کرناہ میں شبانہ گولہ باری

کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے کرناہ سیکٹرمیں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے دوران گولہ بار ی سے 5 رہائشی مکانو ں اور ایک مسجد شریف کو  جزوی نقصان پہنچا ۔ فوج کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بدھ کی شام جب ٹاڈ، دھنی اور سعد پورہ اور حاجیترا میں مساجد میں ازٓنیں دی جارہی تھیں تو اسی دوران پاکستان نے ان دیہات پر گولہ باری شروع کردی، جو لائن آف کنٹرول کے بالکل نزدیک ہیں۔پاکستانی فوج نے اندھا دھند طریقے سے گولے برسائے جو رہائشی مکانوں کے آس پاس جا گرے جس سے پوری آبادی سہم کر رہ گئی۔بیان مین کہا گیا ہے کہ رات دیر گئے کئی گولے کرناہ کے متعدد علاقوں میں جا گرے جس کے نتیجے میں 5 رہائشی مکانو ں اور ایک مسجد شریف کو جزوی نقصان پہنچا۔ جنکے مکانوں کو نقصان پہنچا ان میں خلیل الرحمان ،نذیر احمد تنولی ،ظہیر احمد تنولی ،نثار احمد تنولی اورامیتاز احمد تنولی ساکنان سعد پورہ شامل ہیں۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے 17سال بعد اس علاقہ میں دونوں ملکو ں کے افواج کے درمیان گولہ باری ہوئی ۔