پھلوں کے ٹرکوں کی آمدورفت کیلئے ایڈوائزری جاری شناخت کیلئے گاڑیوں کی ونڈ سکرین پر سیب کا سٹیکر لگانے کا فیصلہ

اشفاق سعید

سرینگر//کشمیر میں ٹریفک پولیس نے پیر کو اپنے اہلکاروں اور پھلوں کے ڈیلروں کے لیے رہنما خطوط جاری کئے تاکہ سیب سے لدے ٹرکوں کی آسانی اور پریشانی سے پاک نقل و حرکت کو یقینی بنایا جا سکے۔ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ تفصیلی بات چیت کے بعد، انسپکٹر جنرل آف پولیس، ٹریفک وکرمجیت سنگھ نے تمام ایس ایس پیز کو ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت دی تاکہ پھلوں سے لدے ٹرکوں کو ہموار راستہ فراہم کیا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ شاہراہ پر جموں جانے والی گاڑیوں کو اضافی وقت دیا جا سکتا ہے تاکہ پھنسے ہوئے پھلوں سے لدے ٹرکوں کی کلیئرنس کو یقینی بنایا جا سکے۔آئی جی پی نے یہ بھی یقین دہانی کرائی کہ جموں تک بھاری موٹر گاڑیوں کی آمدورفت کے دنوں میں کسی بھی گاڑی کو سرینگر کی طرف جانے کی اجازت نہیں دی جائے گی تاکہ بغیر کسی پریشانی کے نقل و حرکت کو یقینی بنایا جا سکے۔شفافیت کو یقینی بنانے کے لیے انہوںنے محکمہ باغبانی اور فروٹ انجمنوں سے کہا کہ وہ اپنے نمائندے کو بانہال اور قاضی گنڈ میں ٹریفک حکام کے ساتھ تعینات کریں۔محکمہ باغبانی سے کہا گیا کہ وہ ہر پھل سے لدے ٹرکوں کی ونڈ اسکرین پر ایک ‘سیب’ کی تصویر لگائیں تاکہ شناخت میں آسانی ہو تاکہ ایسے ٹرکوں کو الگ سے پارک کیا جا سکے اور ترجیحی بنیادوں پر چھوڑا جا سکے۔پھلوں کے کاشتکاروں کی شکایات کے بروقت ازالے کے لیے ایک وٹس ایپ گروپ بنانے کا بھی فیصلہ کیا گیا جس میں تمام اسٹیک ہولڈرز کو شامل کیا جائے گا۔رام بن اور بانہال مارکیٹ میں بھیڑ کم کرنے کا معاملہ ڈپٹی کمشنر کے ساتھ اٹھایا گیا جنہوں نے فوری طور پر تجاوزات ہٹانے اور بانہال مارکیٹ کو نو پارکنگ زون قرار دینے کے احکامات جاری کئے۔یہ بھی تجویز کیا گیا کہ مغل روڈ کو پھلوں کی نقل و حمل کے لیے ان دنوں استعمال کیا جانا چاہیے جب بھاری موٹر گاڑیوں کو جموں سے سرینگر تک چلنے کی اجازت ہو۔