میونسپل کمیٹی نوشہرہ کا انوکھاکاکارنامہ

 
نوشہرہ//سب ڈویژن نوشہرہ کے تاریخی زمبیرنالے میں میونسپل کمیٹی نوشہرہ کی طرف سے ڈالی جارہی بازارکی گندگی کی وجہ سے اس نالے کے پاس بنے کنواں میں آلودگی شامل ہورہی ہے جس کی وجہ سے لوگ فکرمندہیں اوراس سلسلہ میں لوگوں کی طرف سے کئی بار کنویں میں گندگی آنے کی شکایت کی گئی ہے لیکن انتظامیہ اس طرف کوئی توجہ نہیں دے رہی ہے ۔تفصیلات کے مطابق نوشہرہ سے آگے نکل کرمناوردریا میں ملنے والے نالہ زمبیرکے کنارے پربنے مانپورواٹرسپلائی سکیم ودرشن نگرواٹرسپلائی سکیمیں بنی ہوئی ہیں اوران مذکورہ سکیموں سے ہزاروں کی تعدادمیں کنبوں کوپانی کی سپلائی کی جاتی ہے لیکن عرصہ چھ سال سے اس نالے میں ہی میونسپل کمیٹی نوشہرہ کی جانب سے بازارکاکوڑاکرکٹ ڈالاجارہاہے جس سے نہ صرف پینے کاپانی آلودہ ہوچکاہے بلکہ کئی مویشی بھی موم کے لفافے، کیل ،سوئیاں ودیگرچیزکھاکرمرچکے ہیں ۔اس بارے میںکئی بار مقامی کسانوں نے میونسپل کمیٹی کے حکام کواس گندی کووہاں پرنہ ڈالنے کی اپیل کی مگرحکام کے کانوں پرجوں تک نہیں رینگی ۔گندگی کی وجہ سے مقامی لوگوں جوکہ نالہ کے قریب رہتے ہیں اورروزانہ اس نالے کوعبورکرکے بازارآتے جاتے ہیں کایہاں سے گذرنابھی بدبوکی وجہ سے دشوارچکاہے ۔مقامی لوگوں کے مطابق گندگی کے ڈھیرجوکہ تقریباً میٹرلمبا چوڑا ہے اورنالے کے پانی کے قریب ہے میں نہایت ہی زیادہ بدبوپھیلی ہوئی ہے جس سے صاف شفاف ہوامیں زہرگھل رہاہے ۔اس گندگی کی وجہ سے پریشان لوگوں نے حکومت سے مانگ کی ہے کہ وہ زمبیرنالے میں ڈالے جانے والے کوڑے کرکٹ سے پریشانی ہیں اورپانی بھی آلودہ ہورہاہے ۔اس بارے میں جب میونسپل کمیٹی کے ای او کشوری لعل رینہ سے بات کی گئی توان کاکہناتھاکہ اب وہاں پرگندگی ڈالنابندکردی گئی ہے۔