نستہ چھن گلی پر ٹنل کی تعمیر کا معاملہ

کپوارہ+سرینگر //نستہ چھن گلی پر مجوزہ ٹنل کی تعمیر کے حق میںجاری احتجاج کے پیش نظر سنیچر کو کرناہ میں کاروباری اور تعلیمی ادارے بند رہے جبکہ سڑکوں سے ٹرانسپورٹ بھی غائب رہا ۔احتجاجی مظاہرین نے’ٹنل تعمیر کرو‘کے نعرے بلند کرتے ہوئے کہا کہ کرناہ کپوارہ شاہراہ ایک قتل گاہ میں ربدیل ہوچکی ہے ۔معلوم رہے کہ سنیچر کو کرناہ میں ٹنل کوارڈی نیشن کمیٹی کی جانب سے بند کا اعلان کیا گیا تھا جس کی حمایت بیوپار منڈل ، ٹرانسپورٹ یونین ، سیول سوسائٹی کے علاوہ سیاسی وسماجی انجمنوں نے کی تھی۔سنیچر صبح کو کرناہ بھر سے لوگ ریلیوں کی صورت میں ٹنگڈار پہنچے جہاں انہوں نے دھرنا دے کر سرکار کے خلاف جم کر نعرے بازی کی ۔اس موقعہ پرٹنل کوارڈی نیشن کمیٹی کے ذمہ داروںنے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اُن کے ساتھ وعدے کئے گے تھے کہ اس خونین شاہراہ پر ٹنل تعمیر کر کے حادثات پر قابو پایا جائے گا لیکن آج تک وہ وعدہ وفا نہیں ہوا ۔ مظاہرین نے اس دوران تحصیل آفس میں ایک یاداشت بھی حکام کو پیش کی ۔