لالپورہ کنزرمیں آبپاشی سہولیات کا فقدان

تاریخ    4 جون 2020 (00 : 03 AM)   


مشتاق الحسن
 ٹنگمرگ// لالپورہ کنزر میں آبپاشی سہولیات دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے زمینداروں میں تشویش پائی جارہی ہے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ چار سال قبل نالہ فیروزپورہ میں طغیانی آنے سے آرہ پھت کوہل پوری طرح تباہ ہوگئی جس کے بعد لالپورہ کی ہزاروں کنال زمین آبپاشی سہولیات دستیاب نہ ہونی کی وجہ سے بنجر میں تبدیل ہوگئی ہے ۔مقامی زمینداروں کا کہنا ہے کہ انہوںنے آبپاشی کوہل کی از سر نو تعمیر وتجدید کیلئے ارباب اقتدارکو کئی بار آگاہ کیا لیکن کوئی توجہ نہیں دی گئی ۔ضلع ترقیاتی کمشنر بارہمولہ ڈاکٹر جی این ایتو کی ہدایت پر سپرانٹنڈنگ انجینئرہائڈرالک اور ایس ڈی ایم گلمرگ نے آرہ پھت کوہل کا جائزہ لیا اور دونوں افسران نے ڈپٹی کمشنر بارہمولہ کو مکمل رپورٹ پیش کی لیکن صورتحال ہنوز جوں کی توں ہے۔یہی وجہ ہے کہ گزشتہ چار سال سے ہزاروں کنال اراضی بنجر بنی ہے۔مقامی لوگوں کے مطابق اگر صورتحال یہی رہی تو مستقبل قریب میں انہیں سرکاری راشن گھاٹوں پر ہی اکتفا کرنا پڑے گا۔
 

تازہ ترین