یخ بستہ ہوائیں اور منجمد نل

سرینگر // یخ بستہ ہوائوں کے چلتے شہر میںصبح کے وقت پانی کے نل جم جانے کے نتیجے میں لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔گذشتہ دنوں کی طرح منگل کی صبح بھی شہر کے متعدد علاقوں میں درجہ حرارت کے نقطہ انجماد سے نیچے درج کیا گیا جس کے بعد شہر کے متعدد علاقوں میں پانی کے نل جم گئے جس سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ جمعہ اور سنیچر کی درمیانی رات کو وادی اور شہر سرینگر میں ہوئی برف باری کے بعد اب سرد ہوائوں اوربرف جم جانے سے صبح کے وقت پانی کے نل منجمد ہوگئے ہیں جس کی وجہ سے صبح کے وقت پانی کی بوندھ بوندھ کیلئے ترسنا پڑتا ہے۔پائین شہر کے گوجوارہ ، راجوری کدل ، رعناواری ، حول اور نواکدل علاقوں میں لوگوں کا کہنا ہے کہ صبح کے وقت انہیں نلوں کے پاس آگ جلانی پڑتی ہے، تب جاکے پانی کی سپلائی بحال ہوتی ہے۔ اسی طرح رامباغ، مہجور نگر، نٹی پورہ اورچھانہ پورہ کے لوگوں نے بتایا کہ نل جم جانے کی وجہ سے پانی کی سپلائی متاثر ہیں۔محکمہ پی ایچ ای کا کہنا ہے کہ گھروں میں جم جانے والے نلوں سے پانی بحال کرنا اُن کے بس سے باہر ہے۔ادھر محکمہ موسمیات کے مطابق آنے والے دنوں کے دوران موسم خشک رہے گا تاہم درجہ حرارت مزید گر جائے گا اور وادی کے لوگوں کو شدید سردی کا سامنا کرناپڑے گا۔ اس دوران جھیل ڈل اور دوسری آبی پناہگاہیں منجمند ہو گئیں۔