی ہے اور ملزمان کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔
 

گجرات کے جیل میں قید نوجوان کی حالت خراب | وادی منتقل کرنے کا اہلخانہ کا مطالبہ

سرینگر//گجرات کی ایک جیل میں قید رعناواری کے ایک نوجوان کے اہلخانہ نے اُس کی فوری طور وادی منتقلی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جیل میں اُس کی حالت انتہائی خراب ہے۔سی این آئی خبررساں ایجنسی کے مطابق رعناواری کا بشیراحمد بابانامی یہ نوجوان ایک غیرسرکاری تنظیم کے ذریعے سال2010میں گجرات گیاتھا جہاں اُسے گجرات پولیس اور اے ٹی ایس نے گرفتار کرکے مختلف الزامات لگاکر جیل بھیج دیا۔ دس سال سے جیل میں بند بشیراحمدکے اہل خانہ نے اُس کی رہائی کیلئے ہردرپر دستک دی،لیکن مایوسی کے سوا انہیں کچھ حاصل نہ ہوا۔بشیراحمد کے اہل خانہ کے مطابق جیل میں اُسے مختلف بہانوں سے تنگ طلب کیاجارہا ہے۔اہل خانہ کے مطابق جیل میں بشیراحمد کوطبی سہولیات اوردیگر ضروریات سے محروم رکھاگیا ہے اور گجرات میں اس وقت درجہ حرارت40سے45ڈگری ہے اوراس شدت کی گرمی میں اسیر نوجوان کو ایک پنکھابھی فراہم نہیں کیا گیا ہے۔مذکورہ نوجوان کے اہل خانہ نے اُسے فوری طور کشمیرمنتقل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جیل میں اس کی صحت کافی بگڑ چکی ہے۔
 
 
 

منشیات مخالف مہم | سرینگر اور اونتی پورہ میں4افراد گرفتار

 
سرینگر // منشیات مخالف مہم کے دوران پولیس نے چار افراد کو گرفتار کرلیا ۔سرینگر پولیس نے ایس ار ٹی سی پل کے نزدیک ناکہ چیکنگ کے دوران فیروز احمد کھانڈے اور طاہر احمد کھانڈے نامی دوافراد کو گرفتار کرکے اُن کے قبضے سے 27 کوڈین بوتلیں برآمد کی گئیں ۔ سرینگرپولیس نے کرالہ کھڈ تھانہ میں اُن کے خلاف ایک کیس زیر ایف آئی ار نمبر19/2020درج کیا۔اونتی پورہ پولیس نے ٹول پلازہ کے نزدیک ناکہ چیکنگ کے دوران ایک سکوٹی زیر نمبر JK04D-8194 روک کر تلاشی لی اورسرینگر وبڈگام سے تعلق رکھنے والے دو افراد کوگرفتار کرکے اُن کے قبضے سے 400 گرام چرس بر آمد کیا گیا اور سکوٹی کو بھی ضبط کیا گیا ۔اس سلسلے میں اونتی پورہ تھانے میں کیس زیر ایف آئی آرنمبر0 74/202 درج کیا گیا۔
 
 
 

گنہ ون کنگن میں حادثہ

 
کنگن/غلام نبی رینہ/گنہ ون کنگن میں ایک ٹرک زیر نمبرJK02AB-0325 پلٹ کر رہائشی مکان کے ساتھ ٹکرایا جس کے نتیجے میں مکان میں موجود افراد خانہ اور ٹرک ڈرائیورو کنڈکٹر معجزاتی طور بچ گئے۔اس دوران گاڑی کو بھی نقصان پہنچا۔
 
 
 

الطاف بخاری کا اظہار رنج اپنی پارٹی کاکارکن فوت

 
سرینگر//جموں کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے پارٹی کارکن محمد مقبول بٹ ساکن نٹی پورہ کے انتقال پر رنج وغم کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے مرحوم کی مغفرت اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔پارٹی کے دیگر لیڈران نے بھی سوگوار کنبے سے یکجہتی کا اظہار کیا۔
 
