یونیورسٹی میں سمینار ’بہتری کیلئے توازن‘

سرینگر//عالمی یوم خواتین کے سلسلے میں کشمیر یونیورسٹی میں یک روزہ سمینار’بیلنس فار بیٹر‘منعقد ہوا۔ سینٹرفار وومن اسٹیڈیزاینڈریسرچ کے اہتمام سے منعقدہ اس سمینار کی صدارت یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسرطلعت احمد نے کی ۔ا س موقعہ پرانہوں نے کہا کہ خواتین سے متعلق کورس کسی بھی تعلیمی ادارے کیلئے لازمی ہیں کیونکہ خواتین کو کسی طرح کا بھی فائدہ پہنچانا سماج کے فائدے کیلئے ہی ہے ۔خواتین کوبااختیار بنانے کیلئے یونیورسٹی کے رول کی ستائش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی نے خواتین کیلئے متعددمواقع پیدا کئے ہیں ۔ یونیورسٹی اُن خواتین کیلئے بھی کام کرتی ہیں جنہیں یونیورسٹی تک رسائی حاصل نہیں ہے ۔انہوں نے یقین دلایا کہ وہ وومنزاسٹیڈیزاینڈ ریسرچ سینٹر کو بہتر بنانے کیلئے تمام سفارشات کوعملی جامہ پہنائیں گے۔ سابق وجی لینس کمشنر اور ریٹائرڈ سیشن جج غوث النساء جو اس موقعہ پر مہمان ذی وقار کے طور موجودتھیں نے اپنے کلیدی خطبے میں کہا کہ خواتین کو ہر جگہ چیلنجوں کا سامنا ہے اور جنسی عدم مساوات ہمارے سماج کے ذہن میں لاشعوری طور پیوستہ ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے سماج میں ایک مخصوص ذہن کام کررہا ہے کہ مرد کمائی کرتا ہے اور عورت گھر سنبھالتی ہے جبکہ مالی آزادی ہی خواتین کو بااختیار بناتی ہے اور ہمارے سماج کے ذہن کو بدلنے کیلئے بہت کچھ کرنا ہے ۔ڈین کالج ڈیولپمنٹ کونسل پروفیسرنیلوفرخان جواس موقعہ پر مہمان خصوصی تھیں نے کہا کہ جب سے یونیورسٹی میں وومنزاسٹیڈیزسینٹر کاقیام عمل میں لایا گیا وائس چانسلر نے اس کا بھر پور ساتھ دیا۔ انہوں نے کہا کہ سینٹر خواتین کی بہتری کیلئے تندہی سے کام کررہا ہے ۔