نوجوان امن اورترقی کے کارندے: تاریگامی

 سرینگر// نوجوانوں کو ترقی اور امن کے اہم کارندے قرار دیتے ہوئے کمیونسٹ پارٹی مارکسسٹ رہنما یوسف تاریگامی نے کہاہے کہ نوجوانوں کو حکومت کی عوام دشمن پالیسیوں کے خلاف جدوجہد میں سب سے آگے رہنا چاہیے۔ کوگام میں جے کے ڈیموکریٹک  یوتھ فیڈریشن کی ضلعی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ  5 اگست 2019 کے فورا ًبعد مسلسل لاک ڈائون سے خطے کی معیشت کوبحران درپیش ہے اور  کاروبار، سیاحت، دستکاری، زراعت، باغبانی بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔  انہوں نے کہاکہ حکومت کے بلند بانگ دعوئوں کے باوجود متاثرین کو کوئی خاطر خواہ ریلیف فراہم نہیں کیا گیا۔  ترقی کے حوالے سے دعوے انتظامیہ کے بار بار اعلانات تک ہی محدود ہیں۔ تاریگامی نے کہاکہ ہر سطح پر کرپشن عروج پر ہے اور خطے میں بے روزگاری کا گراف کافی بلند ہوا ہے۔  انہوں نے مزیدکہاکہ وزارت شماریات اور پروگرام نے اپنی حالیہ رپورٹ میں جموں و کشمیر میں بے روزگاری کی شرح 43.3 فیصد بتائی ہے، جو ملک میں دوسرے درجے پر ہے۔ تعلیم یافتہ بیروزگار نوجوان  نوکریوں کے انتظار میں پریشان ہیں۔ دوسری طرف، من مانی انداز میں سرکاری ملازمین کی برطرفی اس انتظامیہ کے آمرانہ رجحانات کی عکاسی کرتی ہے۔ آج نہ صرف نوجوانوں کا مستقبل دا ئوپر لگا ہوا ہے۔تاریگامی نے کہاکہ مختلف بہانوں سے پرامن سیاسی اور ٹریڈ یونین سرگرمیوں پر پابندیاں جاری ہیں۔ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ایسی پالیسیاں بنائیں جو نوجوانوں کی زندگیوں کو بہتر بنائے اور انہیں پالیسی سازی کے پورے عمل میں فعال طور پر شامل کریں۔ انہوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ بے روزگاری اورنوجوانوں کو درپیش دیگر  سنگین مسائل سے نمٹنے کے لیے ایک جامع پالیسی وضع کرے۔