پارلیمانی قائمہ کمیٹی کادورۂ پہلگام

اننت ناگ // 14ممبر وں پر مشتمل پارلیمانی قائمہ کمیٹی  نے جموں کشمیرکے دورے کے دوسرے دن محکمہ صحت و خاندانی بہبود کے گورنمنٹ سیول اسپتال پہلگام کا دورہ کیا اور وہاں مریضوں کو دستیاب سہولیات کا جائزہ لیا۔ قائمہ کمیٹی کے ممبران نے سیاحتی مقام پہلگام میں ہیلتھ سینٹر کا بھی دورہ کیا جہاں مقامی لوگوںاور سیاحوں کو علاج و معالجہ فراہم کیا جاتا ہے۔ اس موقع پر قائمہ کمیٹی کے چیرمین رام گوپال یادو نے اسپتال میں تمام شعبہ جات کا دورہ کیا اور مریضوں کودستیاب سہولیات کے بارے میں جانکاری حاصل کی ۔ کمیٹی ممبران نے اسپتال میں رجسٹریشن، ڈینٹل سیکشن، ڈسپنسری، او پی ڈی، ایکسرے لیب، لیبارٹری، ایمونائزیشن اور آپریشن تھیٹر کا معائنہ کیا ۔ دورہ کے دوران کمیٹی ممبران کو بتایا گیا کہ اسپتال 24گھنٹے ایمرجنسی مریضوں کیلئے کھلا رہتا ہے اور اس کیلئے یہاں ڈاکٹر، نیم طبی عملہ مختلف شفٹوں میں دستیاب رہتا ہے۔ ممبران کو اسپتال میں دستیاب مشینری کے باری میں بھی جانکاری دی گئی۔ اس موقع پر ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر نے کمیٹی ممبران کو  پہلگام میں 50بستروں پر مشتمل اسپتال قائم کرنے کے منصوبے کے بارے میں بھی جانکاری دی۔ انہوں نے کہا کہ اسپتال 3600مربع فٹ پر قائم ہوگا اور اس کیلئے 19کروڑ90لاکھ روپے کا ٹھیکہ بھی دیا گیا ہے۔ ٹیم ممبران نے ڈاکٹروں، نیم طبی عملہ اور مریضوں کے ساتھ بھی بات چیت کی اور وہاں دستیاب سہولیات کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر لوگوں نے بھی قائمہ کمیٹی ممبران سے بات کی اور اُمید ظاہر کی اسپتال کا دررجہ بڑھاکر اس کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے گا۔اس موقع پر چیر مین قائمہ کمیٹی رام گوپال یادو نے مقامی لوگوں کو یقین دلایا کہ ان کی تمام شکایات کا ازالہ کیا جائے گا۔  انہوں نے کہا کہ دورے کا مقصد لوگوں کی شکایات سننا اور سفارشات سرکار تک پہنچانا ہے۔ اس کے علاوہ قائمہ کمیٹی کے ممبران نے مٹن میں سریا مارتند مندر میں پوجا کی اور ملک کی ترقی کیلئے  پرارتھناکی۔ پارلیمانی قائمہ کمیٹی کے ممبران کے ہمراہ ایم ڈی جے کے ایم ایس سی ایل ( نوڈل آفیسر، ) ڈاکٹر یشپال شرما ، سی ایم او اننت ناگ، بی ایم او منٹ اور انتظامہ اور پولیس کے دیگر افسران بھی موجود تھے۔