جاسوسی کے الزام میں2پاکستانی سفارتی اہلکار ملک بدر

اسلام آباد کا شدید احتجاج،نئی دہلی کے سینئرسفارتکاردفتر خارجہ طلب

تاریخ    2 جون 2020 (00 : 03 AM)   


سرینگر // بھارت نے نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمیشن کے دو سفارتی اہلکاروں کوجاسوسی کے الزام میں 24 گھنٹے کے اندر ملک چھوڑنے کا حکم دیا  ہے۔ادھرپاکستان نے بھارت میں پاکستانی ہائی کمیشن کے دو سفارتی اہلکاروں کو ناپسندیدہ قرار دینے کی شدید مذمت کرتے ہوئے بھارتی سفارتخانے کے امور کی نگرانی کرنے والے عہدیدار کو طلب کرلیا۔بھارتی وزارت خارجہ کے بیان میں کہا گیا کہ انہیںبھارتی قانون نافذ کرنے والے حکام نے جاسوسی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر پکڑا ۔ ان اہلکاروں پر ایک مقامی شخص سے بھارتی سیکورٹی اداروں سے متعلق دستاویزات لینے کا الزام ہے۔ حکومت نے دونوں پاکستانی سفارتی اہلکاروں کو ناپسندیدہ قرار دیا ہے جوسفارتی آداب کے خلاف کارروائیوں میں ملوث تھے۔علاوہ ازیں بھارتی پریس ریلیز میں کہا گیا کہ پاکستانی ہائی کمیشن سے بھارت کی قومی سلامتی کے خلاف ان عہدیداروں کی سرگرمیوں کے سلسلے میں سخت احتجاج بھی درج کرایا گیا۔انہوں نے کہا کہ متعلقہ ذمہ داران سے کہا گیا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ سفارتی مشن کا کوئی بھی رکن بھارت میں غیرمجاز سرگرمیوں میں ملوث نہ ہو یا ان کی سفارتی حیثیت سے متضاد انداز میں برتاؤ نہ کرے۔ادھرپاکستان نے بھارت میں پاکستانی ہائی کمیشن کے دو سفارتی اہلکاروں کو ناپسندیدہ قرار دینے کی شدید مذمت کی ہے۔
 

تازہ ترین