کلن گنڈ کا وسیع علاقہ پینے کے صاف پانی سے محروم

کنگن//کلن گنڈ میں30لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کیاگیا فلٹریشن پلانٹ مکمل ہونے کے باوجودبھی عوام کے نام وقف نہیں کیا جارہاہے جس کی وجہ سے ایک وسیع علاقہ پینے کے صاف پانی سے محروم ہے۔ 2015میں تباہ کن سیلاب کے بعدیہ فلٹریشن پلانٹ تباہ ہوگیا تھا جس کے بعد علاقے کی آبادی کو پینے کے صاف پانی سے محروم ہونا پڑا تھا جس کے بعد نبارڈ کے تحت30لاکھ روپے کی لاگت سے نئے فلٹریشن پلانٹ پرکام شروع کیاگیا ۔مقامی لوگوں کے مطابق اگرچہ فلٹریشن پلانٹ مکمل کیاگیاہے لیکن ابھی تک اس پلانٹ سے لوگوں کو پینے کا صاف پانی فراہم نہیں کیاگیا جس کی وجہ سے لوگوں کو ناصاف پانی استعمال کرناپڑتا ہے۔ مقامی لوگوں نے گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ فلٹریشن پلانٹ کو استعمال میں لایاجائے تاکہ ایک وسیع آبادی کوپینے کا صاف پانی دستیاب ہوسکے۔ اسسٹنٹ ایگزیکٹیو انجینئر پی ایچ ای سب ڈویژن کنگن افراز احمد نے بتایا کہ فلٹریشن پلانٹ کو مکمل کیاگیاہے لیکن ابھی محکمہ کو سپرد نہیں کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جس ٹھیکیدار نے اس پلانٹ کو تعمیر کیا ہے ،اُسے پیسے واگزار نہیں ہوئے ہیں۔