کے شوپیان، پلوامہ اور بارہمولہ میں بیک وقت چھاپے۔NIA

شوپیان+پلوامہ +بارہمولہ// قومی تحقیقاتی ایجنسی ( این آئی اے ) نے بدھ علی الصبح شوپیان، پلوامہ اور پٹن بارہمولہ میں بیک وقت چھاپے مارے اور جماعت اسلامی کارکنوں اور سابق ضلع صدور کے گھروں کی تلاشیاں لیں۔ایجنسی نے 2سابق ضلع صدور سمیت 8کارکنان کو پونچھ تاچھ کیلئے اپنے ساتھ لیا، تاہم بعد میں انہیں جانے دیا گیا۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ ایجنسی جماعت اسلامی کے بانی مرحوم مولانا احرار کے بیٹے محمد شفیع احرار کی تلاش میں تھی، جو 3ماہ قبل فوت ہوئے ہیں۔ این آئی اے نے بدھ کی صبح پلوامہ ، شوپیان اور بارہمولہ کے کئی علاقوں میں چھاپے ڈالے ۔ تحقیقاتی ایجنسی نے بارہمولہ کے پٹن علاقے کے آرم محلہ میں سابق صدر ضلع جماعت اسلامی عبدالغنی وانی اور پیر تنویرکے گھروں پر چھاپے مارے جبکہ پلوامہ کے نائینہ سنگم، پنگلنہ اور گوسو کے علاوہ شوپیان کے زینہ پورہ علاقے میں بھی چھاپے مارے گئے۔معلوم ہوا ہے کہ بونہ گام شوپیان میں این آئی اے مرحوم مولانا احرار کے بڑے بیٹے محمد شفیع احرار کی تلاش میں تھے۔ صبح کے 5بجے این آئی اے نے سی آر پی ایف 178بٹالین اور پولیس کے ہمراہ چھاپہ مارا اور محمد شفیع کے بارے میں پوچھ تاچھ کی۔ ایجنسی کو یہ معلوم ہی نہیں تھا کہ وہ 3ماہ قبل جموں میں انتقال کر چکے ہیں۔ ایجنسی نے اہل خانہ سے انکی قبر اور اموات سرٹیفکیٹ پیش کرنے کیلئے کہا۔ایجنسی اہلکار 4گھنٹے تک انکے گھر میں موجود رہے۔ این آئی اے نے ترکہ وانگام، مولو چتراگام، ڈی کے پورہ علاقوں میں جماعت اسلامی سے وابستہ کارکنوں کے گھروں پر بھی چھاپے مارے۔عبدالحمید شاہ ولد عبدالغنی ساکن ترکہ وانگام،شہزادہ اورنگ زیب ولد مرحوم حکیم غلام نبی ساکن مولو چترگام اورمحمد اشرف چہلا ولد غلام محمد ساکن ڈی کے پورہ کے گھروں کی تلاشیاں لیں۔بعد میں این آئی اے نے محمد اشرف چہلا، بلال احمد چہلا، محمد امین بٹ، عبدالحمید شاہ اور طفیل احمد شاہ ساکنان ترکہ وانگام کو اپنے ساتھ لیا ۔ انکی پوچھ تاچھ کی گئی تاہم شام دیر گئے انہیں جانے دیا گیا۔ پلوامہ میںچھاپوں کے دوران عبدالاحد بٹ،تنویر احمد بٹ اور جماعت اسلامی کے سابق صدر ضلع پلوامہ غلام قادر وانی  کو بھی پوچھ تاچھ کیلئے اپنے ساتھ لیا گیا۔