کشتواڑ کیلئے ہوائی سفر سہولت

جموں //جموں کشمیر نے آج فوج کے ساتھ کشتواڑ میں ہوائی پٹی کو ترقی دینے اور اسے چالو کرنے کیلئے ایک معاہدے پر دستخط کئے ۔ برگیڈئیر بکرم بھان کمانڈر ، 9 سیکٹر آر آر اور کمشنر شہری ہوا بازی ایس کٹوچ نے لیفٹینٹ گورنر منوج سنہا اور وزیر اعظم کے دفتر میں وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ( ویڈیو کانفرنسنگ ) کی موجودگی میں یہاں راج بھون میں معاہدے پر دستخط کئے ۔ اس موقعہ پر چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم ، لفٹینٹ گورنر کے پرنسپل سیکرٹری ، صوبائی کمشنر جموں ، سیکرٹری محکمہ شہری ہوا بازی حکومت ہند ، سیکرٹری محکمہ قانون ، انصاف اور پارلیمانی امور موجود تھے ۔ لیفٹینٹ جنرل وائی کے جوشی جی او سی نادرن شمالی کمان، لیفٹینٹ جنرل ہرشا گپتا جی او سی 16 کارپس ، کرنل رجنیش گیری اور کرنل اے کے پنور نے بھارتیہ فوج کی نمائندگی کی ۔ لیفٹینٹ گورنر نے کہا کہ ہوائی پٹی سے ضلع کشتواڑ کو ہوائی سفر کیلئے رابطہ فراہم ہو گا جس سے فوجی عملے اور شہری استفادہ کر سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ نامساعد موسمی حالات ، طبی اور دیگر ہنگامی صورتحال میں یہ ہوائی پٹی سود مند ثابت ہو گی ۔اس کے علاوہ اس سے خطے کی معاشی و معاشرتی ترقی کو فروغ حاصل ہو گا ۔ واضح رہے کہ ائیر سٹرپ کو چالو کرنے کا معاملہ 2018 سے التوا میں پڑا تھا ۔ لفٹینٹ گورنر نے کشتواڑ میںہوائی پٹی کو ترقی دینے کے فوائد کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ پروجیکٹ کا مقصد ضلع کشتواڑ کے ڈھائی لاکھ لوگوں کو مستفید کرنا ہے ۔ لفٹینٹ گورنر نے کہا کہ اس ہوائی پٹی کو فروغ دینے اور چالو کرنے سے سیاحوں کو بہتر اور تیز رفتار ٹرانسپورٹ سہولت بہم رہے گی جس سے  خطے میںسیاحوں کی آمد میں اضافہ ہو گا اور ضلع کے لوگوں کی فی کس آمدن میں اضافہ ہو گا ۔ مریضوں کو فوری طور جموں میں جدید سہولیات سے آراستہ ہسپتالوں میں منتقل کرنے سے صحت اشاریات میں بہتری آئے گی اور شرح اموات میں بھی کمی واقع ہو گی۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ نومبر 2017میں یو ڈی اے این ( اُڑے دیش کا عام ناگرک) مرحلہ اول ریجنل رابطہ سکیم حکومت ہند نے شروع کی تھی جس کا مقصد چھوٹے شہروں میں کم آمدورفت والے ہوائی اڈوں کو چالو کرنے اور ہوائی سفر کرایہ میں رعایت دے کر زیادہ سے زیادہ لوگوں کو بذریعہ ہوائی جہاز سفر کرنے کے مقصد سے شروع کیا گیا تھا اور 24 دیگر اضلاع میں یو ٹی کا ضلع کشتواڑ بھی شامل کیا گیا تھا ۔