تازہ ترین

وزیراعظم کے بیانات تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش:اکبر لون

جموں کشمیرکی خصوصی پوزیشن کاخاتمہ مرکزی حکومت کی بڑی غلطی

تاریخ    3 جون 2020 (00 : 03 AM)   


سرینگر// نیشنل کانفرنس نے وزیر اعظم پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ نریند مودی حقیقت و،صداقت پر مبنی اور تاریخی دستاویزات سے ہٹ کر اپنے بیانات سے تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ پارٹی کے سینئر لیڈر اور پارلیمنٹ ممبر محمد اکبر لون نے جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن کے خاتمے کو مودی سرکاری کی تاریخی غلطی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ یہ عمل ہندوستان کی جمہوریت پر ایک کاری ضرب ہے اور جمہوریت کے جڑوں کو اکھاڑنے کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن کو ختم کرنے کے مودی سرکار کے فیصلے کو جموں کشمیر کے تینوں خطوں نے مسترد کیا۔انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کا اختیار نا ہی صدر ہند اور ناہی کسی اور کو تھا،جبکہ آئین ہند کے مطابق بھی یہ فیصلہ بالکل غیر جمہوری اور غیر آئینی تھا۔ ایڈوکیٹ محمد اکبر لون نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر میں35اے یا دفعہ370 کو ختم کرنے کا اختیار صرف جموں کشمیر کی ریاستی اسمبلی کو تھا۔ لون نے کہا ،’’ افسوس اس بات کا ہے کہ ان دفعات کے خاتمے کو لوک سبھا اور راجیہ سبھا کے ممبران نے منظوری دی،جن کی سردار پٹیل اور دیگر رہنمائوں کی موجودگی میں پارلیمنٹ نے منظوری دی تھی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ مرکز نے جموں کشمیر کو تقسیم کرکے دو مرکزی زیر انتظام والی اکائیوں میں تبدیل کرکے آئینی اور جمہوری حقوق سے محروم کیا۔پارلیمنٹ ممبر نے کہا کہ جموں کشمیر میں مسلم اکثریتی کردار کو ختم کرنے کیلئے آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے،تاہم جموں کشمیر کے تینوں خطوں کے لوگوں کو یہ ہرگز تسلیم نہیں ہے۔ محمد اکبر لون نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر کو طاقت کے بل پر تقسیم کیا گیا اور5اگست کو جموں کشمیر کے لوگوں کو جیلوں اور گھروں میں نظر بند رکھا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس مرکزی فیصلے کی نہ صرف اقوام عالم بلکہ بھارت کے سابق وزرائے اعظم،واجپائی دور کے وزراء اور امن پسند لیڈروں نے مذمت کی۔ نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر کا کہنا تھا کہ جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن کی بحالی ہر حالت میں دہلی کے لیڈروں کے علاوہ ہندوستان کی بقاء کیلئے خوش آئندہ قدم ہوگا۔ انہوں نے جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن کی بحالی کا مطالبہ کرتے ہوئے فوری طور پر محاصروں  کے خاتمے اور سیاسی لیڈروں کی رہائی پرزوردیا۔
 

تازہ ترین