 

بجبہاڑہ میں نامعلوم افراد نے سیب کے درخت کاٹ ڈالے

 

عارف بلوچ

 
اننت ناگ // بجہباڑہ کے مہند نامی گائوں میں دوران شب نامعلوم افراد نے عبدالرحمان بٹ ،عبدالرحیم راتھر اور عبدالرشید راتھر کے سیب کے50 درخت کاٹ ڈالے ہیں ،جس کے باعث مقامی آبادی میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ۔پولیس نے معاملہ درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے ۔
 
 
 

ممتاز عالم دین پروفیسر عبدالرحمان لدھیانوی کا انتقال

جمعیت اہلحدیث کا اظہار رنج وغم

سرینگر //اسلامی دنیا کے ممتاز عالم دین ، ماہر تعلیم ، جید اسکالر پروفیسر مولانا عبدالرحمن لدھیانوی لاہور میں داعی اجل کو لبیک کہہ گئے ۔ عالمی سطح کی اس عظیم علمی شخصیت کے انتقال پر عرب وعجم میں رنج وغم کا اظہار کیا جارہا ہے۔ جمعیت اہلحدیث کے صدر پروفیسر غلام محمد بٹ نے رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پروفیسر لدھیانوی ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے۔انہوں نے کہا کہ وہ ظلمتوں میں نور کی ایک قندیل لے کر ایستادہ تھے اور ساری زندگی قرآن وسنت کی ترویج واشاعت میں صرف کی۔موصوف تطہیر معاشرہ اور عقائد کی درستگی کیلئے ساری عمر مزاحمتوں کے باجودکمربستہ رہے۔تنظیم کے ناظم اعلیٰ ڈاکٹر عبداللطیف الکندی نے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ پروفیسر موصوف ایک تاریخ ، ایک ادارہ اور ایک انجمن تھے ۔اُن کی زندگی ملنساری ، شرافت ،صبر وایثار اور متانت سے عبارت تھی۔وہ نامور ماہر تعلیم اور پنجاب پاکستان میں مدتوں ڈائریکٹر کالجز رہے اوروفاق المدارس کے نگران کا فریضہ بھی انجام دیتے رہے ۔
 
 
 

 آغا حسن کا امام خمینیؒ کو برسی پر خراج عقیدت

سرینگر//انجمن شرعی شیعیان کے صدرآغا سید حسن نے ایران کے سپریم لیڈر امام خمینیؒ کو ان کی برسی پر خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے مرحوم کو مسلم امہ کیلئے دینی و سیاسی بیداری کا نقش راہ قرار دیا۔ ایک بیان میں آغا حسن نے کہا کہ امام خمینیؒ نے ایران پر مسلط شہنشاہی نظام کا خاتمہ کرکے وہاں اسلامی نظامی حکومت کا قیام عمل میں لاکر ایک درخشندہ باب کا اضافہ کیا ۔انہوں نے کہا کہ اگر چہ مغرب کی تمام استکباری قوتیں رضا شاہ پہلوی کی پشت پر تھیں لیکن امام خمینیؒ کے عزم و استقامت میں کوئی لغزش پیدا نہ کرسکیں۔ آغا حسن نے کہا کہ یہ امام خمینی کی قائدانہ صلاحیتوں اور قرآنی افکار و نظریات کی دین ہے کہ دشمن قوتوں کی 40 سالہ سازشوں ، کمر توڑ اقتصادی پابندیوں اور عسکری دھمکیوں کے باوجود ایرانی قوم ثابت قدم ہے۔ انہوں نے اتحاد بین المسلمین کیلئے امام خمینیؒ کی خدمات اور اقدامات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ اسلام و مسلمین کے خلاف جاری عالمی سازشوں کے پیش نظر اتحاد ملی کی حفاظت انتہائی ناگزیر ہے۔
 

تازہ ترین