بڈگام کے سینئر ڈاکٹر کی فورسزکے ہاتھوں پٹائی | معاملے کی تحقیقات کرنے کی اعلیٰ حکام کی یقین دہانی

تاریخ    4 جون 2020 (00 : 03 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //بڈگام ضلع میں کورونا وائرس اور دیگر وبائی بیماریوں پر نظر گزر رکھنے والے سینئر ڈاکٹر مظفر بدھ کو سی آر پی ایف کی مارپیٹ سے اسوقت زخمی ہوگئے جب وہ چاڈورہ سے بڈگام جانے کیلئے سرکاری گاڑی میں سوار تھے۔ ڈاکٹر مظفر نے بتایا کہ جب وہ بڈگام کی طرف جانے لگے تو سی آر پی ایف اہلکاروں نے انکی گاڑی کو آگے جانے کی اجازت نہیں دی اور سوال کرنے پر شدید مارپیٹ کردی ۔ ادھر چیف میڈیکل آفیسر بڈگام نے یہ معاملہ  پولیس و سول انتظامیہ کے اعلیٰ افسران کے ساتھ اٹھایا ہے اور مذکورہ اہلکاروں کے  خلاف کیس درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ بڈگام ضلع میں کورونا وائرس مخالف مہم کی سربراہی کرنے والے ڈاکٹروں میں سے انتہائی اہم اور وبائی بیماریوں کے ماہر ڈاکٹر مظفر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا’’ میں بڈگام اپنے دفتر جانے کیلئے جوں ہی چاڈورہ چوک پہنچا تو وہاں تعینات سی آر پی ایف اہلکاروں نے بڈگام جانے کی اجازت نہیں دی ‘‘۔ ڈاکٹر مظفر نے بتایا ’’ میں نے اپنی شناخت ظاہر کرنے کیلئے شناختی کارڈ اور ضلع انتظامیہ کی جانب سے جاری کیا گیا کرفیو پاس دکھایا‘‘۔ ڈاکٹر مظفر نے بتایا ’’ شناخت ظاہر کرنے کے بعد سی آر پی ایف اہلکاروں نے چاڈورہ سے  بڈگام جانے کی اجازت دینے سے انکار کیا اور سرینگر سے بڈگام جانے کی ہدایت دی‘‘۔ڈاکٹر مظفر نے بتایا کہ جب میں نے سی آر پی ایف اہلکاروں سے وجہ پوچھی تو وہ مارپیٹ کرنے لگے‘‘۔ڈاکٹر مظفر نے بتایا ’’ سی آر پی ایف اہلکاروں نے ٹانگوں پرڈنڈے مارے جسکی وجہ سے میری ٹانگوں کو چوٹیں آئیں‘‘۔ڈاکٹر مظفر نے بتایا ’’ زخموں کا علاج کرنے کیلئے مجھے ضلع اسپتال بڈگام میں داخلہ لینا پڑا ‘‘۔چیف میڈیکل آفیسر بڈگام ڈاکٹر تجمل حسین نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ڈاکٹر مظفر کو دفتر آنے کی سزا دی گئی ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ بڈگام ضلع میں کورونا وائرس  مخالف لڑائی میں وہ بہت کلیدی رول ادا کررہے ہیں اور اسلئے ضلع انتظامیہ بڈگام نے ہمیں سفری اجازت نامے دیئے ہیں‘‘۔ڈاکٹر تجمل نے کہا ’’بدھ کی صبح چاڈورہ میں اُن کے ساتھ مارپیٹ کی گئی جسکی وجہ سے وہ زخمی ہوئے ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا’’ ہم نے یہ معاملہ ڈی سی بڈگام، ایس ایس پی بڈگام،ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر اور پولیس و سی آر پی ایف کے اعلیٰ حکام کے ساتھ اٹھایا ہے‘‘۔ ڈاکٹر تجمل نے بتایا ’’ موجودہ وبائی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹروں نے ڈی سی بڈگام، ایس ایس پی بڈگام اور چیف میڈیکل آفیسر کی یقین دہانی پر ہڑتال پر نہ جانے کا فیصلہ کیا ہے‘‘۔
 

تازہ ترین