کیرن سیکٹر میں ایل او سی پر شدید گولہ باری کا تبادلہ

کپوارہ //سرحدی ضلع کپوارہ میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے دوران آ رپا ر گولہ باری کی وجہ سے جگٹیال ہلمت پورہ علاقہ میں ایک شل گرنے کی وجہ سے ایک مکان کو نقصان پہنچنا۔گولہ باری کے ساتھ ہی ضلع میں انٹر نیٹ سروس کو معطل کیا گیا ۔ جمعہ کی دوپہر حد متارکہ پر واقع کیرن سیکٹر میں ہندو پاک افواج نے دوسرے کے ٹھکانو ں پر شدید گولہ باری کی ۔ دوپہر کو پنزگام کرالہ پورہ کے فوجی کیمپ سے اچانک توپوں کے دھانے کھول دیئے گئے جس کے بعد پنزگام سے اس پار کی جانب مارٹر شلنگ ہوئی ۔کیرن سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے ساتھ سے پنزگام اور ملک پورہ رامحال علاقوں میں فوجی کیمپوں سے تو پو ں کا رخ  اس پار کیا گیا اور شدید گولہ باری کی گئی ۔ضلع کے پنزگام ،راوت پورہ پٹہ پورہ ،چوکی بل ،میلیال ،فرکن،ٹھنڈی پورہ ،درد پورہ ،سونتی پورہ ،مقام ،منزگام ،ملک پورہ ،ہفرڈہ ،کرالہ پورہ ،گزریال ،ریشی گنڈ ،وارسن ،ہرے ،دردسن ،شولورہ اور دیگر علاقوں کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ گولہ باری اس قدر خوف ناک تھی کہ وہ اپنے ہی گھرو ں میں سہم کر رہ گئے۔ ہایہامہ کپوارہ میں شدید گولہ باری ہوئی جس کے نتیجے میں ایک گولہ جگتیال ہلمت پورہ میں شیراز احمد خان کے مکان پر گرا۔بتایا جاتا ہے گولہ لگنے کی وجہ سے شیراز کے مکان کے نقصان پہنچا اور شیراز کی بزرگ ماں بے ہوش ہوگئی ۔گولہ باری کے ساتھ ہی ضلع کے کپوارہ ،کرالہ پورہ ،لولاب ،ترہگام اور رامحال علاقوں میں انٹر نیٹ سروس معطل کی گئی اور دو گھنٹے بعد بحال ہوئی۔