۔ 3نوجوانوں پرسیفٹی ایکٹ کالعدم

بانڈی پورہ //گنائی محلہ کلوسہ کے تین غریب نوجوانوں پر عائدپبلک سیفٹی ایکٹ کو ریاستی ہائی کورٹ نے کالعدم قرار دیاہے ۔یہ تینوں نوجوان  ہیرا نگر جیل میں ہیں۔ ہائیکورٹ کے سینئر ایڈووکیٹ بشیر احمد ٹاک نے فاروق احمد گنائی، سجاد احمد گنائی اور بلال احمد گنائی ساکن کلوسہ  پر اکتوبر میں لگائے گئے سیفٹی ایکٹ کو کالعدم کرنے کے لئے ہائی کورٹ میں عرضی داخل کی تھی۔دلال پیش کرتے ہوئے ایڈوکیٹ ٹاک نے عدالت کو بتایا کہ تینوں نوجوان کانگڑیاں بناتے ہیں،اور انکا تعلق غریب گھرانوں سے ہے۔ تینوں ان پڑھ مزدور ہیں لیکن بانڈی پورہ پولیس نے من گھڑت الزامات کے ذریعے گرفتار کرکے اکتوبر 2018میں سیفٹی ایکٹ عائد کرکے ہیرا نگر جموں جیل بھیج دیا۔ ایڈوکیٹ ٹاک نے کہا کہ تینوں نوجوانوں پر بے بنیاد اور غلط الزام لگایا گیا ہے کہ آرہ گام بانڈی پورہ میں انہوں نے پتھرائو کیا تھا ۔عدالت نے دلائل سے اتفاق کرتے ہوئے  19اپریل کو بلال احمد گنائی کا سیفٹی ایکٹ کالعدم کیا جبکہ فاروق احمد گنائی  اورسجاد احمد گنائی پر سیفٹی ایکٹ پہلے ہی کالعدم قرار دیا گیا تھا۔