ڈاکٹر جگموہن سنگھ کی کتاب کا اجراء

 ڈوڈہ //شہنشاہ پیلس سرینگر میں گاؤں کڈدھار (دھندل) تحصیل کاستی گڑھ، ضلع ڈوڈہ (وادی چناب) سے تعلق رکھنے والے نوجوان محقق ڈاکٹر جگ موہن سنگھ کی کتاب ’’وحشی سعید کی فکشن نگاری: معاصرین کے ساتھ تقابل وتجزیہ‘‘ کی رسم رونمائی ادارہ نگینہ انٹرنیشنل کے بینر تلے انجام دی گئی۔ اس موقع پر سابق جسٹس بشیر احمد کرمانی، نور شاہ، خالد حسین، پروفیسر قدوس جاوید، رفیق راز، شیخ بشیراحمد، ڈاکٹر کوثر رسول، پرویز مانوس، ڈاکٹر مشتاق حیدری، ڈاکٹر ریاض توحیدی، پروفیسر ناصر مرزا، سلیم سالک، ڈاکٹر شاہ فیصل، ڈاکٹر نیلوفر ناز نحوی وغیرہ جموں کشمیر کے ممتاز قلمکاروں، ریسرچ اسکالروں اور طلباء و طالبات نے شرکت کی. اس تقریب میں ادارہ نگینہ کی جانب سے ڈاکٹر جگ موہن سنگھ کو بہترین تحقیقی و تنقیدی کتاب اور دیگر ادبی خدمات کے اعتراف میں ’’نگینہ انٹرنیشنل ایوارڈ 2021ء ‘‘سے نوازاگیا۔ڈاکٹر جگ موہن نے اپنی کتاب میں وحشی سعید شخصیت، ناول نگاری، افسانہ نگاری اور اداریہ نگاری کے علاوہ وحشی سعید کی فکشن نگاری کا تقابلی جائزہ جموں و کشمیر کے معاصر اردو فکشن نگاروں کے ناولوں اور افسانوں کے ساتھ پیش کیا ہے۔ یہ کتاب اپنی نوعیت کی ایک منفرداور دستاویزی حیثیت کی حامل ہے۔ تحقیقی و تنقیدی اعتبار سے یہ کتاب جموں و کشمیر میں اردو فکشن نگاری کی تاریخ میں اضافہ کی حیثیت رکھتی ہے۔زیر بحث کتاب کی اشاعت پر رسم رونمائی کی تقریب میں موجود تمام ادیبوں، شاعروں اور قلمکاروں نے ڈاکٹر جگ موہن سنگھ کو دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کی اور امید ظاہر کی کہ وہ آئندہ اس طرح کی تحقیقی و تنقیدی تحریریں سامنے لا کر اردو تحقیق و تنقید میں اضافہ کرتے رہیں۔