پاکستان اپنی مرضی کے وقت اور جگہ پر جواب دے گا: اسلام آباد

سرینگر/پاکستان نے بھارت کو خبردار کیا ہے کہ وہ بھارتی طیاروں کی جانب سے سرحدی خلاف ورزی کا اپنی مرضی کے وقت اور جگہ پر جواب دے گا۔

منگل کو پاکستان کی قومی کونسل کے اجلاس کے بعد جاری اعلامیے میں بھارت کی کارروائی کو'' جارحیت'' قرار دیتے ہوئے کہا گیا ہے '' بھارتی اقدام نے خطے کے امن اور سلامتی کو سنگین خطرے سے دوچار کردیا ہے''۔

اعلامیے میں کہا گیا''پاکستان بھارت کی جارحیت کا اپنی مرضی کے وقت اور جگہ پر جواب دیا گا''۔

اجلاس نے بالاکوٹ کے نزدیک جنگجوئوں کے مرکز کو نشانہ بنانے اور اس میں بڑے پیمانے پر ہلاکتوں کے بھارت کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا'' بھارت جس علاقے میں کارروائی کا دعوی کر رہا ہے وہاں عالمی برداری خود آکر زمینی حقائق کا مشاہدہ کرے''۔

بیان میں کہا گیا ہے '' صورتِ حال پر قوم کو اعتماد میں لینے کے لیے حکومت نے پارلیمان کا مشترکہ اجلاس طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے جب کہ وزیرِ اعظم نے نیشنل کمانڈ اتھارٹی کا اجلاس بھی منگل کو طلب کرلیا ہے''۔

حکومتِ پاکستان نے مقامی اور بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو اس علاقے کا دورہ کرانے کا بھی اعلان کیا ہے جہاں بھارت نے کارروائی کا دعوی کیا ہے۔

پاکستانی سیاسی قیادت کے اجلاس نے قرار دیا'' بھارت نے پاکستان پر حملے کا ڈھونگ داخلی انتخابی صورتِ حال کے پیشِ نظر رچایا ہے''۔

اعلامیے کے مطابق وزیرِ اعظم پاکستان نے ملک کی مسلح افواج اور عوام کو ہر طرح کی صورتِ حال کے لیے تیار رہنے کی ہدایت کی ہے اور بھارت کے'' غیر ذمہ دارانہ رویے'' پر بین الاقوامی برادری سے رابطے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

پاکستان کے سرکاری بیان کے مطابق منگل کو ہونے والے اجلاس کی صدارت وزیرِ اعظم عمران خان نے کی جس میں خارجہ، دفاع، خزانہ کے وزرا، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف اور بری، بحری اور فضائی افواج کے سربراہان اور دیگر اعلی سول اور فوجی حکام نے شرکت کی۔

واضح رہے کہ آج صبح بھارت نے پاکستان میں سرحد پار کارروائی کرتے ہوئے دعوی کیا کہ اس نے پاکستان کی حدود میں کشمیر میں سرگرم مسلح تنظیم جیشِ محمد کا ایک کیمپ تباہ کردیا ہے۔

 نئی دہلی میں ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے بھارت کے سیکریٹری خارجہ وجے گوکھلے نے کہا کہ بھارتی طیاروں نے آج علی الصباح پاکستان کے علاقے بالا کوٹ میں جیشِ محمد کے سب سے بڑے کیمپ کو نشانہ بنایا۔