تازہ ترین

شاہ محمود قریشی کا اقوام متحدہ کے سربراہ کو فون

کشمیرمیں اقامتی قانون کی تبدیلی پر تشویش سے باخبر کیا

24 مئی 2020 (00 : 03 AM)   
(      )

اسلام آباد//پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیوگٹرس کوٹیلی فون کرکے بھارت کی طرف سے جموں کشمیرمیں اقامتی قانون تبدیل کرنے کے فیصلے پراپنی تشویش سے آگاہ کیا۔اقامتی ضوابط کے تحت وہ تمام افراداوران کے بچے جوجموں کشمیرمیں15سال سے رہ رہے ہیں یا جنہوں نے یہاں کے کسی تعلیمی ادارے میںسات سال تعلیم حاصل کی یامیٹرک یابارہویںکے امتحان میں شمولیت کی ،اقامتی حقوق پانے کے مستحق ہوں گے۔پاکستانی وزارت خارجہ کے مطابق قریشی نے اقوام متحدہ کے سربراہ کوکشمیرکی تازہ ترین صورتحال سے باخبرکیا۔پاک وزیرخارجہ نے کشمیرمیں حالیہ اقامتی قانون کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ چوتھے جنیواکنونشن، بین الاقوامی قوانین اورسلامتی کونسل کی قراردادوں کے منافی ہے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ بھارت کوئی جنگی کارروائی بھی کرسکتا ہے ۔ پاک وزیرخارجہ نے کہا کہ پاکستان  اقوام متحدہ کے فوجی مبصروں کے گروپ کو’جنگجوئوں کے لانچنگ پیڈوں ‘کی حقیقت جاننے کیلئے اجازت دینے کیلئے تیار ہے اگر بھارت کوئی خاص ثبوت فراہم کرے گا۔قریشی نے کہا کہ اقوام متحدہ کوکشمیر کی صورتحال کومزیدابتر ہونے سے بچانے کیلئے اپنارول اداکرناچاہیے اور بھارت کو اپنی غیرقانونی کارروائیوں سے روکنا چاہیے تاکہ جنوبی ایشیاء میں امن اورسلامتی کی فضامکدر نہ ہو۔